Sign in to follow this  
Followers 0
Syed Kamran Qadri

اپنے بازو یا جسم پہ ٹیٹو بنوانا کیسا؟؟؟

1 post in this topic

کیا فرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس بارے میں کہ بعض لوگ اپنے بازو پر یا ہاتھ کی پشت پر اپنا نام یا کوئی ڈیزائن وغیرہ بنواتے ہیں جس کا طریقہ یہ ہوتا ہے کہ بازو یا ہاتھ پر مشین یا سوئی کے ذریعے نام لکھ کر اس میں مخصوص رنگ بھرتے ہیں جس کی وجہ سے کچھ دن بازو یا ہاتھ پر زخم سا بن جاتا ہے، جب وہ زخم ٹھیک ہوتا ہے تو وہ نام یا ڈیزائن واضح ہوجاتا ہے آپ وضاحت کردیں کہ بازو پرمشین یا سوئی کے ذریعے نام کھدوانا یا ہاتھ کی پشت پرزینت کے لیے ڈیزائن  وغیرہ بنوانا شرعاً کیسا ہے؟اور اگر کسی نے ایسا کر لیا ہو تو اب اس کے لیے کیاحکم ہے؟
بسم اللہ الرحمن الرحیم
    الجواب بعون الوھاب اللھم ھدایة الحق والصواب
   بازو پر نام کھدوانایا ہاتھ کی پشت پرکوئی ڈیزائن بنوانا شرعاً ناجائزوممنوع ہے کہ یہ اللہ کی بنائی ہوئی چیز میں تبدیلی کرنا ہے اور اللہ کی تخلیق میں تبدیلی ناجائز وحرام اور شیطانی کام ہے نیز یہ نام اور ڈیزائن عموماً مشین یا سوئی کے ذریعے کھدوایا جاتا ہے( جیسا کے سوال سے ظاہر ہے )جس سے کافی تکلیف ہوتی ہے اور اپنے آپ کو بلا وجہ شرعی تکلیف پہنچانا بھی جائز نہیں۔
 اگر کسی شخص نے اپنے بازو پر اس طرح نام لکھوایا ہے تو اس پر توبہ لازم ہے اور اگردوبارہ بغیر تغییر کے اس نام کو ختم کرنا ممکن ہو تو اس کو ختم کردے اوراگر بغیر تغییر کے ختم کروانا ممکن نہ ہوبلکہ ختم کروانے کے لیے دوبارہ اسی طرح کا عمل کرنا پڑے جیسا نام لکھواتے وقت کیا تھا تو اس کو اسی حال میں رہنے دے اور توبہ و استغفار کرتا رہے۔
  اس طرح بازو پر نام لکھوانے یا ہاتھ کی پشت پر ڈیزائن بنوانا اللہ کی تخلیق میں تبدیلی کرناہے جو کہ ناجائز اور شیطانی کام ہے چنانچہ ارشاد باری تعالیٰ ہے ﴾ولاٰمرنھم فلیغیرن خلق اللہ﴿ترجمہ:(شیطان بولا)میں ضرور انہیں کہوں گا کہ اللہ کی پیدا کی ہوئی چیزیں بدل دیں گے۔
(سورة النساء، آیت 119)
 اس آیت کے تحت تفسیر خزائن العرفان میں ہے:”جسم کو گود کر سرمہ یا سیندور وغیرہ جلد میں پیوست کرکے نقش و نگار بنانا،بالوں میں بال جوڑ کر بڑی بڑی جٹیں بنانا بھی اس میں داخل ہے۔“
           (تفسیر خزائن العرفان،ص175،مطبوعہ ضیاءالقرآن)
 نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم نے بھی ایسا کرنے سے منع فرمایا ہے چنانچہ حدیث پاک میں ہے ۔”لعن اللہ الواشمات والمستوشمات ۔۔۔۔المغیرات خلق اللہ “
ترجمہ: اللہ لعنت کرے گودنے والیوں اور گودوانے والیوں ۔۔۔۔۔اللہ کی تخلیق میں تبدیلی کرنے والیوں پر۔
                     (صحیح مسلم، جلد 2،ص205،مطبوعہ قدیمی کتب خانہ )
 اس حدیث میں لفظ واشمات آیا ہے اس کی شرح بیان کرتے ہوئے مفتی احمد یار خان نعیمی رحمہ اللہ فرماتے ہیں:”واشمہ وہ عورت جو سوئی وغیرہ کے ذریعہ اپنے اعضاءمیں سرمہ یا نیل گودوالے جیسا کہ ہندو عورتیں اور بعض ہندو مرد کرتے ہیں۔“ (مرآةالمناجیح،جلد6،ص153،مطبوعہ نعیمی کتب خانہ) 
