Jump to content
اسلامی محفل
Sign in to follow this  
Bhai Jaan

حضرت علی والے واقعہ کا اسکین اور حوالہ درکار ہے

Recommended Posts

سیّدنا حضرت علی کرم اللہ وجہہ الکریم کے زمانے میں کچھ عورتوں نے اتفاق کرکے چار چرب زبان عورتوں کو اپنا نما ئندہ منتخب کیا کہ وہ جاکر حضرت علی کرم اللہ وجہہ الکریم سے دریافت کریں کہ امیر المؤمنین جب ایک وقت میں ایک مرد چار عورتیں رکھ سکتا ہے تو ایک عورت چار مرد کیوں نہیں رکھ سکتی۔اسلام ایک عادل مذہب ہے کیا یہ عورتوں پر ظلم نہیں کرتا۔حضرت علی  کرم اللہ وجہہ الکریم نے ان کی شرارت کو بھانپ لیا اور آپ ص نے زبانی کلامی جواب دینے کے بجائے ایک صاف شیشی منگوائی اور چار عورتوں کو الگ الگ پانی دے کر فرمایا :’’اپنا اپنا پانی اس میں ڈالو۔‘‘جب وہ تعمیلِ ارشاد کرچکیں تو آپ صنے ارشاد فرمایا’’اپنا اپنا پانی پہچانو!‘‘انہوں نے اچنبھے سے کہا :
’’یا امیرالمؤمنین!پانی کی ہیئت تو ایک ہی طرح ہے اور اس کی ماہیئت بھی ایک تو اس کا پہچاننا کیوں کر ممکن ہوگا؟‘‘
    حضرت علی صنے فرمایا’’بس یہیں ٹھہر جائو‘‘مادہ منویہ کی ہیئت بھی ایک ہی طرح کی ہوتی ہے اور اس کی ماہیئت بھی ایک،ایسا نہیں کہ کالے مرد کا مادہ تولید کالا اور گورے مرد کا مادہ سفید ہو تو جس طرح ایک شیشی میں اپنے اپنے پانیوں کی شناخت (کرنا) محال ہے اسی طرح جب ایک رحم کے اندر متعدد آدمیوں کی منی جمع ہوگی جس سے استقرار حمل ہوگا پھر جب بچہ پیدا ہوگا تو اس کی پہچان بھی ناممکن اور اس کی نسبت کا تعین محل ہوجائے گا۔بات معقول تھی سب عورتوں کی سمجھ میں آگئی اور وہ خوش خوش لوٹ گئیں۔

 

Edited by Bhai Jaan

Share this post


Link to post
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.
Note: Your post will require moderator approval before it will be visible.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.

Loading...
Sign in to follow this  

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

×
×
  • Create New...