Jump to content
اسلامی محفل
Sign in to follow this  
Shareef Raza

**Naatiya Ash,ar ** [Rule: Last Shair Key Akhri Harf Sey New Shair Post Kejiye]

Recommended Posts

(bis)

 

(saw)

 

LAFZ "YA" SAY SHAIR

 

Yaad e Nabi e Pak (saw) main Roye jo Umr Bhar

Mola (azw) mujhe Talash usi Chashm e Tar ki hai

Edited by Qufl e Madinah

Share this post


Link to post
Share on other sites

(bis)

 

یہ کس کے روئے نکو کے جلوے زمانے کو کر رہے ہیں روشن

 

یہ کس کے گیسوئے مشک بو سے مشام عالم مہک رہا ہے

 

حسن عجب کیا جو اُن کے رنگ ملیح کی تہہ ہے پیرہن پر

 

کہ رنگ پُر نور مہر گردوں کئی فلک سے چمک رہا ہے

Share this post


Link to post
Share on other sites

۔ ا ۔

 

ان (saw) کے نقشِ پا پہ غیرت کیجئے

آنکھ سے چھپ کر زیارت کیجئے

حدائق بخشش

 

۔ ی ۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

۔ ی ۔

 

یہ سن کے بیخود پکار اٹھا، نثار جاؤں کہاں ہیں آقا۔ (saw) ۔

پھر ان (saw) کے تلووں کا پاؤں بوسہ، یہ میری آنکھوں کے دن پھرے تھے

حدائق بخشش

 

۔ ی ۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

یاد قامت کرتے اُ ٹھیے قبر سے

جانِ محشر پر قیامت کیجیے۔۔۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

۔ ی ۔

 

یارسول اللہ (saw) دہائی آپ (saw) کی

گو شمال ِ اہل ِ بدعت کیجئے

حدائق بخشش

 

۔ ی ۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

۔ ی ۔

 

یا خدا (azw) تجھ تک ہے سب کا منتہٰی

اولیاء کو حکم ِ نصرت کیجئے

حدائق بخشش

 

۔ ی ۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

(bis)

 

(saw)

 

LAFZ "YA" SAY SHAIR

 

یہ آرزو نہیں کہ دعائیں ھزار دو

پڑھ کر نبی (saw) کی نعت لحد میں اتار دو

دیکھا ابھی ابھی ھے نظر نے جمال یار

اے موت مجھ کو تھوڑی سی مہلت ادھار دو

Share this post


Link to post
Share on other sites

۔ و ۔

 

وہ تری (saw) تجلیء دل نشیں، کہ جھلک رہے ہیں فلک زمیں

ترے (saw) صدقے میرے مہ ِ مبیں (saw) ، ِمری رات کیوں ابھی تار ہے

حدائق بخشش

 

۔ ی ۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

یہ سماں دیکھ کے محشر میں اُٹھے شور کہ واہ

چشمِ بد دور ہو کیا شان ہے رتبہ کیا ہے۔۔۔۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

(bis)

 

یہ تجلی گاہ ذاتِ بحت ہے

زلف انور ہے شب آسا آفتاب

 

جس سے گزرے اے حسن وہ مہر آفتاب

 

اُس کا اندھیرا ہو آفتاب

 

شہنشاہ سخن مولانا حسن رضا خان علیہ رحمۃ الرحمٰن

Share this post


Link to post
Share on other sites

۔ ب ۔

 

بد سہی، چور سہی، مجرم و ناکارہ سہی

اے وہ کیسا ہی سہی، ہے تو کریما (ra) تیرا

حدائق بخشش

 

۔ ا ۔

Edited by Qaseem

Share this post


Link to post
Share on other sites

(bis)

اے مدینے کی ہوا دل میرا افسردہ ہے

 

سوکھی کلیوں کو کھلا جاتا ہے جھونکا تیرا

 

اب حسن منقبت خواجۂ اجمیر سُنا

 

طبع پرجوش ہے رُکتا نہیں خامہ تیرا

Share this post


Link to post
Share on other sites

۔ ا ۔

 

اس (ra) نے لقب ِ خاک شہنشاہ (saw) سے پایا

جو حیدر ِ کرّار (ra) کہ مولٰی (ra) ہے ہمارا

حدائق بخشش

 

۔ ا ۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

(bis)

اے خاک مدینہ تیرا کہنا کیا ہے

 

تجھے قرب شاہ مرینہ ملا ہے

 

بدن پر ہے عطار کہ خاک طیبہ

 

پرے ہٹ جہنم ترا کام کیا ہے

 

Share this post


Link to post
Share on other sites

یہ پیاری پیاری کیاری تیرے خانہ باغ کی

سرد اس کی آب و تاب سے آتش سقر کی ہے

Share this post


Link to post
Share on other sites

یہ دل تڑپ کہ کہیں آنکھ میں نہ آجائے

کہ پھر رہا ہے کسی کا مزار آنکھوں میں

Share this post


Link to post
Share on other sites

(bis)

ya rab ik sa at main dol jaien seah karow k jurm!

jooesh par a jay ab rehmat rasoolllah ke!

Share this post


Link to post
Share on other sites

(salam)

 

yaran e nabi (saw) ka wasf kis se howa ada

aik aik hai un main nazim nazm e huda

paye kyon ker us rubayi ka jawab

ae ahl e sukhan jiska musanif ho khuda

Share this post


Link to post
Share on other sites

ponchoon der SARKAR PE CHAH TU YEHI HAI

AGEY MERI TAKDEER TAMNA TU YEHI HAI

 

AUR WO MANZIL E MAQSOOD BHI ALLAH DEKHAEY

ANWAR BTATEY HAIN RASTA TU YEHI HAI

 

AIK KHAS MEHAK ANE LAGI MOJ E HWA SE

ASAR BTETY HAIN MADINA TU YEHI HAI

 

AZHER E GHAM HJR KI KIA SHAKL NIKALOUN

ROONEY KI NHI TAQAKT NAHI ROONA TU YEHI HAI

 

 

Share this post


Link to post
Share on other sites

۔ ی ۔

 

یادِ حضور (saw) کی قسم، غفلتِ عیش ہے ستم

خوب ہیں قیدِ غم میں ہم، کوئی ہمیں چھڑائے کی کیوں

حدائق بخشش

 

۔ ن ۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

(bis)

 

(saw)

 

نہ کوئی عمل ہے سنانے کے قابل

 

نہ منہ ہے تمہارے دکھانے کے قابل

 

شفاعت کے صدقے میں جنت ملی ہے

 

عمل تھے جہنم میں جانے کے قابل

Share this post


Link to post
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.
Note: Your post will require moderator approval before it will be visible.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.

Loading...
Sign in to follow this  

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

×
×
  • Create New...