All Activity

This stream auto-updates   

  1. Yesterday
  2. Assalamu alaikum bhaiyo ek aitraz kiya hai kisi ne usska jawab inayat farmae ke aala hazrat sarkar ne musalmano ko kafir banaya..
  3. Last week
  4. Assalamu alaikum mere pyaare aur dil se bhi zyada Azeez bhaiyo.. Mujhe ibn e taymiya ki kufriya ibaraat chahiye. .arabi aur urdu tarjuma dono me. ..badi meharbani hogi
  5. میں نے انٹرنیٹ میں دیکھا کہ شیعہ یہ کہتے ہیں کہ حضرت فاطمہ رضی اللہ عنہا کی وفات کے ذمہ دار حضرت عمر رضی اللہ عنہ ہیں، اور میں نے یہ سنا ہے کہ حضرت فاطمہ کا جب انتقال ہوگا تو انہوں نے وصیت کی تھی کہ ان کے جنازے میں حضرت ابو بکر اور حضرت عمر کو شریک نہ کیا جائے ۔ آخیر ایسا کیا واقعہ ہوا تھا کہ حضرت فاطمہ ان سے اتنی زیادہ ناراض تھیں کہ انہیں اپنے جنازے میں شریک بھی ہونے کی اجازت نہیں دی۔ براہ کرم، قرآن وحدیث کی روشنی میں جواب دیں۔ جزاک اللہ خیر
  6. پوسٹ نمبر ۳ سے کافی لنکس کو فکس کر دیا ہے۔ کچھ لنکس بالکل کام نہیں کر رہے۔ جیسے حضرت موسی سہاگ والے اعتراض پر جوابات۔ فورم ممبرز سے گزارش ہے کہ اس سے متعلقہ ٹاپک فورم پر تلاش کرنے میں مدد کریں۔اس طرح اعلی حضرت علیہ الرحمہ پراعتراضات جوابات سے متعلق مزید ٹاپکس ہوں تو ٹیم ممبرز کو مطلع کریں تاکہ اُن کے لنکس یہاں ایڈ کیے جا سکیں۔ اعتراضات و جوابات کی ایک باقائدہ سیٹنگ ترتیب دینے کی جلد کوشش ہوگی۔ ان شاء اللہ۔تاکہ جوابات کو باآسانی تلاش کیا جا سکے۔
  7. @M Afzal Razvi Bhai. New forum version ka yeh issue kafi dino se report kiya howa hai ips team ko. Umeed hai ke jald hal ho jaye ga.
  8. Assalamu alaikum bhaiyo..inhi sawalat ke jawab mujhe bhi chahiye
  9. بسْــــــــــــــــــمِ ﷲِالرَّحْمَنِ اارَّحِيم الصــلوة والسلام عليك يارسول الله ﷺ Ahle Iblees/Wahabi/Deobandi/Najdi Hamesha Yeh Kahte Hain k Bid'at Ki Koi Qism Nahi Hoti Balkeh Bid'at Sirf Ek Hai Or Woh Hai Bid'at-e-Sayyah....! Hum Mohaddisin k Aqwal Se Janege k Haqeeqat Me Bid'at k Kitne Iqsam Hote Hain امام عزالدين عبدالعزيز بن عبداسلام السلمى الشافعى جو اپنے وقت کے بہت بڑے اصولی محدث اور امام تھے اہل زمانہ انہیں سلطان العلماء پکارتے تھے وہ اپنی کتاب قواعدالأحکام فى مصالح الأنام میں فرماتے ہیں کے بدعت کے پانچ اقسام ہیں. البدعة فعل مالم يعهد فى عصر رسول الله ﷺ وهى منقسمة إلى بدعة واجبة و بدعة محرمة و بدعة مندوبة و بدعة مكروهة و بدعة مباحة. ترجمہ: بدعت سے مراد وہ فعل ہے جو حضور ﷺ کے زمانے میں نہ کیا گیا ہو، بدعت کی حسب ذیل اقسام ہیں- واجب، حرام، مستحب، مکروہ اور مباح. 