ghulamahmed17

سیدنا علیؓ کو ممبروں پر گالیاں

63 posts in this topic

Posted (edited) · Report post

مجھے جھٹلانے سے آپ اپنے جھوٹ میں اضافہ کریں گے۔ اگر مجھے جھوٹا کہنےکا شوق ھے تو تہذیب التہذیب سے ابو عبداللہ الجدلی کی بحث  پڑھ لیں۔ میری بات نہ ملے تو مجھے جھٹلائیں۔ ورنہ آپ خود ھی جھوٹے بنیں گے۔

شاباش ھمت ھے تو مجھے جھوٹا ثابت کرو۔

Edited by Saeedi

Share this post


Link to post
Share on other sites
Quote

 

مجھے جھٹلانے سے آپ اپنے جھوٹ میں اضافہ کریں گے۔ اگر مجھے جھوٹا کہنےکا شوق ھے تو تہذیب التہذیب سے ابو عبداللہ الجدلی کی بحث  پڑھ لیں۔ میری بات نہ ملے تو مجھے جھٹلائیں۔ ورنہ آپ خود ھی جھوٹے بنیں گے۔

شاباش ھمت ھے تو مجھے جھوٹا ثابت کرو۔

 

 

جناب سعیدی صاحب محترم آپ نے لکھا کہ 

 

ابن حجر عسقلانی نے راوی مذکور کا ثقہ ہونا ذکر کرنے کے باوجود ساتھ ساتھ

 تقریب میں (رمی بالتشیع) اور تہذیب میں(کان شدید التشیع)کے الفاظ بھی اس کے متعلق لکھے ہیں ۔

 

اب اس کو ثابت آپ نے کرنا تھا کہ ابن حجر عسقلانیؒ کا

ابو عبداللہ الجدلی کے بارے

(کان شدید التشیع)

کا عقیدہ ہے ۔

لیکن میرے بار بار کے اصرار کے باوجود آپ کتاب سے

ابن حجر کے یہ الفاظ نہیں دیکھا رہے اور مجھے کہتے ہیں کہ میں دیکھاؤں 

کیا آپ اصولی بات فرما رہے ہیں ، کتاب سے ابن حجر عسقلانیؒ کے یہ الفاظ 

دیکھانا اور ثابت کرنا آپ کے ذمہ ہے نہ کہ میرے 

 

 

 

Share this post


Link to post
Share on other sites
12 hours ago, ghulamahmed17 said:

 

جناب سعیدی صاحب بڑے افسوس کے ساتھ لکھ رہا ہوں کہ

مجھے آپ کی کسی بھی بات پر یقین نہیں جب تک آپ 

 ابن حجر عسقلانیؒ کے یہ الفاظ

(کان شدید التشیع)

ثابت نہیں کر دیتے کہ ابن حجر نے یہ الفاظ  

ابو عبداللہ الجدلی

کے بارے میں کہے ہیں ۔

 آپ کتاب  لگا کر ابن حجر کے وہ الفاظ ثابت کریں

ورنہ میں آپ کو جھٹلانے پر مجبور ہوں ۔

 کیا وجہ ہے کہ آپ  تہذیب التہذیب نہیں دیکھا رہے ؟

------------

مجھے جھٹلانے کے لئے

اب تہذیب التہذیب کے متعلقہ مقام

کا عکس آپ کے ذمہ پڑ چکا ھے۔

آپ عکس دیں اور دکھائیں کہ

ابن حجر نے کان شدید التشیع کے الفاظ نہیں لکھے اور سعیدی جھوٹ بول رہا ھے۔

Share this post


Link to post
Share on other sites
Quote

ابن حجر عسقلانی نے راوی مذکور کا ثقہ ہونا ذکر کرنے کے باوجود ساتھ ساتھ

 تقریب میں (رمی بالتشیع) اور تہذیب میں(کان شدید التشیع)کے الفاظ بھی اس کے متعلق لکھے ہیں ۔

 

آج تقریباً چار پانچ دن آپ جان بوجھ کر یہ کھیل کھیل رہے ہیں ۔

جو حوالہ دیا جائے اگر اسی وقت

اس کی کتاب پیش کر دی جائے تو یہ پریشانی نہ ہو 

شاید آپ کتاب اسی لیے پیش نہیں فرماتے  چلیں 

سعیدی صاحب اگر آپ اس کو امام ابن حجر عسقلانیؒ کا 

قول

ثابت نہ کر سکے تو پھر ؟

-------------------------------

 

