Sign in to follow this  
Followers 0
Smart Ali

Jis Ki Maa Ya Dadi Syed Ho Kiya Wo Syed Ho Sakta Hay?

6 posts in this topic

(salam)

 

1, Hazrat aik family hay jo apnay ko syed kehti hay. un ko kaha gaya kay app SYED nahi hien to wo kehtay hien. Mayri Maa Syed hien. or meray dada ki wife(dadi) bhi SYED thi to is liya hum SYED hien. app bata dien kay kisi ulmah nay kaha ho kay SYED ki nasal srif BAAP say chalti hay MAA say nahi. barai madinah kisi alim ki book ya fatwa ya video aisi ho jis may bataya gaya ho kay SYED ki nasal BAAP say chalti hay MAA say nahi takay un ki islah ki jasakay

 

2, Sadaat kiraam(SYED) srif hazrat bibbi fatimah ki aulad say hien. hazrat bibi fatimah radi allah anha ki aulad say nabi pak ki aaal chalay gi aisi koi hadees ka reference hay?

 

3, syedoon ka nasab baap say chalay ga maa say nahi. is ka kahi ziker hadees may hay?

Edited by Smart Ali

Share this post


Link to post
Share on other sites

(salam)

 

1, Hazrat aik family hay jo apnay ko syed kehti hay. un ko kaha gaya kay app SYED nahi hien to wo kehtay hien. Mayri Maa Syed hien. or meray dada ki wife(dadi) bhi SYED thi to is liya hum SYED hien. app bata dien kay kisi ulmah nay kaha ho kay SYED ki nasal srif BAAP say chalti hay MAA say nahi. barai madinah kisi alim ki book ya fatwa ya video aisi ho jis may bataya gaya ho kay SYED ki nasal BAAP say chalti hay MAA say nahi takay un ki islah ki jasakay

 

2, Sadaat kiraam(SYED) srif hazrat bibbi fatimah ki aulad say hien. hazrat bibi fatimah radi allah anha ki aulad say nabi pak ki aaal chalay gi aisi koi hadees ka reference hay?

 

3, syedoon ka nasab baap say chalay ga maa say nahi. is ka kahi ziker hadees may hay?

اس فیملی کی بات درست نہیں ہے۔۔،۔،۔ جب تک باپ سید نہ ہو، اولاد سید نہیں ہوسکتی۔

صرف سیدوں کا نسب باپ سے نہیں چلتا، بلکہ ہر قوم نسب باپ سے چلتا ہے۔۔۔،۔،۔

http://www.nafseislam.info/fatwa/answer.php?nsd=VkZaU1VrNUZNVVZVV0d0NVRWUmpNVlJYY0VaT1ZURlZWRlJGUFE9PQ==

 

 

https://www.youtube.com/watch?v=ACj1l-sPGAs

Edited by kashmeerkhan

Share this post


Link to post
Share on other sites

Hazrat ya video or deegar video mojood hien. mager ya to bataya gaya hay kay SYED nahi hongay. mager daleel kiya hay. ya nahi mill rahi

Share this post


Link to post
Share on other sites

Hazrat ya video or deegar video mojood hien. mager ya to bataya gaya hay kay SYED nahi hongay. mager daleel kiya hay. ya nahi mill rahi

ویڈیو کے اوپر ایک اور لنک بھی ہے، اسے سنیں

اصول یہ ہے کہ جو باپ کی قوم ہوگی وہی اسکی اولاد کی ہوگی۔،۔

آپکو اسی کی دلیل چاہیے یا؟؟

یعنی اگر باپ سید ہوگا تو اولاد سید ہوگی، ورنہ نہیِں۔،۔

یہ صرف سید کیلئے نہیں ہے، بلکہ سب کیلئے ہے،۔،۔،۔۔

۔،۔۔۔۔،۔۔۔،۔،۔،

نسب صرف 'باپ' كے لئے

قرآنِ كريم ميں اس بارے ميں صريح حكم آيا ہے :

ادْعُوهُمْ لِآبَائِهِمْ هُوَ أَقْسَطُ عِندَ اللَّـهِ ۚ فَإِن لَّمْ تَعْلَمُوا آبَاءَهُمْ فَإِخْوَانُكُمْ فِي الدِّينِ وَمَوَالِيكُمْ ۚ وَلَيْسَ عَلَيْكُمْ جُنَاحٌ فِيمَا أَخْطَأْتُم بِهِ وَلَـٰكِن مَّا تَعَمَّدَتْ قُلُوبُكُمْ ۚ وَكَانَ اللَّـهُ غَفُورً‌ا رَّ‌حِيمًا ﴿٥...سورۃ الاحزاب

"اور اللہ نے تمہارے منہ بولے بيٹوں كو تمہارے حقيقى بيٹے نہيں بنايا- يہ تمہارے زبانى دعوے ہيں، اللہ ہى حق بات كہتا او رسيدهے راستے كى طرف رہنمائى كرتا ہے- انہيں ان كے حقيقى باپوں سے ہى منسوب كرو، يہى الله كے نزديك زيادہ انصاف والا طريقہ ہے - اگر تمہيں ان كے باپوں كا علم نہ ہو تو پهر يہ تمہارے دينى بهائى يا تمہارے آزاد كردہ غلام ہيں-"

 

صحيح بخارى ميں ہے كہ يہ آيت حضرت زيد بن حارثہ

كے بارے ميں نازل ہوئى كيونكہ اُنہيں اوائل اسلام ميں نبى كريم كا بيٹا كہا جاتا تها- رقم:4782