》قواعدالأحكام فى مصالح الأنام، جلد ٢، صفحہ ٢٠٤. Imam Abu Zakariya Mohiuddin Bin Sharf Nawawi Ka Ai'teqad Or Mazhab Bhi Yahi Hai k Bid'at 5 Qism Ki Hai.... Imam Nawai Bid'at Ki Tareef Or Is k Iqsam k Motaliq Likhte Hain k..... قَالَ الْعُلَمَاءُ الْبِدْعَةُ خَمْسَةُ أَقْسَامٍ وَاجِبَةٌ وَمَنْدُوبَةٌ وَمُحَرَّمَةٌ وَمَكْرُوهَةٌ وَمُبَاحَةٌ فَمِنَ الْوَاجِبَةِ نَظْمُ أدلة المتكلمين لِلرَّدِّ عَلَى الْمَلَاحِدَةِ وَالْمُبْتَدِعِينَ وَشِبْهُ ذَلِكَ وَمِنَ الْمَنْدُوبَةِ تَصْنِيفُ كُتُبِ الْعِلْمِ وَبِنَاءُ الْمَدَارِسِ وَالرُّبُطِ وَغَيْرُ ذَلِكَ وَمِنَ الْمُبَاحِ التَّبَسُّطُ فِي أَلْوَانِ الْأَطْعِمَةِ وَغَيْرُ ذَلِكَ وَالْحَرَامُ وَالْمَكْرُوهُ ظَاهِرَانِ وَقَدْ أَوْضَحْتُ الْمَسْأَلَةَ بِأَدِلَّتِهَا الْمَبْسُوطَةِ فِي تَهْذِيبِ الْأَسْمَاءِ وَاللُّغَاتِ فَإِذَا عُرِفَ مَا ذَكَرْتُهُ عُلِمَ أَنَّ الْحَدِيثَ مِنَ الْعَامِّ الْمَخْصُوصِ وَكَذَا مَا أَشْبَهَهُ مِنَ الْأَحَادِيثِ الْوَارِدَةِ وَيُؤَيِّدُ مَا قُلْنَاهُ قَوْلُ عمر بن الخطاب رضي الله عنه في التَّرَاوِيحِ نِعْمَتِ الْبِدْعَةُ وَلَا يَمْنَعُ مِنْ كَوْنِ الْحَدِيثِ عَامًّا مَخْصُوصًا قَوْلُهُ كُلُّ بِدْعَةٍ مُؤَكَّدًا بِكُلِّ بَلْ يَدْخُلُهُ التَّخْصِيصُ مَعَ ذَلِكَ كَقَوْلِهِ تَعَالَى تُدَمِّرُ كُلَّ شَيْءٍ. ترجمہ: علماء نے بدعت کے پانچ اقسام بدعت واجبہ، مندوبہ، محرمہ، مکروہہ اور مباح بیان کی ہے بدعت واجبہ کی مثال متکلمین کے دلائل کو ملحدین، مبتدعین اور اس جیسے دیگر امور کے رد کے لئے استعمال کرنا ہے اور بدعت مستحبہ کی مثال جیسے کتب تصنیف کرنا، مدارس، سرائے اور اس جیسی دیگر چیزیں تعمیر کرنا- بدعت مباح کی مثال یہ ہے کہ مختلف انواع کے کھانے اور اس جیسی چیزوں کو اپنانا ہے جبکہ بدعت حرام اور مکروہ واضح ہیں اور اس مسئلہ کو تفصیلی دلائل کے ساتھ میں نے تھذیب الاسماء واللغات میں واضح کر دیا ہے- جو کچھ میں نے بیان کیا ہے اگر اس کی پہچان ہو جائےگی تو پھر یہ سمجھنا آسان ہے کہ یہ حدیث اور دیگر ایسی احادیث جو ان سے مشابہت رکھتی ہیں عام مخصوص