Jump to content
اسلامی محفل
Sign in to follow this  
kashmeerkhan

عمامہ شریف کے رنگوں کے بارے اور خاص سبز عمامہ

Recommended Posts

کس رنگ کا عمامہ شریف باندھنا نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے؟

سبز رنگ کا عمامہ شریف باندھنا صرف جائز (و مستحب) ہے یا سنت ہے؟

سبز اور سفید دونوں میں سے کون سے رنگ کا عمامہ باندھنا زیادہ فضیلت والا ہے؟

 

مستند حوالہ کیساتھ جواب دیں۔

جزاکم اللہ خیرا

Share this post


Link to post
Share on other sites

Share this post


Link to post
Share on other sites

جزاک اللہ خیرا مغل بھئی جان۔۔

یہ کسی نجدی علیہ ما علیہ کا اعتراض نہیں تھا بلکہ علمی تحقیق مقصود تھی اور ہے۔

جواز و استحباب کا مجھے پہلے سے ہی علم ہے (کیونکہ اس سے منع ہی نہیں آیا) اور اس حوالے سےایک دو ٹاپک بھی دیکھ چکا ہوں۔

پوچھنا دراصل یہ تھا جیسے میرے سوالوں سے ظاہر ہے کہ سبز رنگ کا عمامہ شریف سنت سے ثابت بھی ہے یا نہیں ہے؟ (اسکا مجھے پتہ نہیں ہے ، اس لیے کوئی بھئی شفقت کریں جواب دییں) ۔

سفید یعنی وائٹ رنگ کا عمامہ شریف تو سنت سے ثابت شدہ ہے (مجھے علم ہے اسکا)۔

اور میرے اس سوال کا جواب بھی دیے دیں کوئی اسلامی برادر کہ سبز و سفید میں سے کس کلر کا عمامہ مبارک باندھنا زیادہ فضیلت والا یعنی افضل ہے حوالہ ثابتہ کے ساتھ؟

Edited by kashmeerkhan

Share this post


Link to post
Share on other sites

مقالات حیدری
بازار سہنسہ
ضلع کوٹلی
آزاد کشمیر
مصنف۔۔ علامہ مفتی احمدحسین قاسم رضوی حیدری رحمۃ اللہ علیہ

post-16911-0-40786900-1440934689_thumb.gif

post-16911-0-62419500-1440934694_thumb.gif

post-16911-0-15531100-1440934700_thumb.gif

post-16911-0-40224500-1440934712_thumb.gif

post-16911-0-48056800-1440934719_thumb.gif

post-16911-0-87761500-1440934724_thumb.gif

post-16911-0-63064100-1440934729_thumb.gif

post-16911-0-37137800-1440934734_thumb.gif

post-16911-0-90257300-1440934739_thumb.gif

post-16911-0-85510200-1440934743_thumb.gif


مقالات حیدری
بازار سہنسہ
ضلع کوٹلی
آزاد کشمیر
مصنف۔۔ علامہ مفتی احمدحسین قاسم رضوی حیدری رحمۃ اللہ علیہ

post-16911-0-75616400-1440935223_thumb.gif


post-16911-0-53772000-1440935227_thumb.gif


post-16911-0-14846900-1440935230_thumb.gif


post-16911-0-85892300-1440935232_thumb.gif


post-16911-0-75371300-1440935239_thumb.gif


post-16911-0-53714100-1440935244_thumb.gif


post-16911-0-39407000-1440935247_thumb.gif


post-16911-0-10963200-1440935259_thumb.gif


post-16911-0-53148200-1440935269_thumb.gif


post-16911-0-56661800-1440935272_thumb.gif


post-16911-0-67640200-1440935288_thumb.gif


post-16911-0-50434000-1440935292_thumb.gif

Share this post


Link to post
Share on other sites

turkey TOPE MEHAL main SABAZ colour ka Ammamma sharif ziarat k liee ay rakkhha huaa hay. WO AAP PBUH say Mansoob hay. Is kay baaray main kia kahain gay.

Share this post


Link to post
Share on other sites

turkey TOPE MEHAL main SABAZ colour ka Ammamma sharif ziarat k liee ay rakkhha huaa hay. WO AAP PBUH say Mansoob hay. Is kay baaray main kia kahain gay.