Share this post


Link to post
Share on other sites

سعیدی صاحب نے تو لکھا ہوا ہے کہ اگر یہ الفاظ نہ ہوئے تو کہنا کہ سعیدی جھوٹ بول رہا ہے اب اس سےزیادہ آپ کو اور کیا چاہیے ؟؟؟

Share this post


Link to post
Share on other sites
Quote

 

سعیدی صاحب نے تو لکھا ہوا ہے کہ اگر یہ الفاظ نہ ہوئے تو کہنا کہ سعیدی جھوٹ بول رہا ہے اب اس سےزیادہ آپ کو اور کیا چاہیے ؟؟؟

 

                                                  قادری سلطانی صاحب میں نے ایسے ہی نہیں لکھا تھا کہ

 

اس فورم پر سب سے بڑی بڑی باتیں فقط آپ کرتے ہیں لیکن پلے 

کچھ بھی نہیں ہے ۔ 

قادری سلطانی صاحب آپ ہی ہمت کر کے لکھ دیں کہ اگر

یہ قول

  ابن حجر عسقلانی نے راوی مذکور کا ثقہ ہونا ذکر کرنے کے باوجود ساتھ ساتھ  " 

 تقریب میں (رمی بالتشیع) اور تہذیب میں(کان شدید التشیع)کے الفاظ بھی اس کے متعلق لکھے ہیں" ۔


 ابن حجر عسقلانی کا  ثابت  نہ ہوا تو پھر آپ کیا کریں گے ۔

چلیں لکھ دیں ۔ ذرا سی بات ہے ۔

----------------------------

Share this post


Link to post
Share on other sites

قاسم میاں کیا اب آپ کو ہر چیز ہم ~شٹام پیپر~ پر لکھ کر دیں جو کہ ایک بار آپ کو بات سمجھ نہیں آتی؟؟سیدھی سی بات کا سیدھا سا ہم باربار جواب دے رہے ہیں لیکن آپ ہیں کہ ایک ہی راگ الاپ رہے ہیں 

Share this post


Link to post
Share on other sites

اور پلے کس کے کچھ نہیں ہے وہ تو سب دیکھ رہے ہیں کہ ہر ٹاپک میں کیے گیے سوالات میں سے صرف ایک کو کون ہاتھ لگاتا ہے اور باقی سے بھاگتا ہے۔۔۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

Posted (edited) · Report post

 

Quote

قاسم میاں کیا اب آپ کو ہر چیز ہم ~شٹام پیپر~ پر لکھ کر دیں جو کہ ایک بار آپ کو بات سمجھ نہیں آتی؟؟سیدھی سی بات کا سیدھا سا ہم باربار جواب دے رہے ہیں لیکن آپ ہیں کہ ایک ہی راگ الاپ رہے ہیں

جناب سعیدی صاحب کا اعتراض
اعتراض یہ ہے کہ یہ قول
" ابن حجر عسقلانی نے راوی مذکور کا ثقہ ہونا ذکر کرنے کے باوجود ساتھ ساتھ

 تقریب میں (رمی بالتشیع) اور تہذیب میں(کان شدید التشیع)

کے الفاظ بھی اس کے متعلق لکھے ہیں "

جناب محترم سعیدی صاحب
اب جواب پڑھیں
اور (کان شدید التشیع)
کو حافظ ابن حجر عسقلانی کا قول
ثابت کریں ۔
-----------------

 

705- "د ت ص - أبو عبد الله" الجدلي1 الكوفي

اسمه عبد بن عبد وقيل عبد الرحمن بن عبد روى عن خزيمة بن ثابت

وسلمان الفارسي ومعاوية وأبي مسعود الأنصاري وسليمان بن صرد

وعائشة وأم سلمة وعنه أبو إسحاق السبيعي وإبراهيم النخعي قال أبو داود

لم يسمع منه وعامر الشعبي ومعبد بن خالد الجدلي وسمرة بن عطية

وعطاء بن السائب وعمرو بن ميمون الودي على خلاف فيه قال حرب بن إسماعيل
 قيل لأحمد بن حنبل أبو عبد الله الجدلي