 اس طرح بازووغیرہ پرنام لکھوانا اپنے آپ کو تکلیف پہنچانا ہے اوربلا وجہ شرعی اپنے آپ کو تکلیف پہنچانا گناہ ہے چنانچہ ارشاد الساری میں ہے”أن جناية الإنسان على نفسه كجنايته على غيره في الإثم، لأن نفسه ليست ملكًا له مطلقًا، بل هي لله، فلا ينصرف فيها إلا بما أذن له فيه“ترجمہ:بے شک انسان کی اپنے نفس پر زیادتی گناہ ہے جیسا کہ دوسرے پر زیادتی گناہ ہے کیونکہ انسان اپنے نفس کا مطلقاً مالک نہیں ہے بلکہ یہ اللہ تعالیٰ کی ملکیت ہے پس اس میں وہی تصرف جائز ہے جس کی اجازت دی گئی ہے۔
         (ارشاد الساری لشرح صحیح البخاری،جلد14،ص72،مطبوعہ دار الفکر بیروت )
 اگر کسی شخص نے اپنے بازو پر اس طرح نام لکھوایا ہے تو اس پر توبہ لازم ہے اور اگر بغیرتغییر کے اس نام کو ختم کرنا ممکن ہو تو اس کو ختم کردے اوراگر بغیر تغییر کے ختم کروانا ممکن نہ ہو تو اس کو اسی حال میں رہنے دے اور توبہ و استغفار کرتارہے چنانچہ امام اہل سنت امام احمد رضا خان علیہ رحمة الرحمن اس طرح کے سوال کے جواب میں فرماتے ہیں:”یہ غالباً خون نکال کر اسے روک کر کیا جاتا ہے جیسے نیل گدوانا ۔اگر یہی صورت ہو تو اس کے ناجائز ہونے میں کلام نہیں اورجبکہ اس کا ازالہ نا ممکن ہے تو سوا توبہ و استغفار کے کیا علاج ہے، مولیٰ تعالیٰ عزوجل توبہ قبول فرماتا ہے ۔ “
                    (فتاوٰی رضویہ ،جلد 23،ص387،مطبوعہ رضا فاٶنڈیشن )

 

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!


Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.


Sign In Now
Sign in to follow this  
Followers 0

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Similar Content

    • By Ahmed Farhan
      We should be very careful in the selection of books. Books are of different kinds on general or on some specific topics. When a person reads a book he forgot all the care and anxieties of his life and drowns in the imagination of that particular topic of the book. You can find several good books to read on internet which is also a source of relaxation.
    • By Ahmed Farhan
      Islamic books are a treasure of precious knowledge because it will acknowledge you with the historical blessed events of Islam took place fourteen hundred years ago. By reading these blessed events you will get to know about the bravery, modesty and humility of great personalities of Islam.
    • By Ahmed Farhan
      Many blessings be won by those who convert to Islam; the obvious place came to peace and prosperity in heart and soul. Conversion to Islam makes us clearly that we have discovered the most basic truths in life.

    • By Ahmed Farhan
      Converting to Islam is possibly easy through many various ways and the series of articles, videos and lectures discussed and provided by dawateislami’s website are actually such advantages that are hard to find in the present era.