Jump to content
اسلامی محفل
Sign in to follow this  
Usman.Hussaini

Pakki Qabar Ka Jawaz-Sahaba O Auliya

Recommended Posts

Sahaba o Auliya ke Qabaron ko jo Pakka kya jata raha hay os kay dalail share kar dain.....JAZAK ALLAH

پکی قبر کے جواز کے دلائل تو معلوم نہیں لیکن قبروں کو پکا نہ بنانے کے چند دلائل حاضر خدمت ہیں۔

1

صحیح مسلم میں حضرت جابر رضی سے روایت ہے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نےقبر کو پختہ کرنے اس پر پیھٹنے اور اس پر عمارت تعمیر کرنے سے منع کیا ہے۔

 

اور ابن ماجہ میں ابو سعید رضی سے روایت ہے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے قبروں پر عمارت بنانے ان پر بیھٹنے اور نماز پڑھنے سے منع کیا ہے۔

 

اور مسند احمد میں حضرت ام سلمہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے قبر پر عمارت بنانے یا اسے پختہ کرنے

سے منع کیا ہے۔

 

2

امام ابراہیم نخعی قبر پر علامت رکھنا اور لحد میں پکی اینٹ لگانا اور قبر کو پختہ کرنا مکروہ سمجھتے تھے۔

3

امام محمد کتاب الاثار میں روایت کرتے ہیں کہ ابو حنیفہ رح نے کہا ہمارے ایک استاد نے نبی صلی اللہ علیہ وسلم تک رفع کرتے ہوئے بیان کیا کہ اپ صلی اللہ علیہ وسلم نے قبروں کو چوکور کرنے اور ان کو پختہ کرنے سے منع کیا ہے۔

امام محمد نے کہا کہ اسی کو ہم لیتے ہیں اور امام ابو حنیفہ رح کا بھی یہی قول ہے۔

4

اس کے علاوہ درج ذیل فقہا احناف نے قبر کو پختہ نی کرنے کا فتوی دیا ہے۔

علامہ ابن الھمام

علامہ عبداللہ بن احمد النفسی

علامہ ابن نجیم المعروف ابو حنیفہ ثانی

علامہ قاضی خان

فتاوی عالمگیری

علامہ علاوالدین الحصکفی

علامہ عینی

 

اس کے علاوہ بھی بہت سارے فقہا کا یہی فتوی ہے۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

عام لوگوں کی قبروں کو پختہ نہ کیا جائے باقی علمائے کرام صلحائے کرام اولیائے کرام و انبیائے کرام کےمزارات کے حوالے سے اجازت کتب میں موجود ہے دلائل حاضر ہیں مفتی احمد یار خان نعیمی علیہ الرحمۃ نے جاالحق اور علامہ غلام رسول سعیدی صاحب نے شرح مسلم میں دلائل درج کئے ہیں جس کو پیش کررہا ہوں۔

page01.gif

page02.gif

page03.gif

page04.gif

page05.gif

page06.gif

page07.gif

  • Like 2

Share this post


Link to post
Share on other sites

پکی قبر کے جواز کے دلائل تو معلوم نہیں لیکن قبروں کو پکا نہ بنانے کے چند دلائل حاضر خدمت ہیں۔

 

 

In dalail ko os terha samjhain jis terha Sahaba o Awliya nay Samjha,os terha nahi jis terha Shaikh e Najd ne samjha.

Ye ose terha ke baat hay jaisy Khatam un Nabiyeen kay meaning Qadiyani & Deobandio nay AhleSunnat kay khilaf samjhay

Share this post


Link to post
Share on other sites

Sahih Muslim:Hazrat Adam Aleh salaam ka Qubba:

 

http://www.islamimehfil.com/topic/20585-sahih-muslim-hazrat-adam-aleh-salam-ka-qubba/#entry87671

 

Mazrat e Sahaba o Auliya ke Qabron & Mazarat per hamla karnay walay AhleNajdiat kay mazeed eterazat & Shubahat ka radd;

 

http://www.islamimehfil.com/topic/19848-pakki-qabar-banana/

Share this post


Link to post
Share on other sites

phir wahi baat faysal saab ooper huzaifa bhai ki post ko phir ek baar padhlo.