Maiay bhai. ap na shayd mairi sab posts ko thik sa nah parhaa.

sabz imama sharif kay jawaz aorr istihbaab ka mojhay pta bhee ha aorr iqraar bhee.

malom ye karna tha aorr ha kay sabz imama sharif sunnat bhee ha ya nah?

mojha jaha tak ulama_i_kiram ke kitabo aorr fatwa say elm hua ha , woh yehi ha kay sabz imama sunnat nah ha, magar jaiz aor mustahab ha.

es photo mai sa aik point ke mojha smajhh nah aa rehi ka sabz aor wwhite imama sharif ka sawab aik jetna kaisa ha? kuo ka aik sunnat ha aorr dosra sunnat nah (mustahab aorr jaiz ha)??

 

post-16911-0-90865500-1440949871_thumb.gif

Share this post


Link to post
Share on other sites

yeh kam afzal or zyada afzal ki mujhe samajh nahi aarahi. dawateislami men kayi safaid imama bhi pehnte hain, kala or deger rang bhi pehnte hain.

 

mufti faiz ahmed owaisi sahb aleh rahma ka pora risala mojod hai sabz imama ke hawale. mufti abdul razzaq sahib ka pora risala mojod hai. khalil rana sahb or saeedi sahb ke articles bhi islamimehfil per mojod hain. Allama Haidri sahb aakhir men kehte hain ke kash dawateislami shurow se sabz ki jaga safaid ko sheaar bana leti tu sunnat-e-imama ka sawab milta (pora article tu main ne nahi perha mager lagta hay keh inke ikhtilaf ke mutabiq rang tabdeel kerne se sunnat ka sawab khatam ho jata hay).. jabke mufti faiz ahmed owaisi sahb likhte hain ke sunnat ka pora sawab mile ga. baz ulema ko ikhtilaf hai tu hum unka bhi adab kerte hain. ulema ka kayi masail per ikhtilaf sadiyon se chala aaraha hay.. jo is ikhtilaf ko base bana ker tanqeed kerte hain, maqam e ghor unke lye hoga ke woh kis pr tanqed ker rahe hain. sunnat pr ya ulema pr. dono soraton men apni akhirat tabah keren ge.

 

http://library.faizaneattar.net/Books/index.php?id=35

http://library.faizaneattar.net/Books/index.php?id=355

 

Khas hadees ke hawale se Muhaqqiq 'Ala al-Itlaaq Sheikh Abdul Haqq Muhaddith Dehlvi rehmatullah-aleh ki gawahi.

 


screenshot-library faizaneattar net 2015-08-31 07-56-48.png

 

edit: Jazak Allah, khalil rana sahb ne pore scan hi post ker dye hain.

Edited by Kilk-e-Raza

Share this post


Link to post
Share on other sites

Janab. Ap bhaaai thik frma raha ha , ma na khod sabz imama ka jawaz aorrr istihbaab mana ha.

khas sabz imama sunnat ha yah nah, es ma ikhtilaf ha.

mojha sabz imama ko ghair masnoon (sirf jaeiz aorr mustahab) kahnay wala ulamaa ka qaol aorr dalaael zyada mazboot lagta ha.

ma sabz imam sharif ko jaeiz aor mustahab bhe manta hon mgar asl sunnat white imama sharif ko manta hon.

Hadrat Allama Faiz Ahmad Owaisi nay bhe isay jaeiz aor mustahab mana ha sabz colour ka imama sharif ko.

baqe aap bhaeiyo ka aksar dalaaeil ka answers mojod ha maieri opar ke poston ma (maqalat_i_haidri ma).

Share this post


Link to post
Share on other sites

aap kese keh saktey hen k sabz imama sunnat ne jab k nabi ( ap per salaam) se sabz imama phenana sabit he..haan lekin kabhi kabhi...or apko sabz rang mehboob bhi tha..

 

dosra sawal jo log mustaqil tor per safaid phenntey hen wo kabhi kabaar sabz q nahi phentey...srf dawat e islami per ieteraaz q...

 

or aik sawal k srf dawat e islami mustaqil tor per or her aam islami bahi ko b imama sharif pheneney ki targheeb dilati he..jab k dosrey ya tu srf alim ya naat khuwano ko...

 

is terha ki behes ker k aap apney aapko kharab kerey ge dawat e islami ko nahi rok sakey ge q k Allah ka shuker he ahle sunnat wa jamaat dawat e islami k sath hen or dawat e islami unk sath he...

Share this post


Link to post
Share on other sites

aap kese keh saktey hen k sabz imama sunnat ne jab k nabi ( ap per salaam) se sabz imama phenana sabit he..haan lekin kabhi kabhi...or apko sabz rang mehboob bhi tha..