 معروف قال نعم ووثقه


 وقال ابن أبي خيثمة عن ابن معين ثقة


 قلت وذكره ابن حبان في الثقات


 وقال روى عنه الحكم بن عتيبة وقال العجلي بصري تابعي ثقة 
وقال ابن سعد
 في الطبقة الأولى من أهل الكوفة اسمه عبد بن عبد بن عبد الله بن أبي العمر بن حبيب بن عائذ بن مالك بن واثلة بن عمرو بن رماح بن يشكر بن عدوان بن عمرو بن قيس عيلان بن مضر يستضعف في حديثه وكان شديد التشيع
 ويزعمون أنه على شرطة المختار فوجهه إلى بن الزبير في ثمان مائة من أهل الكوفة يمنعوا محمد بن الحنفية مما أراد به
-------------------
كتاب تهذيب التهذيب


[ابن حجر العسقلاني]


کتاب لنک


https://al-maktaba.org/book/3310/5869
---------------------------
جناب سعیدی صاحب میں نے بار بار عرض
کیا کہ یہ الفاظ
" (کان شدید التشیع) "
حافظ ابن حجر عسقلانیؒ کے نہیں ہیں ، نہیں ہیں نہیں ہیں ۔

 حافظ ابن حجر عسقلانی جو بات
" تقریب میں (رمی بالتشیع) "
 یعنی  الزام ہے درست اور سچی بات ہے 
کہ یہ واقعی ہی الزام ہے ۔
مگر آپ لوک کسی طور بھی ماننے کو تیار نہیں تھے ۔
اگر یہ الزامات درست ہوتے تو البانی جیسا بندہ
اس حدیث کو کبھی 
حدیثِ صحیحہ نہ لکھتا ۔
اللہ کا شکر ہے کہ میں نے آپ کے غلط اعتراض
کا رد کر دیا ہے ۔ اب میری پیش کردہ حدیث
کو حدیث صحیح مانیں 


امید ہے آپ سمجھداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے کوئی بھی نئی غلطی نہیں کریں گے ۔
----------------------------
 

Picture2asd.thumb.png.b3dae2be23b6a81d7cd0b5714022c57e.png

------------------------------

 

Edited by ghulamahmed17

Share this post


Link to post
Share on other sites
On 9/15/2019 at 0:28 PM, ghulamahmed17 said:

 

جناب سعیدی صاحب کا اعتراض
اعتراض یہ ہے کہ یہ قول
" ابن حجر عسقلانی نے راوی مذکور کا ثقہ ہونا ذکر کرنے کے باوجود ساتھ ساتھ

 تقریب میں (رمی بالتشیع) اور تہذیب میں(کان شدید التشیع)

کے الفاظ بھی اس کے متعلق لکھے ہیں "

جناب محترم سعیدی صاحب
اب جواب پڑھیں
اور (کان شدید التشیع)
کو حافظ ابن حجر عسقلانی کا قول
ثابت کریں ۔
-----------------

 

705- "د ت ص - أبو عبد الله" الجدلي1 الكوفي

اسمه عبد بن عبد وقيل عبد الرحمن بن عبد روى عن خزيمة بن ثابت

وسلمان الفارسي ومعاوية وأبي مسعود الأنصاري وسليمان بن صرد

وعائشة وأم سلمة وعنه أبو إسحاق السبيعي وإبراهيم النخعي قال أبو داود

لم يسمع منه وعامر الشعبي ومعبد بن خالد الجدلي وسمرة بن عطية

وعطاء بن السائب وعمرو بن ميمون الودي على خلاف فيه قال حرب بن إسماعيل
 قيل لأحمد بن حنبل أبو عبد الله الجدلي


 معروف قال نعم ووثقه


 وقال ابن أبي خيثمة عن ابن معين ثقة


 قلت وذكره ابن حبان في الثقات


 وقال روى عنه الحكم بن عتيبة وقال العجلي بصري تابعي ثقة 
وقال ابن سعد
 في الطبقة الأولى من أهل الكوفة اسمه عبد بن عبد بن عبد الله بن أبي العمر بن حبيب بن عائذ بن مالك بن واثلة بن عمرو بن رماح بن يشكر بن عدوان بن عمرو بن قيس عيلان بن مضر يستضعف في حديثه وكان شديد التشيع
 ويزعمون أنه على شرطة المختار فوجهه إلى بن الزبير في ثمان مائة من أهل الكوفة يمنعوا محمد بن الحنفية مما أراد به
-------------------
كتاب تهذيب التهذيب


[ابن حجر العسقلاني]