  • Like 1

Share this post


Link to post
Share on other sites

(bis)

فیصل صاحب

پہلے ان وھابیوں کی پکی قبروں کا صفایا تو کرلو

پہلی قبر امام الوہابیہ علامہ ابن تیمیہ کی ہے اوردوسری قبر ہندوستان کے امام الوہابیہ نواب صدیق حسن خاں بھوپالی کی ہے ۔

post-2742-0-01469000-1376012975_thumb.jpg

post-2742-0-39851300-1376012990_thumb.jpg

Edited by Toheedi Bhai

Share this post


Link to post
Share on other sites

ﺍﻣﺎﻡ ﺍﺑﻦ ﺣﺒﺎﻥ ﺭﺣﻤﻪ ﺍﻟﻠﻪ

‏( ﺍﻟﻤﺘﻮﻓﻰ354‏) ﻧﮯ ﮐﮩﺎ :

ﻭﻣﺎ ﺣﻠﺖ ﺑﻲ ﺷﺪﺓ ﻓﻲ ﻭﻗﺖ

ﻣﻘﺎﻣﻲ ﺑﻄﻮﺱ , ﻓﺰﺭﺕ ﻗﺒﺮ ﻋﻠﻲ

ﺑﻦ ﻣﻮﺳﻰ ﺍﻟﺮﺿﺎ ﺻﻠﻮﺍﺕ ﺍﻟﻠﻪ

ﻋﻠﻰ ﺟﺪﻩ ﻭﻋﻠﻴﻪ ﻭﺩﻋﻮﺕ ﺍﻟﻠﻪ

ﺇﺯﺍﻟﺘﻬﺎ ﻋﻨﻲ ﺇﻻ ﺃﺳﺘﺠﻴﺐ ﻟﻲ ,

ﻭﺯﺍﻟﺖ ﻋﻨﻲ ﺗﻠﻚ ﺍﻟﺸﺪﺓ , ﻭﻫﺬﺍ

ﺷﻲﺀ ﺟﺮﺑﺘﻪ ﻣﺮﺍﺭﺍ , ﻓﻮﺟﺪﺗﻪ ﻛﺬﻟﻚ

ﺃﻣﺎﺗﻨﺎ ﺍﻟﻠﻪ ﻋﻠﻰ ﻣﺤﺒﺔ ﺍﻟﻤﺼﻄﻔﻲ

ﻭﺃﻫﻞ ﺑﻴﺘﻪ ﺻﻠﻰ ﺍﻟﻠﻪ ﻋﻠﻴﻪ ﻭﺳﻠﻢ

ﺍﻟﻠﻪ ﻋﻠﻴﻪ ﻭﻋﻠﻴﻬﻢ ﺃﺟﻤﻌﻴﻦ .

ﺗﺮﺟﻤﮧ

ﻃﻮﺱ ﻣﯿﮟ ﻗﯿﺎﻡ ﮐﮯ ﻭﻗﺖ ﺟﺐ

ﺑﮭﯽ ﻣﺠﮭﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﭘﺮﯾﺸﺎﻧﯽ

ﻻﺣﻖ ﮨﻮﺋﯽ ،ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﻋﻠﯽ ﺑﻦ

ﻣﻮﺳﯽ ﺍﻟﺮﺿﺎﺻﻠﻮﺍﺕ ﺍﻟﻠﻪ ﻋﻠﻰ

ﺟﺪﻩ ﻭﻋﻠﻴﻪ ﮐﯽ ﻗﺒﺮﮐﯽ ﺯﯾﺎﺭﺕ

ﮐﯽ، ﺍﻭﺭ ﺍﻟﻠﮧ ﺳﮯ ﺍﺱ ﭘﺮﯾﺸﺎﻧﯽ

ﮐﮯ ﺍﺯﺍﻟﮧ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺩﻋﺎﺀ ﮐﯽ ۔ﺗﻮ

ﻣﯿﺮﯼ ﺩﻋﺎﻗﺒﻮﻝ ﮐﯽ

ﮔﺌﯽ ،ﺍﻭﺭﻣﺠﮫ ﺳﮯ ﻭﮦ ﭘﺮﯾﺸﺎﻧﯽ

ﺩﻭﺭﮨﻮﮔﺌﯽ .

ﺍﻭﺭﯾﮧ ﺍﯾﺴﯽ ﭼﯿﺰ ﮨﮯ ﺟﺲ ﮐﺎﻣﯿﮟ

ﻧﮯ ﺑﺎﺭﮨﺎ ﺗﺠﺮﺑﮧ ﮐﯿﺎ ﺗﻮ ﺍﺳﯽ ﻃﺮﺡ

ﭘﺎﯾﺎ .