 

dosra sawal jo log mustaqil tor per safaid phenntey hen wo kabhi kabaar sabz q nahi phentey...srf dawat e islami per ieteraaz q...

 

or aik sawal k srf dawat e islami mustaqil tor per or her aam islami bahi ko b imama sharif pheneney ki targheeb dilati he..jab k dosrey ya tu srf alim ya naat khuwano ko...

 

is terha ki behes ker k aap apney aapko kharab kerey ge dawat e islami ko nahi rok sakey ge q k Allah ka shuker he ahle sunnat wa jamaat dawat e islami k sath hen or dawat e islami unk sath he...

junoon26 bhai, thora junoon kam kary......

ma na kab dawat_i_islami par itraz kiya??

apni taraf sa baatay mat banaey.

ye khalisatan ilmee behs the aorr ha.

ksee par tan o tashnee hargiz nah.

jo ap na kabhe kabhar walee baat ke ha toh opar maeri sarii poston ko aik daffa parh to laeta, mqalat ma he es ka answer mojod ha.

ap ko ab ma keiya kah sakta hoo, ma khod bhee dawat_i_islami ma hoo.

jahaan tak mojha elm hua ha woh yihi ha kay dawat_i_islami bhee sabz color ka imama sharif ko mustahab kahtee ha..khas green color ka imama ko sunnat nah kahtee. jaiesa Hadrat Allama Faiz_i_Ahmad Owaisi Sahb na farmaya ha. asali sunnat white color ka imama sharif hee ha. laikin green color ka imama sharif bhee mustahab ha.

aap ka ye kahna intaha darjay ka ghalat baat ha kay ka ``dosaray`` sirf alim ya naat khwan hadraat ko imama sharif sajanay ka kahtay ha. es ka koui sboot toh daein ! khali kholi daway sa kam nah chalay ga. aap sunniyo par buht bara ilzam lgaa rahay ha. esi baat sa taoba karein..

aap ka ye farmana ka ``esi bahas sa ma apna aap ko kharab karoo ga`` app ka apna man-na ha. ma toh serf elmi lehaz sa aik chez ke tahqiq chatha tha aorr hon, aap he marie baat ko aorr roop da raha ha..

ap ka ye kahna maeray kheiyal ma bilkul thik nah ha kay dawat_i_islami ahl sunnat kay sath ha aorr ahl sunnat dawat_i_islami ka sath.....kuu ka dawat_i_islami ahl sunnat ma koi farq hee nahee ha, donu aek hee cheez ha, toh es tarah kah kay aap en ma farq kuu kar raha ha??

Edited by kashmeerkhan

Share this post


Link to post
Share on other sites

حضور نبی کریم ﷺ نماز ظہر کے آخری دو نفل کبھی ادا فرماتے تھے اور کبھی نہیں


ہم نے ایسے نمازی بھی دیکھے ہیں کہ جو نماز ظہر کے آخری دو نفل کبھی چھوڑتے ہی نہیں


اِن نہ چھوڑنے والوں کو کیا کہا جائے گا  ؟


Share this post


Link to post
Share on other sites

میرے محترم خلیل رانا صاحب۔

اب جس طرح کی بحث شروع ہونے لگی ہے ، اس کا کیا فائدہ کیونکہ میں استحباب مانتا ہوں سبز عمامہ شریف کا اور خود بھی اسی رنگ کا عمامہ شریف باندھنے کی سعادت حاصل کرتا ہوں۔

اختلاف کی تنقیح اوپر ہو چکی میری طرف سے۔

آپ مقالات حیدری میں موجود ان دلائل کا دلائل سے رد فرما دیں جن میں سبز عمامہ کے غیر مسنون ہونے کا بیان ہے (جبکہ استحباب کے تو وہ بھی قائل ہیں)۔ مجھے دونوں دلائل میں سے جو قوی لگے ، انہیں مان جاؤں گا ، فی الحال میرا موقف بعینیہ وہی ہے جو مقالات حیدری میں موجود ہے اور میری معلومات کے مطابق دعوت اسلامی بھی خاص سبز رنگ کے عمامہ شریف کو مستحب مانتی ہے ، نہ کہ سنت۔ اگر ایک کام کو میرے اور آپکے اور تمام کائنات کے رسول پاک ﷺ سر انجام دیں ، تو لازمی نہیں کہ وہ سنت بھی ہو ، جائز و مستحب بھی تو ہو سکتا ہے ، اسی لیے میرا ماننا یہی ہے کہ اصل سنت سفید رنگ کا عمامہ شریف ہی ہے ۔ سبز رنگ کا عمامہ شریف پہننا میرے کملی والے آقا تاجدار مدینہ ﷺ سے ثابت ہے مگر احیانا ، اسی لیے یہ باب استحباب میں دلیل بنتا ہے ورنہ سنت موکدہ کا ترک بھی توثابت ہے میرے نبی کریم ﷺ سے۔


فضائل عمامہ ۔۔۔از علامہ محمد فیض احمد اویسی بہاولپوری نور اللہ مرقدہ

قطب مدینہ پبلشرز


post-16911-0-14734800-1441045124_thumb.gif


post-16911-0-57682300-1441045146_thumb.gif



آپ کے سامنے میں طفل مکتب سے زیادہ نہیں ہوں ۔ آپ کا بے حد احترام ہے میرے دل و

دماغ میں ، معذرت کہ آپکو زحمت دی۔

و العذر عند کرام الناس مقبول

 

 

 



piyarey bahi aap shyd ghalat samjh rahey hen...ya me sahi nahi samjha reha...anyways...

میرے پیارے بھائی جان۔۔
بس ایسا ہی کچھ ہے۔۔۔
میں خود بھی سبز رنگ کا عمامہ شریف باندھتا ہوں اور اسے مستحب جانتا ہوں۔۔
اللہ عزوجل ہمیں مدینہ شریف کی با ادب حاضری نصیب فرمائے۔۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

سونا جنگل رات اندھیری چھائی بدلی کالی ہے

سونے والو جاگتے رہیو چوروں کی رکھوالی ہے

 

 

جناب ہر عالم کی اپنی تحقیق جو انھوں نے سمجھا لکھا دیا۔ آپ سبزعمامہ کیا سمجھ کر باندھتے ہیں یہ آپ کی نیت

 

کیا فرماتے ہیں علماء دین و مفتیان شرع متین کہ کون کون سے رنگ کا عمامہ باندھنا سنت ہے؟ نیز سبز عمامہ باندھنا کیسا؟ اس کا ثبوت بحوالہ کتب دیجئے؟
بینوا توجروا
محمد عاصم قریشی
محلہ جہانگیر آباد‘ ناظم آباد 2 کراچی
الجواب ہوا لموفق للصواب
ابو عبداﷲ رضی اﷲ عنہ کی حدیث … اسناد مروی ہے
1: قال ادرکت المہاجرین الاولین یعتمون بعمائم گرابیس سسود وبیض و حمر وخضر وصفر الخ
یعنی اولین مہاجرین صحابہ کو ابو عبداﷲ فرماتے ہیں کہ سفید‘ سیاہ‘ سرخ‘ سبز اور زرد عمامے باندھے دیکھا (مصنف ابن ابی شیبہ ج 6‘ ص 48‘ طبع امدادیہ ملتان)
2: علامہ خازن بغدادی علیہ الرحمہ الہادی رقم طراز ہیں:
قال ابن عباس رضی اﷲ عنہما کان سیما الملٰئکۃ یوم بدر عمائم بیضو یوم حنین عمائم خضر
یعنی بدر کے روز فرشتوں کے سفید اور حنین کے روز سبز عمامے تھے (خازن ج 1 ص 182‘ مطبوعہ کوئٹہ)
3: امام عبدالغنی نابلسی علیہ الرحمہ رقم طراز ہیں
ثم یہبط عیسٰی علیہ السلام الی الارض فہو متعمم بعمامۃ خضرآء
یعنی عیسٰی علیہ السلام قرب قیامت میں سبز عمامہ میں نزول فرمائیں گے (حدیقہ ندیہ ج 2 ص 273)
4: شیخ احمد صاوی مالکی رقم طراز ہیں:
روز حنین فرشتوں کی نشانی سرخ عمامے تھے (صاوی ج 2 ص 41‘ مطبوعہ مکتبہ غوثیہ کراچی)
5: نیز خود رحمت عالم صلی اﷲ علیہ وسلم سے مختلف رنگوں کا عمامہ باندھنا ثابت ہے‘ جیسا کہ
6: مشکوٰۃ شریف باب الجمعہ میں مخطب وعلیہ عمامۃ سوداء
یعنی خطیب الانبیائﷺ خطبہ ارشاد فرما رہے تھے دراں حالیکہ کہ سر اقدس پر سیاہ عمامہ تھا (یاد رہے کہ کثرت کتب حدیث مع صحاح ستہ 22 کے لگ بھگ روایات میں سیاہ عمامہ ثابت ہے)
7: شیخ محقق عبدالحق محدث دہلوی علیہ الرحمہ رقم طراز ہیں۔
دستار آنحضرتﷺ اکثر سفید بود وگاہے سیاہ و احیانا سبز یعنی دستار آنحضرت اکثر سفید سیاہ و کبھی سبز ہوتی تھی (ضیاء القلوب فی لباس  المحبوب ص 3)
8: علامہ احمد جیون ہندی علیہ الرحمہ رقم طراز ہیں:
’’سرکارﷺ کا عمامہ سرخ و سیاہ ہوتا تھا‘‘ (نورالانوار ص 179‘ مطبوعہ مکتبہ رحمانیہ لاہور)
9: حاجی امداد اﷲ مہاجر مکی علیہ الرحمہ رقم طراز ہیں
’’سرکار کے سفید کپڑوں اور سبز عمامہ کا تصور باندھو‘‘ (کلیات امداد)
10: مولانا شفیع اوکاڑوی علیہ الرحمہ رقم طراز ہیں
’’سرکارﷺ نے حالت مرض میں زرد عمامہ بھی باندھا ہے‘‘ (ذکر جمیل)
الغرض سفید‘ سیاہ‘ سبز‘ سرخ‘ زرد رنگ کے عمامے باندھنا سنت مصطفے‘ سنت ملائکہ اور سنت صحابہ سے ثابت ہے اور سبز عمامہ کے ان نقلی دلائل کے ساتھ ایک عقلی دلیل یہ بھی ہے کہ شاہی مسجد لاہور میں تبرکات منسوبہ بہ حضرت محمد مصطفیٰ علیہ التحیتہ والثناء میں سبز عمامہ بھی ہے

