Jump to content
اسلامی محفل

غلام محمد

Members
  • Content Count

    16
  • Joined

  • Last visited

Everything posted by غلام محمد

  1. خالد محمود دیوبندی کی قبر بنی دیوبندی حرام کاموں کا آماجگاہ ۔دیوبندی وہابی معمولات اہل سنت سے بغضں رکھتے ہیں مگر چوری چپکے وہی سب کچھ خود بھی کرتے ہیں ایک طرف ناجائز بدعت وحرام کے فتوی لگاتے ہیں اور دوسری طرف اسی کو ثواب سمجھ کر خود بھی کرتے ہیں جی ہاں۔فرقہ وہابیہ دیوبندیہ کا کذاب اعظم مولوی خالد محمود مانچسٹروی مر کر مٹی میں مل گیا تو یہی دیوبندی اس کی قبر پر پھول ،پتی،شاخیں اس کی قبر پر لگاتے ہوئے نظر آئے جب کہ قبروں پر پھول ڈالنا یہ دیوخوانی وہابی دھرم میں ناجائز بدعت و حرام ہے ۔اس کی ایک مثال فتوی سمیت مد نظر رکھیں اور خود فیصلہ کریں اس کے علاؤہ بھی ان کے کئی مولوی اس قسم کے اور اس بھی سخت فتوے دے چکے ہیں مفتی رشید احمد کے فتاوی میں سوال ہوا کہ ؛؛کیا قبر پر ہری شاخ گاڑنا یا پھول ڈالنا مستحب ہے؟ اس پر مفتی رشید احمد دیوبندی جواب دیتا ہے ‘’ حضور اکرام صلی اللہ علیہ وسلم نے دو قبروں پر کھجور کی شاخ کے دو ٹکڑے رکھ کر فرمایا کہ جب تک یہ خشک نہ ہونگے عذاب میں تخفیف ر ہے گی یہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے ہاتھ کی برکت تھی اگر یہ قاعدہ عام ہوتا تو حضرات صحابہ کرام رضوان اللہ علیھم اجمعین ضرور اس کا اہتمام فرماتے کیونکہ یہ حضرات حریص علی الخیر تھے حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے قول و فعل کو سمجھنے کے لئے حضرات صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کے تعامل کو دیکھنا لازم ہے، ان کا تعامل حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے قول و عمل کی تفسیر ہے نیز آجکل جسقدر اس کا اہتمام کیا جاتا ہے اس کو لازم سمجھا جاتا ہے اس کے بدعت ہونے میں کچھ شبہہ نہیں مزید بریں ایسی چیزوں سے لوگوں کی گناہوں پر جراءت پڑھتی ہے اس لئے نا جائز ہے پھول ڈالنے کی رسم بدعت ہے شریعت میں اس کا کوئی ثبوت نہیں۔ احسن افتاوی جلد 01 صفحہ 374 زندگی بھر خالد محمود دیوبندی وہابی جھوٹ بولتا رہا شرک بدعت حرام کے فتاوی لگاتا رہا آج اسی کی قبر کو دیوبندی ناجائز و حرام کاموں نے اپنے فتووں کی روشنی میں حرام کاموں کی آماجگاہ بنایا ہوا ہے یہ ان کی منافقت کی تازہ مثال ہے
  2. عبدالماجد دریابادی کے چکر میں ساری دیوبندیت ہوسیل میں کافر ABDUL Majid Ke Chakkar Mein Deobanadi Fatwe Se Saari Deobandiat Kafir وہابی دیوبندی مولوی تقی عثمانی عبدالماجد دریابادی دیوبندی کی مرزائیت نوازی کا ثبوت دیتے ہوئے لکھتا ہے کہ ‘ قادیانیت کے مسئلے میں ان [عبدالماجددریابادی] کا نرم گوشہ پوری امت کو معلوم تھا ۔ نقوش رفتگاں صفحہ 80 یعنی بقول مولوی تقی عثمانی کے عبدالماجد دریابادی مرزا کو مسلمان سمجھتا تھا تاویل کرتا تھا ۔قادیانیوں کے کفر میں شک کرنے والے اور تاویل کرنے والوں کے تعلق سے دیوبندی مذہب ہی کے ایک مولوی سمیع الحق دیوبندی وہابی کیا کہتا ہے خود پڑھیں دیوخوانی سمیع الحق لکھتا ہے مرزا غلام احمد قادیانی بوجہ اپنے دعاوی باطلہ کے قرآن و سنت کی نصوص قطعیہ اور اجماع امت کے بموجب ‘قطعی کافر ہے اور مرتد ہے اور انہی وجوہات کی وجہ سے مرزا غلام احمد قادیانی کے ایسے معتقدات کو اپنانے والے یا اس کا اتباع کرنے والے یا اس کی تصدیق و تائید یا تاویل کرنے والے قطعی کافر ،مرتد اور خارج از اسلام ہیں ۔ فتاوی ختم نبوت جلد 02 صفحہ مولوی سمیع الحق دیوخوانی وہابی کے اس فتوی سے نہ صرف عبدالماجد دریابادی کافر ہوگیا بلکہ دریابادی کو مسلمان سمجھ کر تقی عثمانی ،اشرفعلی تھانوی بلکہ پوری دیوبندیت ہوسیل میں کافر اور خارج اسلام ثابت ہوگئی