میں سے تھیں اور جو ہم نے کہا اس کی تائید حضرت عمر رضی اللہ عنہ کا قول نعمت البدعة کرتا ہے اور یہ بات حدیث کو عام مخصوص کے قاعدے سے خارج نہیں کرتی- قول کل بدعة لفظ كُلَّ کے ساتھ مؤكد ہے لیکن اس کے باوجود اس میں تخصیص شامل ہے جیسا کہ اللہ تعالی کے ارشاد *تُدَمِّرُ كُلَّ شَيْءٍ (وہ ہر چیز کو اکھاڑ پھینکےگی) میں تخصیص شامل ہے- 》IMAM NAWAWI, SHARAH SAHIH MUSLIM, JILD 6, SAFA 154-155. Imam Ibn Asir Jazri Hadees-e-Umar Radi Allaho Anho «نِعْمَت البِدْعَة هَذِهِ» k Tahat Bid'at k Iqsam Or In Ka Sharayi Mafhum Bayan Karte Huwe Likhte Hain k....... الْبِدْعَةُ بِدْعَتَان: بِدْعَةُ هُدًى، وَبِدْعَةُ ضَلَالٍ، فَمَا كَانَ فِي خِلَافِ مَا أَمَرَ اللَّهُ بِهِ ورسوله صلى الله عليه وسلم فَهُوَ فِي حَيِّز الذَّمِّ وَالْإِنْكَارِ، وَمَا كَانَ وَاقِعًا تَحْتَ عُموم مَا نَدب اللَّهُ إِلَيْهِ وحَضَّ عَلَيْهِ اللَّهُ أَوْ رَسُولُهُ فَهُوَ فِي حَيِّزِ الْمَدْحِ. ترجمہ: بدعت کی دو قسمیں ہیں، بدعت حسنہ اور بدعت سیئہ جو کام اللہ اور اس کے رسول ﷺ کے احکام کے خلاف ہو وہ مزموم اور ممنوع ہے، اور جو کام کسی ایسے عالم حکم کا فرد ہو جس کو اللہ تعالی نے مستحب قرار دیا ہو یا اللہ تعالی اور رسول اللہ ﷺ نے اس حکم پر راغب کیا ہو محمود ہے- 》IMAM IBN ASIR JAZRI, AL NIHAYA FI GHARIBUL HADEES WAL ASR, SAFA 106. Imam Abdur Ra'uf Manawi Apni Kitab FAIZ-UL-QADEER SHARAH JAME-US-SAGHIR Me Farmate Hain k...... فإن البدعة خمسة أنواع: محرمة وهي هذه واجبة وهي نصب أدلة المتكلمين للرد على هؤلاء وتعلم النحو الذي به يفهم الكتاب والسنة ونحو ذلك ومندوبة كإحداث نحو رباط ومدرسة وكل إحسان لم يعهد في الصدر الأول ومكروهة كزخرفة مسجد و تزويق مصحف و مباحة كالمصافحة عقب صبح و عصر وتوسع في لذيذ مأكل وملبس ومسكن ولبس طيلسان وتوسيع أكمام ذكره النووي في تهذيبه. ترجمہ: بدعت کے پانچ اقسام ہیں اور وہ یہ ہیں پہلی بدعت واجبہ ہے اور وہ یہ کہ ان تمام مذاہب کو رد کرنے کے لئے متکلمین کے دلائل پیش کرنا اور اسی طرح علم نحو کا سیکھنا تاکہ قرآن و سنت کو سمجھا جا سکے اور اس جیسے دیگر علوم کا حاصل کرنا بدعت واجبہ میں سے ہیں اور اسی طرح سرائے اور مدارس وغیرہ بنانا اور ہر اچھا کام جو کہ زمانہ اول میں نہ تھا اسے کو کرنا بدعت مستحبہ میں شامل ہے اور اسی طرح مسجد کی تزئین اور قرآن مجید کے اوراق منقش