Jump to content
IslamiMehfil

محمد افتخار الحسن

Members
  • Content Count

    7
  • Joined

  • Last visited

Community Reputation

0 Neutral

About محمد افتخار الحسن

  • Rank
    Newbie

Previous Fields

  • Hanafi

Recent Profile Visitors

The recent visitors block is disabled and is not being shown to other users.

  1. ⚡️⚡️انسانیت سب سے بڑا مذہب ہے؟؟؟⚡️⚡️ حسن اچانک زمین پر گرتا ہے اور اس کا دوست دانش اسے اٹھانے کے لیے سہارا دیتا ہے۔ دانش:کیا ہوا حسن؟چکر آگئے کیا؟تمہاری طبیعت تو ٹھیک ہے؟ حسن:بس یار!انسان ہی انسان کے کام آتا ہے۔ہمارے ایک غیر مسلم پڑوسی کو خون کی اشد ضرورت تھی اور اتفاق سے میرا خون کا گروپ اس کے خون سے ملتا تھا لہذا کل دو بوتل خون کی عطیہ کرکے آیا ہوں۔مجھے تو اس بات کی خوشی ہے کہ میں نے ایک انسان کی جان بچائی ہے۔ دانش:اگر خون دینا تھا تو کسی مسلمان کو دیتے غیرمسلم کو دینے کی کیا ضرورت تھی؟ حسن:یار!پھر کیا ہوا؟غیر مسلم بھی تو انسان ہیں اگر میں نے ایک غیر مسلم کو خون عطیہ
  2. ??تقریب سعید?? شادی کی ایک تقریب میں مدعو تھا۔ ہمارے علاقے میں کھانا کھا چکنے کے بعد جب مہمان مختلف کاموں میں مصروف ہوجاتے ہیں تو کچھ خانہ بدوش بھکاری خواتین باقی ماندہ کھانے پر ہاتھ صاف کرنے کے لیے چڑھ دوڑتی ہیں جو بہروں (waiters)تو کیا میزبانوں سے بھی بسااوقات الجھ پڑتی ہیں۔ اسی اثنا میں جب ہم کھانا کھا چکے تھے تو کچھ بھکاری خواتین کھانے کے پنڈال میں آگھسیں اور پلیٹوں میں بچا ہوا کھانا اپنے اپنے برتنوں میں انڈیلنے لگیں۔ اچانک حاشیہ خیال میں ایک تصور نے دستک دی اور خیالوں کے عمیق گڑھے میں گرتا چلا گیا۔ دراصل میزبانوں کے ایما پر بیسویوں افراد کے لیے کافی کھانا کچرے کونڈی کی
  3. ??تقریب سعید?? شادی کی ایک تقریب میں مدعو تھا۔ ہمارے علاقے میں کھانا کھا چکنے کے بعد جب مہمان مختلف کاموں میں مصروف ہوجاتے ہیں تو کچھ خانہ بدوش بھکاری خواتین باقی ماندہ کھانے پر ہاتھ صاف کرنے کے لیے چڑھ دوڑتی ہیں جو بہروں (waiters)تو کیا میزبانوں سے بھی بسااوقات الجھ پڑتی ہیں۔ اسی اثنا میں جب ہم کھانا کھا چکے تھے تو کچھ بھکاری خواتین کھانے کے پنڈال میں آگھسیں اور پلیٹوں میں بچا ہوا کھانا اپنے اپنے برتنوں میں انڈیلنے لگیں۔ اچانک حاشیہ خیال میں ایک تصور نے دستک دی اور خیالوں کے عمیق گڑھے میں گرتا چلا گیا۔ دراصل میزبانوں کے ایما پر بیسویوں افراد کے لیے کافی کھانا کچرے کونڈی کی