 

صحيح بخارى كى ہى ايك او رحديث ميں ہے :

أن أبا حذيفة تبنّٰى سالمًا كما تبنى رسول الله ﷺ زيدًا وكان من تبنى رجلًا في الجاهلية دعاه الناس إليه وورث ميراثه حتى أنزل الله تعالى ﴿ادْعُوهُمْ لِآبَائِهِمْ

رقم:4000

 

"ابو حذيفہ نے سالم كو اپنا 'لے پالك' بيٹا بنا ركها تهاجيسا كہ نبى كريم ﷺ نے زيد كوبنايا تها- جاہليت كادستوريہ تها كہ جوجس كو اپنا 'لے پالك' بنا ليتا، لوگ اسى كى طرف اسے منسوب كياكرتے، اور اس كو ہى وارث بنايا جاتا حتى كہ اللہ تعالىٰ نے اس آيت كو نازل فرما ديا كہ انہيں ان كے باپوں كے نام سے ہى پكارو-"

 

نسب ونسل كى اہميت كے پيش نظر قرآنِ كريم ميں اس كے متعلق بعض آيات بهى نازل كى گئى تهيں، بعد ميں آيت ِرجم كى طرح ان كى تلاوت كرنا منسوخ قرار دے ديا گيا-حضرت عبد اللہ بن عباس ايك لمبى حديث ذكر كرتے ہوئے فرماتے ہيں :

إنا كنا نقرأ فيما نقرأ من كتاب الله (أن لا ترغبوا عن آبائكم فإنه كفر بكم أن ترغبوا عن آبائكم)

صحيح بخارى:6830 اور 6768

 

" قرآن كريم ميں ہم يہ آيت بهى پڑها كرتے تهے : تم اپنے باپوں سے اپنى نسبت كو ہٹاؤ مت ، جو كوئى اپنے باپ كے علاوہ اپنى نسبت كرے گويا يہ تمہارے كفر كے مترادف ہے-"

 

درست نسب كى اسلام ميں اہميت اس قدر زيادہ ہے كہ نبى كريم كا فرمان ہے:

(من ادعى إلى غير أبيه وهو يعلم أنه غير أبيه فالجنة عليه حرام)

"جو شخص علم ركهنے كے باوجود اپنے آپ كو باپ كے علاوہ دوسرے كى طرف منسوب كرے تو ايسے شخص پر جنت حرام ہے-

صحيح بخارى: 6766

 

نبى كريم نے ايك فرمان ميں نسب ميں طعنہ زنى كرنے كو جاہلیت اور دوسرے فرمان ميں كفر كے مترادف قرار ديا ہے -

صحيح بخارى: 3850 اور صحيح مسلم:67

 

حضرت انس بن مالك سے مروى ہے :

(من ادّعٰى إلى غير أبيه أو انتمٰى إلى غير مواليه فعليه لعنة الله المتتابعة إلى يوم القيامة

صحيح سنن ابو داود:4268

 

"جو شخص باپ كے سوا يا كوئى غلام اپنے آقا كے سوا دوسرے كى طرف اپنے آپ كو منسوب كرے تو اس پر قيامت قائم ہونے تك متواتراللہ كى لعنت برستى رہتى ہے-"

 

حضرت ابو ہريرہ سے مروى ہے كہ جب لعان كى آيات نازل ہوئيں تو نبى ﷺ نے فرمايا:

(أيما امرأة أدخلتْ على قوم من ليس منهم فليست من الله في شي $ولن يدخلها الله جنته وأيما رجل جحد ولده وهو ينظر إليه احتجب الله منه وفضحه على روٴوس الأولين والآخرين

سنن ابو داود:2263

 

"جو عورت اپنے خاندان ميں ايسے بچے كو داخل كرے جو ان كا نہيں تو اللہ كے ہاں اس كا كوئى حصہ نہيں اور اللہ اس كو اپنى جنت ميں بهى داخل نہ كرے گا- ايسے ہى جو شخص اپنے بيٹے سے انكار كردے حالانكہ اسے معلوم ہے كہ وہ اس كا بيٹا ہے تو اللہ تعالىٰ روزِ قيامت اس سے پردہ فرمائے گا، اور اگلوں پچھلوں ميں اس كو رسوا كرے گا-"

 

مندرجہ بالا قرآنى آيات اور احاديث ِنبويہ سے معلوم ہوتاہے كہ اسلام ميں نسب كو بہت زيادہ اہميت دى گئى ہے اور نسب كو غلط يا خلط ملط كرنے كى شديد مذمت پائى جاتى ہے- ان سے يہ بهى پتہ چلتاہے كہ اسلام كى رو سے نسب اور نسل صر ف باپ (i)كے لئے مخصوص ہے اور يہ نسب ماں كى طرف سے نہيں چلتا۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

Jahan tak mujh faqeer bay ilam nay ulama say parha aur suna hai

 

Yei sirf Rasool e kareem alaihisSalam ki khasiyat hai kay ap ka nasab aap ki pak baiti say chala aur kisi kay leay yei hasil nahee

 

syedo ka nasab bhee baitay say chalta hai syed wo hai jo syeda fatima zahra raziAllahtala anha ki pak baitay baitya hain phir hasnain kareemain raziAllah anhuma ki aulad phir un kay shazado ki aulad aur aagay isi tarah  .

 

 

Wallaho  (azw) waRasoolohu  (saw) aalam  

Edited by aaftab

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!


Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.


Sign In Now
Sign in to follow this  
Followers 0

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.