کرنا بدعت مکروھہ میں شامل ہے اور اسی طرح (نماز) فجر اور عصر کے بعد مصافحہ کرنا اور لذیذ کھانے، پینے، پہننے، رہنے، اور سبز چادر استمعال کرنے میں توسیع کرنا اور آستینو کا کھلا رکھنا بدعت مباحہ میں سے ہے- اس کو امام نووی نے اپنی تھذیب میں بیان کیا ہے- 》IMAM ABDUR RA'UF MANAWI, FAIZ-UL-QADEER SHARAH AL-JAME-US-SAGHIR, JILD 1, SAFA 439-440. Imam Jalaluddin Suyuti Apne Fatawa, Al-Hawi Lil Fatawa Me Imam Nawawi k Hawale Se Bid'at k Iqsam Bayan Karte Huwe Likhte Hain k........ أن البدعة لم تنحصر في الحرام والمكروه، بل قد تكون أيضا`` مباحة و مندوبة و واجوبة. قال النووى فى تهذيب الأسماء واللغات، البدعة في الشرح هي إحداث ما لم يكن في عهد رسول الله ﷺ وهي منقسمة إلى حسنة و قبيحة وقال الشيخ عزالدين بن عبدالسلام في القواعد: البدعة منقسمة إلى واجبة و محرمة و مندوبة و مكروهة و مباحة. ترجمہ: بدعت حرام اور مکروہ تک ہی محصور نہیں ہے بلکہ اسی طرح یہ مباح، مندوب اور واجب بھی ہوتی ہے جیسے کہ امام نووی اپنی کتاب تھذیب الأسماء واللغات میں فرماتے ہیں کہ شریعت میں بدعت اس عمل کو کہتے ہیں جو نبی کریم ﷺ کے زمانے میں نہ ہوا ہو اور یہ بدعت، بدعت حسنہ اور بدعت قبیحہ میں تقسیم ہوتی ہے اور شیخ عزالدین بن عبدالسلام اپنی کتاب قواعد الاحکام فی مصالح الانام میں فرماتے ہیں کہ بدعت کی پانچ قسم ہے واجب، حرام، مندوب، مکروہ اور مباح کے اعتبار سے ہوتی ہے- 》IMAM JALALUDDIN SUYUTI, AL-HAWI LIL FATAWA, JILD 1, SAFA 192. Imam Ibn Hajar Asqalani Fatahul Bari Sharah Sahih Bukhari Me Bid'at Ki Tareef Or Iqsam Per Bahas Karte Huwe Farmate Hain..... والبدعة أصلها ما أحداث على غير مثال سابق، و تطلق فى الشرع فى مقابل السنة فتكون مذمومة، والتحقيق أنها إن كانت مما تندرج تحت مستحسن فى الشرع فهى حسنة و إن كانت مما تندرج مستقبح فى الشرع فهى مستقبحة، وإلا فهى من قسم المباح و قد تنقسم إلى الأحكام الخمسة. ترجمہ: بدعت سے مراد اسے نئے امور کا پیدا کیا جانا ہے جن کی مثال سابقہ دور میں نہ ملے اور ان امور کا اطلاق شریعت میں سنت کے خلاف ہو پس یہ ناپسندیدہ عمل ہے، اور بالتحقیق اگر وہ بدعت شریعت میں مستحسن ہو تو وہ بدعت حسنه ہے اور اگر وہ بدعت شریعت میں ناپسندیدہ ہو تو وہ بدعت مستقبه(یعنی بری بدعت)کہلائے گی اور اگر ایسی نہ ہو تو اس کا شمار بدعت مباح میں ہوگا- بدعت کو شریعت میں پانچ اقسام میں تقسیم کیا جاتا ہے- 》IMAM IBN HAJAR ASQALANI, FATAHUL BARI SHARAH SAHIH BUKHARI, JILD 4, SAFA 298. Imam Qustalani Hazrat Umar Radi Allaho Ta'ala Anho k Farman نعم البدعة هذه k Tahat Bid'at Ki Ta'reef Or Taqseem Bayan Karte Huwe Likhte Hain...... "نعم البدعة هذه" سماها بدعة لأنه ﷺ لم يسن لهم الاجتماع لها كانت زمن الصديق ولا أول الليل ولا كل ليلة ولا هذا العدد. وهى خمسة واجبة و مندوبة و محرمة و مكروهة و مباحة. ترجمہ: "نعم البدعة هذه" کے تحت نماز تراویح کو بدعت کا نام ديا گیا کیونکہ نبی کریم ﷺ نے تراویح کے لئے اجتماع کو مسنون کرار نہیں دیا اور نہ ہی اس طریقہ سے حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ تعالی عنہ کے زمانے میں (پابندی کے ساتھ) رات کے ابتدائی حصے میں تھی اور نہ ہی مستقلا" ہر رات پڑھی جاتی تھی اور نہ (تراویح کی رکعات کا) یہ عدد متعین تھا اور بدعت کی پانچ اقسام واجب، مندوب، حرام، مکروہ اور مباح ہیں. 》IMAM QUSTALANI, IRSHAD-US-SARI SHARAH SAHIH BUKHARI, JILD 3, SAFA 426. Wahabiyon k Bahut M'otabar Yaman k Maroof Or Gair Moqallido k Azeez Alim Shaikh Showkani Jinhe Naam-o-Nihad Ahle Hadees Or Salfi Apna Imam Mante Hain Woh Hadees-e-Umar نعمت البدعة هذه k Mota'liq البدعة أصلها ما أحدث على غير مثال سابق و تطلق فى الشرع على مقابلة السنة فتكون مذمومة والتحقيق إنها إن كانت مما يندرج تحت مستحسن فى الشرع فهى حسنة وإن كانت مما يندرج تحت مستقبح فى الشرع فهى مستقبحة و إلا فهى من قسم المباح و قد تنقسم إلى الأحكام الخمسة. ترجمہ: لغت میں بدعت اس کام کو کہتے ہیں جس کی پہلے کوئ مثال نہ ہو اور اصطلاح شرع میں سنت کے مقابلہ میں بدعت کا اطلاق ہوتا ہے اس لیے یہ مذموم ہے اور تحقیق یہ ہے کہ بدعت اگر کسی ایسے اصول کے تحت داخل ہے جو شریعت میں مستحسن ہے تو یہ بدعت حسنہ ہے اگر ایسے اصول کے تحت داخل ہے جو شریعت میں قبیح ہے تو یہ بدعت سیئہ ہے ورنہ بدعت مباح ہے اور بلاشبہ بدعت کی پانچ اقسام ہیں. 》شوکانی، نیل الاوطار شرح منتقی الأخبار، جلد ٣، صفح ہ ٥٠٠-
  10. Wa Alikum salam.. @Sadique Warsi bhai is Aitraaz ka Jawab Is Thread mein 1 Link mein diya gaya hy.. Magar Kuch Issues ki wajah se is thread k kuch links kaam nahi kar rahy hain.. Ham Koshish kar rahy hain.. in-Sha-Allah Jald ye links proper work krain gy..