  • Like 2

Share this post


Link to post
Share on other sites

میرے نزدیک اصل سنت رسول سفید رنگ کا عمامہ شریف ہے

اور رنگوں کے عمامہ شریف مستحب ہیں۔۔

کملی والے نبی پاک ﷺ سے جو سفید رنگ کے علاوہ والے عمامہ شریف ثابت ہیں، وہ سفید والے کے اصل سنت ہونے کے منافی نہیں ہیں۔۔

میرے سب دلائل اوپر بیان شدہ ہیں اور جہاں تک مجھے معلوم ہے حضرت علامہ اویسی صاحب نور اللہ مرقدہ نے بھی خاص سبز عمامہ کو سنت نہیں فرمایا۔۔

باقی آپ حضرات کی جو تحقیق ہے ، مجھے اس سے کوئی اصولی اختلاف ہرگز نہیں ہے۔۔۔

میں سبز عمامہ مستحب جانتے ہوئے اور سفید عمامہ سنت سمجھ کر پہنتا ہوں ۔ فا الحمد للہ

علامہ اویسی صاحب نور اللہ مرقدہ کی کتاب میں سے دو پیج لگائے ہیں میں نے اوپر ، ان پر بھی کسی قدر روشنی ڈال دیں جہاں لباس مشہوری سے روکا گیا ہے اور بالخصوص سبز عمامہ شریف کے متعلق انہوں نے حوالہ قرطاس فرمایا ہے۔

مغل بھائی کے پیش کردہ دلائل سے بھی سبز اور دیگر کلر کے عمامہ شریف کا استحباب ثابت ہو رہفا ہے ، اصلی سنت سفید رنگ کا عمامہ ہی ہے۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

میرے نزدیک اصل سنت رسول سفید رنگ کا عمامہ شریف ہے

اور رنگوں کے عمامہ شریف مستحب ہیں۔۔

 

ap ke nazdek sabz ya kisi or rang ke imama se sunnat e imama ada hogi ya nahi?

Share this post


Link to post
Share on other sites

ap ke nazdek sabz ya kisi or rang ke imama se sunnat e imama ada hogi ya nahi?

maray bhaai.

mairee sari posts read to kar laye opar de gaei..

mqalat walee bhee.

post-16911-0-72944200-1441222504_thumb.png

Share this post


Link to post
Share on other sites

maray bhaai.

mairee sari posts read to kar laye opar de gaei..

mqalat walee bhee.

attachicon.gifkash.png

 

 

moalif ka hawala naqal kerne ke bad jawab men zaati raye likhi gayi hay. kya Sarkar (saw) ka kabhi kabhi kya howa koi kam kerna sunnat na hoga? is bat ki daleel chahye.