  3. اہلسنت کے خلاف گٹر ابلتی زبان سے بکواس کرنے والا بھگوڑا دیوبندی مناظر ساجد خان اپنی ایک پوسٹ میں کسی انجانے مولوی کے حوالے سے لکھتا ہے کہ "اللہ اگرچہ شرک سے پاک ہے لیکن ایک ایسا عمل و ظیفہ ہے جس میں اللہ بھی بندو کیساتھ شریک ہے اور وہ ہے درود شریف یہ بدترین جہالت ہے یہ جاہلانہ واعظانہ نکتہ سب سے پہلے رضا خانی واعظوں نے ایجاد کیا" یہاں گٹر چھاپ ساجد خان کا یہ کہنا کہ یہ نکتہ سب سے پہلے سنیو نے ایجاد کیا یہ بات مولوی ساجد کی طرح حرام کاری کی بات ہے۔۔۔ اگر یہ سنیو کا بیان کردہ جاہلانہ و واعظانہ نکتہ ہے تو ساجد خان یہاں کیا کہے گا مولوی زکریا کاندھلوی دیوبندی اپنی کتاب فضائل درود صفحہ 6 پر لکھتا ہے کہ "اس سے بڑھ کر اور کیا فضیلت ہوگی کہ اس عمل میں اللہ اور اس کے فرشتوں کیساتھ مومنین کی شرکت ہے"۔۔۔۔ ساجد خان ذرا یہاں بھی اپنی زبان کھولنے کی ہمت تو کرو اور کہدو کہ مولوی زکریا جاہل انسان تھا اس لیئے اس نے مبنی بر جہالت بات لکھدی اور یہ کہ "اللہ عبادات و وظائف سے پاک ہے وہ معبود ہے نہ کہ عابد کوئ ایسا عمل نہیں جس میں رب اور بندے دونوں شریک ہوں مخلوق کا عمل حادث محدود تو اللہ اس میں کیسے شریک ؟ پھر شریک اس وقت بولا جاتا ہے جب پہلے یہ عمل نہ کرتا ہو یعنی وجود بعد العدم اور یہ بھی علامت حدوث۔ اس پر مزید بھی ایرادات ہوسکتے ہیں"۔۔ ساجد صاحب اب جاکر وہ مزید ایرادات زکریا کاندھلوی کی قبر پر اسے لازمی سکھا کر سنیوں پر بکواس کرنے آنا۔۔۔۔
  4. اوپر والی پوسٹ غالبا سعیدی صاحب کی اور نیچے والی توحیدی بھائی کی لگ رہی جہاں سے کاپی کی آپ نے وہاں لکھا ہوگا تھڑیڈ میں کچھ میری طرف سے اضافہ بھی شامل کر لیں
  5. خلاصہ یہ کہ الله تعالیٰ کے آگے تذلل اختیار کرنا اور خود کو ذلیل کہنا عبادت ھے ۔ مگر از خود کسی اور کو اللہ کے ہاں ذلیل کہنا گستاخی ھے۔
  6. عینیت اور غیریت کی پانچ تفسیریں تھانوی نے بوادرالنور صفحہ 264-266 میں حکمۃ53 میں لکھی ہیں۔ مفتی احمد یار قبلہ کا کلام معنی اول سے تعلق رکھتا ہے ۔ اور مولانا محمد عمر اچھروی کا کلام معنی ثالث کے تحت دوسری تفسیر ھے :- "اس تفسیر میں ایک قید اور بڑھاتے ہیں یعنی اس احتیاج الخلق الی الخلق کا علم و معرفت بھی حاصل ھو۔ اس معنی مقید کے اعتبار سے تمام مخلوقات میں سے صرف عارف کے لئے عینیت کا اثبات کرتے ہیں"- اور مولانا اچھروی بھی بیعت و اطاعت کی دو آیتوں سے اور (فکنتُ سمعہ۔ ۔ وبصرہ۔ ۔ ویدہ ۔ ۔ورجلہ)کی حدیث قدسی کے اعتبار سے غیریت کی نفی کر رہے ہیں۔
  7. دست بھرا گریبان دیوبندیوں کے مشہور و معروف مناظر ماسٹر محمد امین اکاڑوی دیوبندی کے برادر زادے مولوی محمود عالم دیوبندی صاحب ابن تیمیہ کے حوالے سے لکھتے ہیں "جس نے ابن تیمیہ پر شیخ الاسلام کا اطلاق کیا وہ کافر ہے" (تسکین الاتقیاہ ص، 124) دیوبندی مولوی کے مطابق جوابن تیمیہ کو شیخ الاسلام کہے وہ کافر ہے. دیوبندی علماء کے مطابق خود دیوبندی علماء و اکابرین کافر ٹھہرے دوسری طرف بڑے بڑے دیوبندی علماء و اکابرین نے ابن تیمیہ کو شیخ الاسلام کہا دیوبندی مولوی سرفراز خان صفدر کو آج کے علماء دیوبند اپنا امام و پیشوا تسلیم کرتے ہیں، انہی سرفراز خان کی کتاب تسکین الصدور کے صفحہ 112 صفحہ 117 صفحہ 136 صفحہ 157 پر ابن تیمیہ کو شیخ الاسلام لکھا ہے. تو نتیجہ نکلا کہ دیوبندی مولوی محمود کے مطابق دیوبندیوں کے امام سرفراز ابن تیمیہ کو شیخ الاسلام کہہ کر کافر ٹھہرے (نوٹ :- دیوبندیوں نے یہ اعتراض سنی علماء پر کیا تھا اب اسی دیوبندی اصول کے مطابق یہ جواب دیوبندیوں کے گلے کا پھندا بن گیا
  8. Deobandei ulma nay khud tasleem kia tha k imam Ahmad raza hum per fatwa na lagta tow khud kafir ho jata tow pata ni aaj kal deogandi londay keo shore machaty hean.....
×
×
  • Create New...