  11. You should refer to darul ifta ahl e sunnat
  12. بھائی جان آپ ایلچی والی روایت کا حوالہ دے سکتے ہیں کتاب کے کسی پرانے ایڈیشن سے ؟ نیو والی میں لفظ بدل دیا گیا ہے۔
  13. ASSALAM O ALAIKUM WA RAHMATULLAH HAZRAT MUJHE MALFOOZAT ME JO MOOSA SOHAAG KA WAQEYA HAI ISPR WAHABIYON KE KIYE GAYE AITRAAZ KA JAWAAB INAYAT FARMAIYE
  14. *Dawate Fiker* *Sunni Musalmano Ahle Sunnat Mein Chupe Rawafiz (Shia) ko pahchano* Sunni Sahih Ul Aqida Musalmano Hushiyar Rahen Jamat e Ahle Sunnat Mein Khuch Aise Log Ghus Aayen Hain Jo jin Kay Aqaid Wa Nazriat Rawafiz Shia Jaise Hain Ya Yun Samjhjiye Kay Ye log Sunni Hone Ka Dawa Kar Kay Shia Aqaid Phaila Rahe Hain jin Mein Ek Naam ek Naam Dr pir Syed Abdul Qadir Hai jo Minhaji Firqe Say Joda Howa Hai is Shaks Nay sahaba Umhatul Mominin Aur Auliya Allah ki kai Gustakhiya Ki Hain jin Say chan kay Link niche Diye Ja Rahe Hain *1⃣Dr Syed Abdul qadir minhji Tafzilli ki Hazrat Omer ki Shan mein A Gustakhi* https://youtu.be/ug1CKXcSRlw *2⃣Dr Syed Abdul qadir Tafzilli minhji Ki Hazrat Usman ki Shan Mein Gustakhi* https://youtu.be/90Eg1sIfM7Q *3⃣Dr syed Abdul Qadir minjhaji Tafzilli Ki Hazrat Ibne Ali Mohammad bin Hanafia Ki Shan mein Gustakhi* https://youtu.be/p3XCg-1CM6k *Second clip* https://youtu.be/5_vymwfxRc0 *Therd link* https://youtu.be/Q0iUkNtzK8M *4⃣Dr Syed Abdul Qadir Tafzilli Minhaji ki Syedna Maula Ali Ki Shan Mein Gustakhi* https://youtu.be/yVaKV8n0_Ik *5⃣Dr syed Abdul Qadir Minhaji Tafzilli ki Hazrat Abu Huraira ki Shan Mein Gustakhi* https://youtu.be/UV37W59LKzw *6⃣Dr Sayed Abdul Qadir Rafzi Minhaji ki sahab kiram ki Shan Mein Gustakhi* https://youtu.be/UKg8ADbbFUo *7⃣Dr Syed Abdul Qadir Rafzi Minhaji Ki Syedna Abubakar Siddiq Ki Shan Mein Gustakhi* https://youtu.be/X_gfFmVPcGY *8⃣Dr Syed Abdul Qadir Rafzi ki Hazrat Umhatul mominin Ki Shan Mein Gustakhi* https://youtu.be/GuQIqwMa6HU *9⃣Dr Syed Abdul Qadir Minhaji Rafzi ki 3 Khulafa e Rashdeen Ki Shan Mein Gustakhi* https://youtu.be/-6iCEIQ6BKQ *🔟Dr Syed Abdul Qadir Minhaji Rafzi ka Sahaba Tabain Ki shan mein Gustakhi* https://youtu.be/mupExUmtrpY *1⃣1⃣Dr Syed Abdul Qadir Minhaji Rafzi Ki Hazrat Ameer Moaviya ki Shan mein Gustakhi* https://youtu.be/8_pGdEvbX_w *Second link* https://youtu.be/yIFWrfVqNv4 *1⃣2⃣Dr Syed Abdul Qadir Minhaji Rafzi ki Hazrat imam Bukhari Ki Shan mein Gustakhi* https://youtu.be/xtm5b54cnHM *1⃣3⃣Dr Syed Abdul Qadir Minhaji Rafzi ki Hazrat Imam Gazali Ki Shan Mein Gustakhi* https://youtu.be/xIFZjivQdqY *1⃣4⃣Dr Syed Abdul Qadir Minhaji Rafzi Ki Hazrat Allama Badruddin Ayeni Ki Shan Mein Gustakhi* https://yo
  15. Bhai Juhna Garhi Ki ye Tafseer Tehreefat se bhari pari hy... Shayad hi itni Tehreef kabhi kisi ne ki ho.. in sha Allah Waqt nikal k Main Bhi kuch Posts share karun ga yahan..
