Jump to content
IslamiMehfil

مستدرک کی ایک حدیث کا سکین


Recommended Posts

 

ghalti se غالب likha hua hai.. warna majma uz zawaid, tareekh ibne kaseer, Khasais ul kubra, imam zehbi ki tareekh ul islam waghera me غاءب hi likha hai...

 

ye hadees ki sanad zaeef hai... lekin is hadees ke buhut si sanad hai.. jesa ka Imam zehbi aur Imam jalal uddin syuti ne likha hai...jis ki waja se ye hadees zaeef na rahi...

Alhamdo lillah

Link to post
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.
Note: Your post will require moderator approval before it will be visible.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.

Loading...
  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

  • Similar Content

    • By محمد حسن عطاری
      الدولۃ المکیۃ بالمادۃ الغیبیۃ .pdf
      اللہ تعالیٰ ارشاد فرماتا ہے
      ’’عٰلِمُ الْغَیْبِ فَلَا یُظْهِرُ عَلٰى غَیْبِهٖۤ اَحَدًاۙ(۲۶) اِلَّا مَنِ ارْتَضٰى مِنْ رَّسُوْلٍ‘‘
      ترجمۂ کنزُالعِرفان:غیب کا جاننے والا تو اپنے غیب پر کسی کو مسلط نہیں کرتاسوائے اپنے پسندیدہ رسولوں کے۔(تفسیر صاوی، الانعام، تحت الآیۃ: ۵۹، ۲ / ۵۸۶)
                  علمِ غیب سے متعلق تفصیلی معلومات حاصل کرنے کے لئے اعلیٰ حضرت امام احمد رضاخان  رحمتہ  اللہ علیہ  کی کتاب ’’اَلدَّوْلَۃُ الْمَکِّیَّہْ بِالْمَادَّۃِ الْغَیْبِیَّہْ ‘‘ (علم غیب کے مسئلے کا دلائل کے ساتھ تفصیلی بیان)اور فتاویٰ رضویہ کی 29ویں جلد میں موجود ان رسائل کا مطالعہ فرمائیں (1)’’اِزَاحَۃُ الْعَیْب بِسَیْفِ الْغَیْب ‘‘(علم غیب کے مسئلے سے متعلق دلائل اور بد مذہبوں کا رد ) (2) ’’خَالِصُ الْاِعْتقاد‘‘ (علم غیب سے متعلق120دلائل پر مشتمل ایک عظیم کتاب.
    • By Brailvi Haq
      حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کا فتوی ہے کہ جو کوئی تم سے کہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے تم سے کچھ چھپایا تو وہ جھوٹا ہے.....
       
      اس فتوی کو لیکر وہابی یہ اعتراض کرتے ہیں کہ اگر حضور صلی اللہ علیہ وسلم کو قیامت کا علم تھا تو وہ ہمیں بھی بتانا چاہئیے تھا کیونکہ حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کے فتوی سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ انہوں نے سب کچھ بتادیا ....
       
      اس حوالے سے جواب عنایت فرمائیں نیز اگر صحابہ سے یہ صراحت مل جائے کہ بعض علوم صرف اللہ اور رسول صلی اللہ علیہ وسلم جانتے ہیں تو بہتر ہوگا ..
      اس کے علاوہ وہابی کا اصرار ہے کہ اللہ نے کدھر حکم دیا کچھ چھپانے کا.....اس کا جواب عنایت فرمائیں..
    • By Brailvi Haq
      اس حوالے کا سکین ردکار ہے

    • By Brailvi Haq
      Ak wahabi ne Surah e tauba ki ayaat 101 ka tarjuma send ki he
       
      Tarjuma:Or baazay(kai) tmhare (Nabi صلی اللٰہ علیہ وسلم ) garoh k ganwaar munafik hen or baazay log Madinah wale,Ura rhe the nifaak per tm Inhen nai jante.Hm ko wo malum hen(Al Quran)
       
      یہ آیت نقل کرنے کے بعد اس کا اعتراض یہ ہے کہ اگر نبی صلی اللٰہ علیہ وسلم کو علمِ غیب ہوتا تو کم از کم انہیں ان منافقوں کا ہی پتا چل جاتا.اس اعتراض کا فوری جواب درکار ہے.
×
×
  • Create New...