Jump to content

kiya tawiz pehnna jaiz hai


ibrahim

Recommended Posts

  • 1 year later...
On 10/9/2009 at 2:14 AM, ibrahim said:

kiya tawiz pehnna jaiz hai is bare me mujhe quran o hadis se bataiye

----------------------

kia koi nahi bata sakta

 

 

Book: Taweez Ka Shar'i Hukam

 

Download:

 

http://www.islamimeh...attach_id=42910

 

Topic

 

http://www.islamimehfil.com/index.php?/topic/11686-book-taweez-ka-shari-hukam

 

Book.2 Tawiz Jaiz Ya Najiaz :

 

 

http://www.islamimehfil.com/index.php?app=core&module=attach&section=attach&attach_id=59046

Link to comment
Share on other sites

  • 1 year later...

مسلمان اللہ عزوجل کی عبادت کرتے ہیں اور عبادت غیر اللہ کی مشرک کرتے ہیں مگر کیا اس سے کوئی نجدی یہ نتیجہ نکال سکتا ہے کہ فی نفسہ عبادت شرک ہے نعوذ باللہ۔

جو شرکیہ تعویز استعمال کرے وہ اسکا اپنا عمل ہے اس بیناد پر عامتۃ المسملمین پر کوئی الزام نہیں آتا۔

 

تعویز یا رقیہ جو کفار مکہ مشرکین استعمال کرتے تھے ان میں جادو ٹونہ سفلی شرکیہ باتیں ہوتی تھیں مسلمان جو تعویز پہنتے یا گھروں دکانوں میں لگاتے ہیں ہیں وہ اللہ عزوجل کے پاک کلام کی آیات یا انکا مبارک نقش ہوتا ہے۔ اسے نجدی گندا ذھن ہی شرک کہہ سکتا ہے کیونکہ ان میں نہ شرم و حیا ہے نہ دین۔ مسلمانوں پر شرک کے فتوے لگا کر نجدی اپنے منہ آپ مشرک کافر بنتے ہیں کیونکہ یہ فتوے ان پر ہی لوٹ جاتے ہیں۔

 

اوپر جو حدیث پاک نجدیوں نے پیش کی اس سے تو نبی کریم علیہ الصلاۃ والتسلیم کا علم بھی ثابت ہوتا ہے کہ جو شرکیہ تعویز بندے نے اندر پہن رکھا تھا سرکار علیہ الصلوۃ والسلام کو اس کا پہلے ہی علم تھا۔ جبکہ وہابی گندا عقیدہ ہے کہ نبی پاک علیہ السلام کو نعوذبااللہ دیوار کے پیچھے کا بھی علم نہیں ۔

Link to comment
Share on other sites

Masnad Ahmad wali riwait sy ye sabit hota hy k Sirf Na baligh bachon k liy taveez jaiz hy . our baligh ko taveez mai likha hoi ayaat yaad ker k perhna hn gi .

 

مختلف تعویزات کا استعمال اور طریقہ بھی مختلف ہوتا ہے اور علم رکھنے والے حضرات اس کو خوب جانتے ہیں۔ سوال کا اصل اعتراض تو روایت سے باطل ہو گیا کہ جو چیز نابالغ کے لئے شرک و ناجائز نہیں و بالغ کے لئے بھی نہیں اگرچہ ۔ اُس مخصوص عمل میں ۔ بہتر آیات یاد کرنا ہی کیوں نہ ہو۔

Link to comment
Share on other sites

 

مختلف تعویزات کا استعمال اور طریقہ بھی مختلف ہوتا ہے اور علم رکھنے والے حضرات اس کو خوب جانتے ہیں۔ سوال کا اصل اعتراض تو روایت سے باطل ہو گیا کہ جو چیز نابالغ کے لئے شرک و ناجائز نہیں و بالغ کے لئے بھی نہیں اگرچہ ۔ اُس مخصوص عمل میں ۔ بہتر آیات یاد کرنا ہی کیوں نہ ہو۔

 

Nai bhai aap ki logic Kamzoor hy

kio k Bachon our bahron ka hukam aik nai ho skta

kio k is taraha ager bachon per namaz roza faraz nai to bahrn per bhe nai honi chaiy .

is liy aap k ye logic kamzoor hy k jo Na baligh k liy shirk nai wo baligh k liy bhe shirk nai ho gi .

