Jump to content
IslamiMehfil

How To Reply On This Objection On Ilm E Gaib And Haazir Naazir


Recommended Posts

Assalam Sunni Jannati Bhaio

 

Kisi ne ek objection kiya hai Ilm e Gaib e Nabi (peace and blessings be upon him) aur Haazir Naazir par ek Hadis ke zariye. Mujhe uska jawab chahiye. Barai karam Inayat Farmaye.

 

Ye Hadis hai Sunan Nisai ki.

 

http://sunnah.com/nasai/21/90

 

It was narrated from Abu Umamah bin Sahl bin Hunaif that:
a poor woman fell sick and the Messenger of Allah was informed of her sickness. The Messenger of Allah used to visit the poor when they were sick and ask about them. The Messnger of Allah said: "If she dies, then inform me." Then her funeral took place at night and they did not like to wake the Messenger of Allah. When morning came, the Messenger of Allah was told what had happened to her. He said: "Did I not tell you to inform me?" They said: "O Messenger of Allah, we did not like to wake you up at night." The Messenger of Allah went out and the people lined up by her grave and he said four Takbirs.

 

Ahle Khabis kehte hai ki is Hadis se malum hota hai ki Huzur ko Ilm e Gaib nahi hai Mazallah aur nahi wo Haazir Naazir hai kyuki jab us Aurat ko dafnaya gaya to dafnane ke baad jo teesra Sawal kiya jaata hai qabr me to agar us waqt Huzur uske Qabr me tashreef le jate to agle din Huzur ko pata hota ki uska Inteqal ho gaya hai.

 

Baraye Karam jawab inayat farmaye.

 

Assalam

Link to post
Share on other sites

(bis)


(wasalam)


اس حدیث سے نجدیوں کا نظریہ کہاں ثابت ہو رہا ہے؟؟


اُلٹا یہ حدیث تو خود وہابیوں کے خلاف ہے ، جیسے اگر کوئی یہ کہے کہ صحابہ کرام رضوان اللہ تعالیٰ علیھم اجمعین کا عقیدہ یہ تھا کہ رسول اللہ محبوب رب العالمین ﷺ تو عالم ما کان وما یکون اور حاضر و ناظر ہیں، چاہے انہیں خاص اسی وقت نہ بھی جگایا جائے پھر بھی مختار کل نبی کریم علیہ التحیۃ و التسلیم اس واقعہ سے ہرگز بے خبر نہیں ہیں!!۔


کیا نجدیوں کے پاس  اپنا ’’عقیدہ‘‘ (علم غیب خاصۂ خدا ہے، ہر جگہ میں موجود ہونا اللہ کی ہی صفت ہے) ثابت کرنے کیلئے اب یہی کچھ رہ گیا ہے؟؟


۔’’بخاری پرست‘‘ نجدی وہابی اس حدیثِ بخاری کے متعلق کیا کہیں گے؟؟


 


 


post-14217-0-81071800-1440793127_thumb.jpg


 


 


اگر نجدی اپنے اسی پہلے اصول پر قائم رہیں (جس پر حدیثِ نسائی پیش کرنے کے وقت تھے) تو انکو رسول اللہ ﷺ کا علم غیب بھی ماننا پڑے گا اور مصطفے جان رحمت آقائے نعمت شہنشاہِ بنی آدم نبی اللہ ﷺ کا حاضر و ناظر ہونا بھی!!۔


۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


عجیب الٹی منطق ہے وہابیوں کی!۔


ماننا انکا یہ ہے کہ ’’معجزہ نبی سے غیر ارادی طور پر ظہور پذیر ہوتا ہے اور اس امر میں نبی بالکل بے اختیار ہوتے ہیں‘‘۔


ضرور یہ حدیثِ بخاری سے معجزۂ رسول کا اثبات مانیں گے


مگر


حدیثِ نسائی سے قدرت و صفت رسول کا انکار کر رہے ہیں!!۔


۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


ان لوگوں کو معجزہ و کرامت کی حقیقت کا علم نہیں ہے بلکہ یہ جان بوجھ کر انکار کرتے ہیں ورنہ انکی خود ساختہ ’’نجدی شریعت‘‘ خود انہی کے ہاتھوں منہدم ہوجانی ہے!!۔

Edited by AqeelAhmedWaqas
Link to post
Share on other sites
  • 7 months later...

اعتراض کرنے والے والے نے یہ کہا ہے کہ جب حضرت ھمزہ رضی اللہ تعالی عنہ کو شازش کر کے شہید کیا گیا تو تب نبی پاک صلی اللہ علیہ والہ وسلم علم غیب کیوں نہیں تھا؟ براہ مہربانی اس کا جواب ضرور دیجئے۔

Link to post
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.
Note: Your post will require moderator approval before it will be visible.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.

Loading...
  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

×
×
  • Create New...