Khalil Rana

Star Member
  • Content count

    1,100
  • Joined

  • Last visited

  • Days Won

    264

Khalil Rana last won the day on November 13

Khalil Rana had the most liked content!

Community Reputation

415 Excellent

5 Followers

About Khalil Rana

  • Rank
    Madani Member

Contact Methods

  • ICQ
    0

Profile Information

  • Gender

Previous Fields

  • Madhab

Recent Profile Visitors

2,410 profile views
  1. حضرت علی رضی اللہ عنہ کا یہ قول حضرت عمر رضی اللہ عنہ کے قول کے مخالف نہیں۔ کیونکہ حضرت علی کے اس قول میں حجر اسودکے بروز قیامت گواہی دینے کا ذکر ہے ظاہر ہے جو مسلمان جیسا عمل کرے گا ویسی ہی گواہی ملے گی ،اگر نیک عمل ہوگا تو حجر اسود کی گواہی پر بروز قیامت فائدہ اٹھائے گا اور اگر برا عمل ہوگا تو نقصان اٹھائے گا۔
  2. چھینکنے کے بعد الحمد للہ کہنا حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے بتادیا الحمد للہ سننے والے کو یرحمک اللہ کہنا بھی بتادیا گیا۔ اس لئے حضرت عمر نے درود پڑھنے سے روکا۔ جس کام کے لئے کوئی حکم نہ ہو اور وہ کام شرع کے خلاف نہ ہو تووہ کیا جاسکتا ہے۔یہی بدعت حسنہ ہے یعنی نیا اچھا کام۔ صحیح مسلم کی حدیث ہے جو اسلام میں اچھا طریقہ ایجاد کرے ،اس کو اپنے عمل کا ثواب بھی ملے گا ،اور ان کے عمل کا بھی جو اس پر بعد میں کاربند ہوں گے،بغیر اس کے کہ ان کے ثواب میں کچھ کمی کی جائے۔ صحیح مسلم ،کتاب العلم، باب من سن سنۃ حسنۃ
  3. حضرت صاحب ان کھیل کود کے کاموں کو کس مستند اہل سنت عالم دین نے میلا دالنبی کا اہتمام کہا ہے؟ یہ کام تواس دن کی اہمیت سے بے خبر لوگوں کے ذاتی ہیں،ایسے کام کرنے والوں کو چاہیئے کہ اس دن باوضو ہو کر اکیلے بیٹھ کر یا کسی مجلس میں دُرود شریف کا ورد کریں،آپ زبردستی ان کاموں کوعید میلاد النبی کےاہتمام کافتویٰ نہ دیں۔
  4. انوار شریعت پر اس اعتراض کا جواب اسی فورم میں سعیدی صاحب نے دیا تھا تلاش کرلیں۔ اس فورم پر اب جتنے بھی اعتراضات آرہے ہیں ان سب گھسے پٹے اعتراضات کاجواب اسی فورم پر دیا جا چکا ہے۔
  5. حضرت صاحب بات یہ ہے کہ صرف رفع یدین کرنے سے کوئی وھابی نہیں بنتا رفع یدین تو سنی شافعی، سنی حنبلی بھی کرتے ہیں۔ برصغیر پاک وہند کے ساحلی شہروں کراچی،ممبئی،مدراس وغیرہ میں اکثر شافعی،حنبلی ہیں، وہ رفع یدین کرتے ہیں سنی قادری ہیں،میلاد مناتے ہیں ،عرس مناتے ہیں ،حضور غوث اعظم رضی اللہ عنہ کے ایصال ثواب کے لئے ہر ماہ چاند کی گیارھویں تاریخ کو ختم دلاتے ہیں۔ وھابی تو محمد بن عبدالوھاب نجدی اور اسماعیل دہلوی کے عقاید اپنانے سے بنتا ہے۔ اگر مولانا عبدالحی لکھنوی علیہ الرحمہ نے فقہی اختلاف کیا ہے تو اس سے وہ وھابی نہیں بنے وہ تو میلاد کے قائل تھے، مولوی قسم نانوتوی کی عبارت کے رد پر ان کی تحریر ابطال اغلاط قاسمیہ میں موجود ہے۔
  6. انبیاء علیہم السلام کی قبور کے اوپر پر مسجد بنانا منع ہے۔ قبور کے ساتھ علیحدہ مسجد نبوی بھی ہے جوکہ اب تک موجودہے۔ مدینہ منورہ میں مزار مبارک سید الشھداء سیدنا امیر حمزہ رضی اللہ عنہ کے مزار کے قریب بھی مسجد ہے فقیر دیکھ آیا ہے اب تو اس کی تزئین ہورہی ہے ،الحمد للہ اسی طرح مسلم ممالک میں مزارات کے ساتھ مسجدیں بنی ہوئی ہیں۔ وھابیہ مغالطہ دیتے ہیں۔
  7. صاحب حال مرفوع القلم ہوتا ہے یعنی اس پر شریعت قلم نہیں چلاتی مشہور نقاد علامہ ذھبی نے یہی لکھا ہے۔