ﺍﻭﺭﮨﻤﯿﮟ ﺍﻟﻠﻪ ﺗﻌﺎ ﻟﯽَ ﻣﺤﻤّﺪ ﺻﻠﻰ

ﺍﻟﻠﻪ ﻋﻠﻴﻪ ﻭﺳﻠﻢ ﻭ ﺍﮨﻞ ﺑﯿﺖ ﮐﯽ

ﻣﺤﺒّﺖ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﻬﮧ ﻭﻓﺎﺕ ﻋﻄﺎ ﻓﺮ

ﻣﺎﺋﮯ ﺻﻠﻰ ﺍﻟﻠﻪ ﻋﻠﻴﻪ ﻭﺳﻠﻢ ﺍﻟﻠﻪ

ﻋﻠﻴﻪ ﻭﻋﻠﻴﻬﻢ ﺃﺟﻤﻌﻴﻦ . ‏( ﺁﻣﯿﻦ ‏)

‏[ﺍﻟﺜﻘﺎﺕ ﻻﺑﻦ ﺣﺒﺎﻥ، ﻁ ﺩﺍﺭ ﺍﻟﻔﻜﺮ :

456 /8 ‏]

ﺍﮔﺮ ﮨﻢ ﺍﯾﺴﯽ ﺑﺎﺕ ﮐﺮﯾﮟ ﺗﻮ ﻧﺠﺪﯼ

ﻓﻮﺭﺍََ ﺷﺮﮎ ﮐﺎ ﻓﺘﻮﯼ ﺟﮍ ﺩﮮ ﮔﺎ .

ﮐﯿﻮﮞ ؟؟؟؟؟؟؟؟

 

 

ﺍﻣﺎﻡ ﺫﮨﺒﯽ ﺭﺡ ﺍﻭﺭ ﺯﯾﺎﺭﺕ ﻗﺒﻮﺭ

ﺳﻴﺮ ﺃﻋﻼﻡ ﺍﻟﻨﺒﻼﺀ ﺍﻟﺬﻫﺒﻲ

‏( ﺍﻟﻤﺘﻮﻓﻰ : 748ﻫـ ‏)

9/343

ﻭﻋﻦ ﺇﺑﺮﺍﻫﻴﻢ ﺍﻟﺤﺮﺑﻲ، ﻗﺎﻝ: ﻗﺒﺮ

ﻣﻌﺮﻭﻑ ﺍﻟﺘﺮﻳﺎﻕ ﺍﻟﻤﺠﺮﺏ . ﻳﺮﻳﺪ

ﺇﺟﺎﺑﺔ ﺩﻋﺎﺀ ﺍﻟﻤﻀﻄﺮ ﻋﻨﺪﻩ؛ ﻷﻥ

ﺍﻟﺒﻘﺎﻉ ﺍﻟﻤﺒﺎﺭﻛﺔ ﻳﺴﺘﺠﺎﺏ ﻋﻨﺪﻫﺎ

ﺍﻟﺪﻋﺎﺀ، ﻛﻤﺎ ﺃﻥ ﺍﻟﺪﻋﺎﺀ ﻓﻲ ﺍﻟﺴﺤﺮ

ﻣﺮﺟﻮ، ﻭﺩﺑﺮ ﺍﻟﻤﻜﺘﻮﺑﺎﺕ، ﻭﻓﻲ

ﺍﻟﻤﺴﺎﺟﺪ، ﺑﻞ ﺩﻋﺎﺀ ﺍﻟﻤﻀﻄﺮ

ﻣﺠﺎﺏ ﻓﻲ ﺃﻱ ﻣﻜﺎﻥ ﺍﺗﻔﻖ،

ﺍﻟﻠﻬﻢ ﺇﻧﻲ ﻣﻀﻄﺮ ﺇﻟﻰ ﺍﻟﻌﻔﻮ،

ﻓﺎﻋﻒ ﻋﻨﻲ.