  16. پارہ ۲۸،سورۃ التحریم، آیت۵،۴
  17. السلام علیکم بھائیو۔ مولوی جناگڑھی نجدی نے سورہ بقرہ آیت نمبر 89 کی تفسیر (ترجمہ تفسیر ابن کثیر) میں تمام وسیلہ سے متعلق روایتیں نکل ہی نہیں کی۔کوئی غیر مقلد اس کا جواب دینا پسند کرے گا ؟
  18. وعلیکم السلام فقیر کیا کرسکتا ہے ؟؟؟ حکم فرمائیں پارہ ۲۸،سورۃ الطلاق، آیت ۶
  19. Kindly give me answer my husband is also not found his family send him anywhere
  20. Aoa agr dil me hassad aye tu us se kaisay bacha jaye us waqt humaien kiy karna chaye
  21. Abu. Izrael: Ye Aap logoon ki Ghalat Fahmi. Apni Usool Ki kitaboon say Sirf Quran Pak ki ayaat per apna Emaan hi sabit kardo ye bhi Bari baat hay.
  22. بسْــــــــــــــــــمِ ﷲِالرَّحْمَنِ اارَّحِيم الصــلوة والسلام عليك يارسول الله ﷺ Deobandiyon k Shaikhul Alam Ya Shaikhul Hind Maulana Mahmood-Ul-Hasan Ne Quran-e-Pak Ka Tarjama Kiya Hai Jis Ki Tafsir Deobandiyon k Hi Shaikhul Islam Shabbir Ahmad Usmani Ne Ki Hai Jo Tafsir-e-Usmani k Naam Se Hai Surah Fateha Ayat 4 Ki Tafsir Karte Huwe Likhte Hain اياك نعبد و اياك نستعين¤ Tarjama: Teri Hi Hum Bandagi Karte Hain Or Tujh Hi Se Madad Chahte Hain. (Tarjama Bhi Isi Ka Hai) Is Ki Tafsir Me Likhte Hain k... "Han Agar Kisi Maqbool Banda Ko Mahaz Wasta Rahmat-e-ILahi Or Gair Mustaqil Samajh Kar Iste'anat-e-Zahiri Us Se Kare To Jayaz Hai k Yeh Iste'anat Dar Haqeeqat HAQ TA'ALA Hi Se Iste'anat Hai. 》TAFSIR-E-USMANI, SURAH FATEHA, AYAT 4. الحمدالله Deobandiyon k Ghar Se Hum Ahle Sunnat Wal Jamat (Jise Is Waqt Hind-o-Pak Me Barelvi k Naam Se Jana Jata Hai) Ka Aqeeda Sabit.
  23. @Sag-e-Attar Pyary bhai Forum pe Uplaod hui koi bhi Book Downlaod nahi ho rahi hy.. Jab bhi Link pe Click krain.. Pdf ki form pe File Download ho jati hy jo 0-byte ki hoti hy.. Is pe thori Tawaju farmayain.. Jazak Allah
  24. علامہ ابن عربی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ کا حوالہ درکار ہے کسی کے پاس ہو تو برائے مہربانی عنایت فرما دیں۔ جزاک اللہ علامہ ابن عربی رحمۃ اللہ تعالیٰ علیہ نے لکھا کہ نیند بھی ایک آفت ہےجس کی وجہ سے نفس کو جو اقلیم بدن پر حکومت حاصل ہوتی ہے وہ ختم ہوجاتی ہے لیکن اللہ تعالیٰ نے حضورﷺ کو اس سے محفوظ رکھا ہے ، آپ کی آنکھوں پر نیند طاری ہوتی قلبِ اقدس ہمیشہ بیدار رہتا
  25. جزاک اللہ
  1. Load more activity