 

screenshot-www islamimehfil com 2015-09-04 15-15-03.png

Share this post


Link to post
Share on other sites

moalif ka hawala naqal kerne ke bad jawab men zaati raye likhi gayi hay. kya Sarkar (saw) ka kabhi kabhi kya howa koi kam kerna sunnat na hoga? is bat ki daleel chahye.

 

attachicon.gifscreenshot-www islamimehfil com 2015-09-04 15-15-03.png

mairi sari posts ka answer daen aap , pher he koch kahaen...

aap ka all dalaail ka answer already given ha opaar..

ap ka sunnat ka baray ma kea gea sawal boht mubham ha..

Share this post


Link to post
Share on other sites

جناب، میرے نزدیک اصل سنت عمامہ ہے نہ کہ رنگ سنت  عمامہ۔اگر سبز، کالا، فیروزی یا کسی بھی اور رنگ سے سنت عمامہ ادا ہوتی ہے تو مسئلہ حل ہے۔ اگر سفیدسے رنگ  کا اضافی ثواب ہے تو یہ سونے پر سہاگہ ہوگا۔ لیکن پھر یہی بات کالے اور سبز وغیرہ کے لئے بھی کچھ نہ کچھ ثابت ہوگی کہ اکثر نہ سہی لیکن کبھی کبھار تو ثابت ہی ہے۔اگرچہ افضل سفید ہی ہے۔

آپ اگر  مفتی فیض احمد اویسی صاحب  رحمۃ اللہ علیہ کی اس بات سے متفق ہیں جو آپ نے پوسٹ نمبر۶ میں لکھی ہے تو پھر یہاں کسی مزید بحث کی حاجت نہیں رہتی۔ کیونکہ میں مفتی صاحب علیہ الرحمہ کی بات سے سو فیصد اتفاق کرتا ہوں۔

 

post-16911-0-90865500-1440949871.gif

 

 

Share this post


Link to post
Share on other sites

 

جناب، میرے نزدیک اصل سنت عمامہ ہے نہ کہ رنگ سنت  عمامہ۔اگر سبز، کالا، فیروزی یا کسی بھی اور رنگ سے سنت عمامہ ادا ہوتی ہے تو مسئلہ حل ہے۔ اگر سفیدسے رنگ  کا اضافی ثواب ہے تو یہ سونے پر سہاگہ ہوگا۔ لیکن پھر یہی بات کالے اور سبز وغیرہ کے لئے بھی کچھ نہ کچھ ثابت ہوگی کہ اکثر نہ سہی لیکن کبھی کبھار تو ثابت ہی ہے۔اگرچہ افضل سفید ہی ہے۔

آپ اگر  مفتی فیض احمد اویسی صاحب  رحمۃ اللہ علیہ کی اس بات سے متفق ہیں جو آپ نے پوسٹ نمبر۶ میں لکھی ہے تو پھر یہاں کسی مزید بحث کی حاجت نہیں رہتی۔ کیونکہ میں مفتی صاحب علیہ الرحمہ کی بات سے سو فیصد اتفاق کرتا ہوں۔

 

post-16911-0-90865500-1440949871.gif

 

 

 

میرے قابل احترام برادر۔،۔

اتنے دلائل اور آپکے دلائل کے جوابات نہایت احسن طریقہ پر دئیے گئے ہیں میرے پوسٹ آف مقالات۔

انکی طرف بھی التفات فرما دیں۔

میں نے عرض کیا تھا کہ سنت کے حوالے سے آپکا سوال کافی مبہم ہے، اسے بھی واضح فرما دیں۔

میری پچھلی پوسٹوں میں اتنی باتیں بغیر جواب گذر گئیں، برائے مدینہ انکے جوابات بھی عنایت کر دیں۔۔۔۔۔