ﺗﺮﺟﻤﮧ ﻭ ﺗﻠﺨﯿﺺ

ﻗﺒﺮ ﻣﻌﺮﻭﻑ ﺍﻟﺘﺮﻳﺎﻕ ﺍﻟﻤﺠﺮﺏ ---

ﺗﺮﻳﺎﻕ ﺯﮨﺮ ﻛﺎﭨﻨﮯ ﻭﺍﻟﻲ ﺩﻭﺍ ﻛﻮ

ﻛﻬﺘﮯ ﻫﻴﮟ.

ﻳﻬﺎﮞ ﺍﻣﺎﻡ ﺫﻫﺒﻲ ﻧﮯ ﻛﻬﺎ ﻛﻪ

ﺍﺱ ﺳﮯ ﻣﺮﺍﺩ ﻳﻪ ﻫﮯ ﻛﻪ ﻣﻌﺮﻭﻑ

ﮐﺮﺧﯽ ﺭﺡ ﮐﯽ ﻗﺒﺮ ﮐﮯ ﭘﺎﺱ

ﻣﺠﺒﻮﺭ ﺍﻭﺭ ﻣﻀﻄﺮ ﺷﺨﺺ ﻛﻲ ﺩﻋﺎ

ﻗﺒﻮﻝ ﻫﻮﺟﺎﺗﻲ ﻫﮯ.

ﻭﺟﻪ ﺑﻬﻲ ﻟﻜﻬﻲ ﻫﮯ ﻛﻪ ﻣﺒﺎﺭﻙ

ﺟﮕﻬﻮﮞ ﻣﻴﮟ ﺩﻋﺎ ﻗﺒﻮﻝ ﻫﻮﺗﻲ

ﻫﮯ ﺟﻴﺴﺎ ﻛﻪ ﻣﺒﺎﺭﻙ ﻭﻗﺘﻮﮞ ﻣﻴﮟ

ﻗﺒﻮﻝ ﻫﻮﺗﻲ ﻫﮯ. ﺳﺤﺮﻱ ، ﻓﺮﺽ

ﻧﻤﺎﺯﻭﮞ ﻛﮯ ﺑﻌﺪ ، ﻣﺴﺎﺟﺪ ﻣﻴﮟ ﺩﻋﺎ

ﺯﻳﺎﺩﻩ ﻗﺒﻮﻝ ﻫﻮﺗﻲ ﻫﮯ ﺟﻮﻛﻪ

ﻣﺒﺎﺭﻙ ﺍﻭﻗﺎﺕ ﺍﻭﺭ ﺟﮕﻬﻴﮟ ﻫﻴﮟ .

ﺍﺱ ﺳﮯ ﺛﺎﺑﺖ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﯽ ﺍﻣﺎﻡ

ﺫﮨﺒﯽ ﺭﺡ ﮐﮯ ﻧﺰﺩﯾﮏ ﯾﮧ ﺍﯾﮏ ﺟﺎﺋﺰ

ﻭﻣﺴﺘﺤﺴﻦ ﻓﻌﻞ ﮨﮯ ...

 

ﻣﺤﺪّﺙ ﺣﺎﻓﻆ ﺍﺑﻦ ﻋﺴﺎﮐﺮ ﺭﺡ ‏(571

ﻫﺠﺮﯼ ‏) ﺍﻭﺭ ﺍﻥ ﮐﮯ ﺍﺳﺘﺎﺩ ﻣﺤﺪّﺙ

ﺷﯿﺦ ﻋﺒﺪ ﺍﻟﻐﻔﺎﺭ ﺑﻦ ﺇﺳﻤﺎﻋﻴﻞ ﺭﺡ

‏( ﺛﻘﮧ ، ﺣﺠّﺖ ‏) ﮐﺎ ﻋﻘﯿﺪﻩ ﺍﻭﺭ ﺯﯾﺎﺭﺕ

ﻗﺒﻮﺭ

ﺗﺮﺟﻤﮧ

ﺍﻣﺎﻡ ﻋﺒﺪ ﺍﻟﻐﻔﺎﺭ ﺑﻦ ﺇﺳﻤﺎﻋﻴﻞ ﻧﮯ

ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﻣﺤﻤﺪ ﺑﻦ ﺍﻟﺤﺴﻦ ﺑﻦ ﻓﻮﺭﻙ

ﺭﺡ ‏( 405 ﻫﺠﺮﯼ ‏) ﮐﯽ ﺍﺻﻮﻝ

ﻓﻘﮧ ، ﺍﺻﻮﻝ ﺩﯾﻦ، ﺍﻭﺭﻣﻌﺎﻧﯽ

ﻗﺮﺁﻥ ﻣﯿﮟ ۱۰۰ ﺳﻮ ﺗﺼﺎﻧﯿﻒ ﮨﯿﮟ

ﺍﻭﺭ ﺁﭖ ﺭﺡ ﺍﺑﻮ ﻋﺒﺪﺍﻟﻠﮧ ﺍﻟﮑﺮﺍﻡ

‏( ﺑﺪﻋﺘﯽ ﻓﺮﻗﮧ ﮐﺮﺍﻣﯿﮧ ﮐﺎﺑﺎﻧﯽ ‏)