کتاب لنک


https://al-maktaba.org/book/3310/5869
---------------------------
جناب سعیدی صاحب میں نے بار بار عرض
کیا کہ یہ الفاظ
" (کان شدید التشیع) "
حافظ ابن حجر عسقلانیؒ کے نہیں ہیں ، نہیں ہیں نہیں ہیں ۔

 حافظ ابن حجر عسقلانی جو بات
" تقریب میں (رمی بالتشیع) "
 یعنی  الزام ہے درست اور سچی بات ہے 
کہ یہ واقعی ہی الزام ہے ۔
مگر آپ لوک کسی طور بھی ماننے کو تیار نہیں تھے ۔
اگر یہ الزامات درست ہوتے تو البانی جیسا بندہ
اس حدیث کو کبھی 
حدیثِ صحیحہ نہ لکھتا ۔
اللہ کا شکر ہے کہ میں نے آپ کے غلط اعتراض
کا رد کر دیا ہے ۔ اب میری پیش کردہ حدیث
کو حدیث صحیح مانیں 


امید ہے آپ سمجھداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے کوئی بھی نئی غلطی نہیں کریں گے ۔
----------------------------
 

Picture2asd.thumb.png.b3dae2be23b6a81d7cd0b5714022c57e.png

------------------------------

 

جناب!

میں نے بھی اصل بنیاد تقریب التہذیب کی عبارت کو بنایا تھا اور الزام علیہ ھونے کی بنیاد پر روایت پر جرح کی تھی۔

فتح الباری میں حافظ ابن حجر عسقلانی نے لکھا کہ:

"ما لم یکن داعیۃ او کان وتاب او اعتضدت روایتہ بمتابع، و ھٰذا بیان ما رموا بہ"۔

الزام علیہ لوگوں کی وہ روایت لی جائے گی جو اُن کی الزام کی طرف نہ بلا رھی ھو۔ ۔ ۔الخ

جی قاسم جی!  حافظ کی بات سمجھ آ گئی یا نہیں؟

اور ہاں جی آپ طبقات ابن سعد، میزان الاعتدال ذھبی، معارف ابن قتیبہ کے الفاظ پی گئے ھیں، اُن کا جواب کون دے گا؟

Share this post


Link to post
Share on other sites

میں  نے لکھا تھا جناب سعید ی صاحب آپ جھوٹ بول رہے ہیں ، حافظ ابن حجر عسقلانی نے 

 تهذيب التهذيب میں 

(کان شدید التشیع)

کا قول نہیں  کیا ہے ۔

باربار لکھا کہ یہ محض الزام ہے جس کی تصدیق ابن حجر نے تقریب میں کی ہے

مگر آپ اور قادری سلطانی صاحب نہیں مانیں 

اب سٹام پیپر والے صاحب جی نظر نہیں آ رہے ۔

   جناب سعیدی صاحب  آپ کا اعتراض ختم ہو چکا ، اگر آپ سمجھتے ہیں

تو پھر اب آپ محدثین اور ان علمائے کرام  کو پیش فرمائیں گے

جنہوں نے اس حدیث کا انکار کیا یا ضیف کا حکم لگایا 

اس لیے کہ آپ دونوں  دوست بہت بری طرح جھوٹے ثابت ہوئے ہیں 

امید ہے کہ اب آپ مذید کوئی ایسی غلطی نہیں دھرائیں گے ۔

-------------------------------------

Share this post


Link to post
Share on other sites

ابن حجر عسقلانی نے جو کچھ لکھا وہ میں نے تقریب و تہذیب سے لکھا تھا ۔ آپ اس میں ایک فضول بحث لے آئے جس سے اصل بات میں کوئی فرق نہ پڑا۔ ابن حجر نے اس راوی کو الزام علیہ تسلیم کیا ھے اور اسی بات سے ھم نے استدلال کیا تھا۔ باقی حوالے تبرعا تھے جن میں سے ذھبی، ابن سعد اور معارف کے حوالے آپ پر ادھار ہیں۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

 

Quote

ابن حجر عسقلانی نے جو کچھ لکھا وہ میں نے تقریب و تہذیب سے لکھا تھا ۔ آپ اس میں ایک فضول بحث لے آئے جس سے اصل بات میں کوئی فرق نہ پڑا۔ ابن حجر نے اس راوی کو الزام علیہ تسلیم کیا ھے اور اسی بات سے ھم نے استدلال کیا تھا۔ باقی حوالے تبرعا تھے جن میں سے ذھبی، ابن سعد اور معارف کے حوالے آپ پر ادھار ہیں۔