اسکے متعلق بھی بیان فرما دیں۔

جزاک اللہ خیرا و احسن الجزاء

post-16911-0-30427200-1442204225_thumb.gif

Share this post


Link to post
Share on other sites

جناب،آپ اتنے ذہین آدمی ہیں پھر بھی بات کو بحث برائے بحث کی طرف لے جارہے ہیں۔ اگر آپ میری پہلی پوسٹ کو پڑھیں تو اس میں صاف لفظوں میں لکھا ہے کہ مسئلہ میں علماء کا اختلاف ہے اور اختلاف تو آپ نے خود ہی پوسٹ کر دیا۔ اب ایک کی حمایت دوسرے  کی نفی کا کیا تُک بنتا ہے؟ آپ اگر صرف سفید عمامہ کو ہی سنت سمجھتے ہیں جیسا کہ علامہ حیدری صاحب نے لکھا ہے تو ٹھیک ہے۔ آپ کو پورا حق حاصل ہے۔ مگر دعوت اسلامی والے بھائی دوسرے علمائے کرام کے فتوی پر عمل پیرا ہیں جنہوں نے بالکل واضح لفظوں میں لکھا کہ "سبز عمامہ کا بھی وہی ثواب ہے جو سفید کا ہے"۔ میرا سوال  سنت کہ حوالہ سے ہرگز مبہم نہیں ہے۔جو کام سرور کائنات صلی اللہ علیہ وسلم نے کیا وہ کرنا سنت ہے۔ اگر سنت کی کوئی اور تعریف ہے تو جناب بیان کردیں۔مقالات حیدری کے حوالے سے ایک سوال کیا تھا پوسٹ نمبر ۱۹ میں۔ اس کا جواب نہیں ملا۔


 


میں اپنا سوال پھر سے دہرا رہا ہوں۔ آپ آسان لفظوں میں جواب دے دیں۔


 


میرے نزدیک اصل سنت عمامہ ہے نہ کہ رنگ سنت  عمامہ۔اگر سبز، کالا، فیروزی یا کسی بھی اور رنگ سے سنت عمامہ ادا ہوتی ہے تو مسئلہ حل ہے۔ اگر سفیدسے رنگ  کا اضافی ثواب ہے تو یہ سونے پر سہاگہ ہوگا۔ لیکن پھر یہی بات کالے اور سبز وغیرہ کے لئے بھی کچھ نہ کچھ ثابت ہوگی کہ اکثر نہ سہی لیکن کبھی کبھار تو ثابت ہی ہے۔اگرچہ افضل سفید ہی ہے۔آپ اگر  مفتی فیض احمد اویسی صاحب  رحمۃ اللہ علیہ کی اس بات سے متفق ہیں جو آپ نے پوسٹ نمبر۶ میں لکھی ہے تو پھر یہاں کسی مزید بحث کی حاجت نہیں رہتی۔ کیونکہ میں مفتی صاحب علیہ الرحمہ کی بات سے سو فیصد اتفاق کرتا ہوں۔ 


Share this post


Link to post
Share on other sites

 

جناب،آپ اتنے ذہین آدمی ہیں پھر بھی بات کو بحث برائے بحث کی طرف لے جارہے ہیں۔ اگر آپ میری پہلی پوسٹ کو پڑھیں تو اس میں صاف لفظوں میں لکھا ہے کہ مسئلہ میں علماء کا اختلاف ہے اور اختلاف تو آپ نے خود ہی پوسٹ کر دیا۔ اب ایک کی حمایت دوسرے  کی نفی کا کیا تُک بنتا ہے؟ آپ اگر صرف سفید عمامہ کو ہی سنت سمجھتے ہیں جیسا کہ علامہ حیدری صاحب نے لکھا ہے تو ٹھیک ہے۔ آپ کو پورا حق حاصل ہے۔ مگر دعوت اسلامی والے بھائی دوسرے علمائے کرام کے فتوی پر عمل پیرا ہیں جنہوں نے بالکل واضح لفظوں میں لکھا کہ "سبز عمامہ کا بھی وہی ثواب ہے جو سفید کا ہے"۔ میرا سوال  سنت کہ حوالہ سے ہرگز مبہم نہیں ہے۔جو کام سرور کائنات صلی اللہ علیہ وسلم نے کیا وہ کرنا سنت ہے۔ اگر سنت کی کوئی اور تعریف ہے تو جناب بیان کردیں۔مقالات حیدری کے حوالے سے ایک سوال کیا تھا پوسٹ نمبر ۱۹ میں۔ اس کا جواب نہیں ملا۔

 

میں اپنا سوال پھر سے دہرا رہا ہوں۔ آپ آسان لفظوں میں جواب دے دیں۔

 

میرے نزدیک اصل سنت عمامہ ہے نہ کہ رنگ سنت  عمامہ۔اگر سبز، کالا، فیروزی یا کسی بھی اور رنگ سے سنت عمامہ ادا ہوتی ہے تو مسئلہ حل ہے۔ اگر سفیدسے رنگ  کا اضافی ثواب ہے تو یہ سونے پر سہاگہ ہوگا۔ لیکن پھر یہی بات کالے اور سبز وغیرہ کے لئے بھی کچھ نہ کچھ ثابت ہوگی کہ اکثر نہ سہی لیکن کبھی کبھار تو ثابت ہی ہے۔اگرچہ افضل سفید ہی ہے۔آپ اگر  مفتی فیض احمد اویسی صاحب  رحمۃ اللہ علیہ کی اس بات سے متفق ہیں جو آپ نے پوسٹ نمبر۶ میں لکھی ہے تو پھر یہاں کسی مزید بحث کی حاجت نہیں رہتی۔ کیونکہ میں مفتی صاحب علیہ الرحمہ کی بات سے سو فیصد اتفاق کرتا ہوں۔ 