ﮐﮯ ﻣﺎﻧﻨﮯ ﻭﺍﻟﻮﮞ ﮐﺎﺧﻮﺏ ﺭﺩّ ﻓﺮﻣﺎﺗﮯ

ﺗﻬﮯ ، ﺟﺐ ﻏﺰﻧﯽ ﺳﮯ ﻟﻮﭨﮯ ﺗﻮ ﺭﺍﺳﺘﮯ

ﻣﯿﮟ ﺁﭖ ﮐﻮ ﺯﮨﺮ ﺩﮮ ﺩﯾﺎ ﮔﯿﺎ ﺟﺲ

ﺳﮯ ﺁﭖ ﺷﮩﯿﺪ ﮨﻮ ﮔﺌﮯ، ﭘﻬﺮ ﺍﻥ ﮐﻮ

ﻧﯿﺸﺎﭘﻮﺭ ﻣﻨﺘﻘﻞ ﮐﯿﺎ ﮔﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﺣﯿﺮﮦ

ﻣﯿﮟ ﺩﻓﻦ ﮐﯿﺎ ﮔﯿﺎ.

" ﺁﺟﮑﻞ ﺍﻥ ﮐﺎ ﻣﺰﺍﺭ ﻣﺸﮩﻮﺭ ﮨﮯ،

ﻭﮨﺎﮞ ﺳﮯ ﺷﻔﺎ ﺣﺎﺻﻞ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ ،

ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﮯ ‏( ﻣﺰﺍﺭﮐﮯ ‏) ﻗﺮﯾﺐ ﺩﻋﺎﺀ

ﻗﺒﻮﻝ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ...

ﺗﺒﻴﻴﻦ ﻛﺬﺏ ﺍﻟﻤﻔﺘﺮﻱ ﻓﻴﻤﺎ ﻧﺴﺐ

ﺇﻟﻰ ﺍﻹﻣﺎﻡ ﺃﺑﻲ ﺍﻟﺤﺴﻦ ﺍﻷﺷﻌﺮﻱ

‏( 1/233 ‏)

ﺍﻟﻤﺆﻟﻒ: ﺛﻘﺔ ﺍﻟﺪﻳﻦ، ﺃﺑﻮ ﺍﻟﻘﺎﺳﻢ

ﻋﻠﻲ ﺑﻦ ﺍﻟﺤﺴﻦ ﺑﻦ ﻫﺒﺔ ﺍﻟﻠﻪ

ﺍﻟﻤﻌﺮﻭﻑ ﺑﺎﺑﻦ ﻋﺴﺎﻛﺮ ‏( ﺍﻟﻤﺘﻮﻓﻰ:

571 ﻫـ‏)

Share this post


Link to post
Share on other sites

syria,damascus main hazarat ameer muwiaa (raa) hazrat bilal e habshi, (raa) ,shuda e karbala,umulmomayneen hazrat salma raziallah o anha. and buhat saaray aulia karaam kay mazar qabarstaan main moujood hain.  salahuddin ayyubi,hazrat nooruddin zangi, is sub ke qabroon par gunbad banay hu ay ain.  ab syria k log ghalat thay saary aur suadia arabia kay badsha ya alam sahee thay. ajeeb tamash hay,saudia k ilaava to phir kaheen bhee sahee   (raa) muslimaan moujood naheen,   imam bukhari  (raa) kay maz\aar par bhee quba moujood hay.  aik country sahee,baaqi all countries k muslimaan wrong,na mumkin.   musliman kabhee gumrahee par jamma naheen hotay.(mafhoom hadees sharif)

Share this post


Link to post
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.
Note: Your post will require moderator approval before it will be visible.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.

Loading...
Sign in to follow this  

×
×
  • Create New...