  4. ??ایک پہلو?? میڈیا دورجدید کا زبردست ہتھیار ہے جو اپنی مکاری اور چالاکیوں کی وجہ سے سچ کو جھوٹ اور جھوٹ کو سچ کرنے میں اپنا ثانی نہیں رکھتا۔جہاں اس کے فوائد سے صرف نظر نہیں کیا جاسکتا وہیں اس کے نقصانات اور ہلاکتوں سے پردہ پوشی مناسب نہیں۔خصوصا اسلامی نظریات وعقائد پر حملے کسی طرح بھی قابل برداشت نہیں۔ انہیں میں سے ایک ہمارے اسلاف کی غلط تصویر ہمیں دکھانے کی کوشش کرنا ہے۔آئے دن مختلف چینلز پر جعلی پیروں اور ملنگوں کو دکھا کر ان کے سیاہ کرتوت سے پردہ فاش کیا جاتا ہےاور کیمرے کے ذریعے منظرعام پر لاکر ایسی کالی بھیڑوں کی خوب تذلیل کی جاتی ہے جو کہ ایک لائق تحسین عمل ہےالبتہ
  5. ??ایک پہلو?? میڈیا دورجدید کا زبردست ہتھیار ہے جو اپنی مکاری اور چالاکیوں کی وجہ سے سچ کو جھوٹ اور جھوٹ کو سچ کرنے میں اپنا ثانی نہیں رکھتا۔جہاں اس کے فوائد سے صرف نظر نہیں کیا جاسکتا وہیں اس کے نقصانات اور ہلاکتوں سے پردہ پوشی مناسب نہیں۔خصوصا اسلامی نظریات وعقائد پر حملے کسی طرح بھی قابل برداشت نہیں۔ انہیں میں سے ایک ہمارے اسلاف کی غلط تصویر ہمیں دکھانے کی کوشش کرنا ہے۔آئے دن مختلف چینلز پر جعلی پیروں اور ملنگوں کو دکھا کر ان کے سیاہ کرتوت سے پردہ فاش کیا جاتا ہےاور کیمرے کے ذریعے منظرعام پر لاکر ایسی کالی بھیڑوں کی خوب تذلیل کی جاتی ہے جو کہ ایک لائق تحسین عمل ہےالبتہ
  6. آج کچھ تصاویر دیکھ کر انتہائی قلق ہوا کہ ننھی پری زینب کوجس طرح درندگی کا نشانہ بنا کر قتل کیاگیا اس کے والد ین اور عزیز واقارب کے لیے اس سے بڑی اذیت کیا ہوگی لیکن تف ہے میڈیا کی گندی ذہنیت اور گھناؤنے مقاصد پر کہ اس ننھی پری کے پوسٹ مارٹم کی تصاویر بھی سوشل میڈیا پر لگادی گئیں جس میں انسانی خاکہ بناکر مقتولہ کے متاثرہ اعضا کی طرف اشارہ کیا گیا تھاجو ہمارے معاشرے کے جذباتی افراد کو مشتعل کرکے اپنی ریٹنگ بڑھانے والے میڈیا کے سیاہ کرتوتوں کی ایک کڑی تھی۔مظلوموں کو انصاف دلانے اور عوام کی آواز سیاسی شخصیات تک پہنچانے کا ڈھنڈورا پیٹنے والوں نے ایک ننھی پری کی روح اور اس کے لواحقین کے جذبات سے کھیل
  7. علم چَوَنّی علمِ لَدُنّی کے بارے میں تو آپ نے سنا یا پڑھا ہوگا کہ یہ اللہ تعالیٰ کی طرف سے عطاکردہ وہ علم ہے کہ جس کے حصول میں نفس اور حق تعالیٰ کے درمیان کوئی واسطہ نہ ہو۔آج میں آپ کو ایک ایسے علم کے بارے میں بتانے جارہا ہوں جس کاتذکرہ تو بہت سنا ہوگا مگر اس انداز سے نہیں ۔وہ علم علم چَوَنّی ہےجس کا تعلق تقریبا زندگی کے تمام شعبہ جات سے ہے۔جی ہاں!بچے سے لے کر بوڑھے تک اس علم سے مستفیض ہورے ہیں خاص طور پر کاروباری حضرات اس علم کے بہت بڑے سکالر اور پی۔ایچ۔ڈی ہولڈر ہوتے ہیں ۔ اگر آپ بھی اس فانی دنیا کے باسی ہیں تو علم چونی سیکھنا ہوگا ورنہ آے روز اس علم سے جہالت کی بنا پر ماتم کرتے نظر آئیں
×
×
  • Create New...