 

میرے جناب

مجھے اپنی ’’ذہانت‘‘ کا پورا اندازہ ہے! مجھ سا کم علم بندہ اس پورے فورم پر نہیں ملے گا۔

معذرت اگر بحث برائے بحث شروع ہوئی، مجھے اسکا پتہ نہیں ہے۔

جب اختلاف ہے تو اختلاف کی نوعیت کے مطابق تائید یا نفی خودبخود ہو جائے گی اور یہ آپکی پوسٹ ۱۹ سے بھی ظاہر ۔،۔۔

میرے بھائی۔ محض ثواب سے کاموں کے شرعی درجے مقرر نہیں کیے جاتے۔

باقی سنت کی جو تعریف آپ نے بیان فرمائی ہے، وہ بالکل درست نہیں ہے۔

پوسٹ ۱۹ میں آپ نے سوال فرمایا کہ سرکار ﷺ کا کبھی کبھی کیا ہوا کام سنت نہ ہوگا؟ تو جوابا عرض یہ ہے کہ میرے نبی پاک صاحب لولاک ﷺ کا (’’سنت کے اطلاق والے افعال پر‘‘) اکثر انجام دیےہوئے فعل مبارک (جسکی فضیلت خود میرے آقا نبی پاک ﷺ نے بہت زیادہ بیان فرمائی) کے مقابلے میں احیانا کیا ہوا کام جائز و مستحب تو ہے مگر اصل سنت وہی اول الذکر امر ہی ہے۔ جیسا پوسٹ ۱۴ میں میرے سید علامہ اویسی رحمۃ اللہ علیہ نے فرمایا ہے کہ عمامہ باندھنے میں سنت یہ ہے کہ سفید ہو۔،۔

پوسٹ ۱۴ میں ہی لباس شہرت کا بھی لکھا ہے، اسکی طرف بھی نظر فرما لیں۔

ساتھ مقالات حیدری شریف میں دئیے گئے دلائل کا جواب بھی دے دیں کیونکہ آپ نے بھی تو مجھ سے مقالات حیدری کے دلائل پر کیے گئے اپنے سوال کا جواب مانگا ہے۔

Edited by kashmeerkhan

Share this post


Link to post
Share on other sites

جناب،آپ بات کو گھما پھرا کر اپنی مرضی کا مطلب بیان کر رہے ہیں۔  آپ نے لکھا کہ "محض ثواب سے کاموں کے شرعی درجے مقرر نہیں کیے جاتے"۔ مگر ایک بار پھر آپ کا ہی پوسٹ کردہ امیج پوسٹ کر رہا ہوں۔آپ کی آسانی کے لئے کچھ مزید الفاظ کو ہائیلائیٹ کیا ہے۔

 

 

Screenshot_1.png

 

ابھی اس ہائیلائیٹ کی ہوئی عبارت کی روشنی میں، ایک بار پھر میں اپنا سوال مختصراً دہراتا ہوں۔

 

میرے نزدیک اصل سنت عمامہ ہے نہ کہ رنگ سنت  عمامہ۔اگر سبز، کالا، فیروزی یا کسی بھی اور رنگ سے سنت عمامہ ادا ہوتی ہے تو مسئلہ حل ہے۔ اگر سفیدسے رنگ  کا اضافی ثواب ہے تو یہ سونے پر سہاگہ ہوگا۔

 

اگر آپ پھر بھی باضد ہیں کہ صرف سفید رنگ سے سنت عمامہ ادا ہوگی تو میرے اور آپ کے  سید علامہ اویسی رحمۃ اللہ علیہ کی ہائیلائیٹ کی ہوئی بات کا مطلب سمجھا دیں۔ساتھ میں"صرف رنگ کی حیثیت سے  افضلیت سفید عمامے میں ہے" والی انڈر لائین عبارت کا معنی بھی بتا دیجئے گا۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.
Note: Your post will require moderator approval before it will be visible.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.

Loading...
Sign in to follow this  

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

×
×
  • Create New...