جناب سعیدی صاحب آپ کے اعتراض کو بریلوی

مفتی نے دیوار پر دے مارا ہے اور اس  کو حدیث صحیح قرار دیا ہے ۔

اللہ سے ڈریں حضرت ام المومنین ام سلمہ رضی اللہ عنہ کی روایت کا حیاء کریں ۔

 آپ کا اعتراض حافظ ابن حجر عسقلانی نے یہ لکھ کر رد کر دیا ہے کہ ابو عبداللہ الجعدلی پر یہ  الزام ہے ۔

اور جناب آپ اپنا یہ جملہ 

" (کان شدید التشیع) "

حافظ ابن حجر عسقلانی کا قول ثابت کرنے پر بڑی بُری طرح جھوٹے اور کذاب

ثابت ہو چکے ہیں ۔ کتاب پیش نہ کرنے کی یہی اک وجہ

تھی کہ میرے بار بار اصرار کے باوجود آپ لوگ کتابیں پیش نہیں کرتے اور  سادہ

لوح مسلمانوں کے سامنے کتابیں نہیں رکھتے ۔ اور ان کو گمراہ کرتے ہو ۔

 بریلویت کی تباہی کا سبب آپ حضرات کی یہی باتیں بن رہا ہے اور ہر اھل سنت

اس سے متنفر ہو رہا ہے ۔  جناب سعیدی صاحب آپ کے ان اعتراضات کی اس وقت

تک اک رتی بھی اہمیت نہیں ہے جب تک کہ آپ اس کو ثابت نہ کر دیں ۔

اور عقیدے باتوں سے ثابت نہیں ہوتے جب تک آپ جمہور اہل سنت کی کتابیں پیش نہ کریں ۔

 لہذا اس حدیث کو ضیف یا غلط ثابت کرنے کے لی محقین ، محدثین اور علماء اکرام کی کتابیں دیکھانا ہو گی

جس پر محققین و محدثین نے حکم لگایا ہو گا ۔

کہ ابو عبداللہ الجدلی غالی شیعہ تھا اور اس کی یہ روایت  نہیں لی جائے گی ۔

اور اس طرح یہ جمہور کی بات ہو گی جس طرف جمہور ہوں گے عقیدے وہ ثابت ہوں گے ۔

 محض اک دو بندوں کے لکھنے یا تصدیق سے بھی عقیدہ ثابت 

نہیں ہوتا  جب تک کہ جمہور علماء اس کی تصدیق نہ کر دیں ۔

اور کتابیں کیسے پیش کی جاتی ہیں ایسے جیسے آپ یہ کتابیں

بریلوی علماء اور محدثین و محققین اور علماء کی دیکھ رہے ہیں ۔

یہ کیا میں سو سو بار اک بات کو لکھتا ہوں اور آپ حضرات میں ہمت نہیں ہوتی کہ

لوگوں کو کتاب دیکھا سکیں اس پر سو سو حلیے اور بہانے کیے جاتے ہیں افسوس ہے

اس حیلہ سازی پر ۔

کتابیں پڑھیں اور اس روایت کو صحیح مانیں ورنہ آپ کتابیں  پیش کریں اور حکم دیکھائیں  کہ 

ابو عبداللہ الجدلی کی یہ روایت قابل قبول اور قابل حجت نہیں ہے ۔

اور یہاں  یہ کتاب اس کے غالی شیعہ ہونے کی تصدیق کر رہی  ہے ۔

کتاب نمبر:1

Picture3ddgh.thumb.png.20538b8dcf7225aa82c61e0b424a5166.png

 

 

کتاب نمبر:2

 

Picture366.thumb.png.241e8f5b98890616864ba10722d97662.png

 

کتاب نمبر:3

 

Picture2wwe.thumb.png.7b94b5dbdf5894ac3c023b1ccf6c69e3.png

 

کتاب نمبر:4

 

Picture1ddrr.thumb.png.89efcc01236d3a2eef9a2c0a65f677c0.png

 

 

کتاب نمبر:5

Picture6.thumb.png.1b9fcb2cfe5020c0af49645f9d796ab9.png

 

 

پنج تن پاک کے نام پر پانچ کتابوں کے حوالہ جات 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 

Edited by ghulamahmed17

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!


Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.


Sign In Now

  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.