Link to comment
Share on other sites

Nai bhai aap ki logic Kamzoor hy

kio k Bachon our bahron ka hukam aik nai ho skta

kio k is taraha ager bachon per namaz roza faraz nai to bahrn per bhe nai honi chaiy .

is liy aap k ye logic kamzoor hy k jo Na baligh k liy shirk nai wo baligh k liy bhe shirk nai ho gi .

تعویز بنا کر بچے کے گلے میں ڈالنے والے حضرت عبداللہ ابن عمر رضی اللہ عنہ ہیں۔ تو کیا وہ شرکیہ عمل کر رہے ہیں؟ آپ اپنی لاجک کی یہاں تسلی کر لیں کہ تعویزات بنا کر گلے میں ڈالنے والا بالغ مسلمان مشرک ہوگا یا نہیں؟۔ نیز شرک کی تعریف بھی معلوم کرلیں۔ فرائض اور کفر کے احکام میں فرق ہے۔ سمجھدار نابالغ کے صریح کفر پر حکم کفر لگتا ہے۔ یہ ایک ٹاپک کافی سال پہلے یہاں پوسٹ کیا گیا تھا۔ پوسٹ نمبر 6 سے دارالفتاء اہلسنت کے فتوی کا امیج ڈیلیٹ ہوچکا ہے۔ البتہ اُس میں ایسا ہی حکم موجود تھا جو عرض کیا۔ پوسٹ نمبر 9 میں تصدیق موجود ہے۔

 

اعلی حضرت امام اہلسنت امام شاہ احمدرضا خان فاضل بریلوی علیہ الرحمہ فتوی افریقہ ص ۱۶ پر فرماتے ہیں: سمجھدار بچہ اگر اسلام کے بعد کفر کرے تو ہمارے نزدیک وہ مرتد ہوگا۔ (کفریہ کلمات کے بارے میں سوال جواب ص ۵۴، ۵۵)

Link to comment
Share on other sites

  • 2 years later...

post-16996-0-46780200-1447675479_thumb.jpg

post-16996-0-72213400-1447675520_thumb.png

12249848_999364910106906_884574413873037

Is Hadees k alfaaz kuch youn hy..

مَنْ عَلَّقَ تَمِيمَةً فَقَدْ أَشْرَكَ
Jisne Tameemah Latkaaya Usne Shirk Kiya. (Musnad e Ahmed)
Jawab #

Hazrat Aata Rh. Al Mutawaffa 114 Hij. ne Kaha Jo Taweez Quraani Majeed se Likhi Jaaye Usko Tamaa-im Shumaar nahi Kiya Jaayega." 

(Sharah Sunnah Lil Baghwi : Jild 12 : Safa 158)

 

Link to comment
Share on other sites

Wahabi Najdi Quran k Gustakh, 3 Wahabi Ulma Ka Fatwa..

likhty hain..
"Aisy Taweezat jo Ayat-e-Quryaniya aur mansoon duaon per mushtimal hon, Unhy Tamimah Kehna Quran-o-sunnat ki toheen hy"

phir agy likhty hain..

"Kalam Allah aur Mansoon Duaon ko Tamimah Jaisa bura naam dyna bohat bara zulam hy"

(Sunan Abu Dawood).

Is k mutarjim, Tashreeh aur Takhreejh 3 Wahabi ulma ne ki hy..
post-16996-0-42048100-1447688015_thumb.png

Link to comment
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.
Note: Your post will require moderator approval before it will be visible.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.

Loading...
  • Recently Browsing   0 members

    • No registered users viewing this page.
×
×
  • Create New...