Leaderboard


Popular Content

Showing most liked content since 09/20/2017 in all areas

  1. 2 likes
    Wa Alikum salam.. Wesy toh Zubair Zai ki taqreeban har book ka sunni hazrat ny rad likha hy Jin mein Faisal bhai bhi hain.. Magar Zubair zai k tazadaat pe deoband hazrat ki ye kafi achi book meri nazar hy. Mazy ki baat k jin Deobandi Ulma ny is book mein Zubair zai ko khoob bura bhala bhi kaha hy aur class bhi li hy, Unhi deobando ki wafaat pe Ghair_muqaldeen ki janib se unk forum pe in Deobandi ulma ko Magfirat aur Duaiya kalmon se nawaza gaya.. http://tauheed-sunnat.com/book/321/Tunaqzaat-Zubair-Ali-Zai
  2. 2 likes
    اس روایت کا مکمل جواب میری فیس بک ٹائم لائن پر موجود ہے یہ ہے اس کا لنک
  3. 2 likes
    تذکرہ سنوسی مشأخ.pdf
  4. 2 likes
    Tamam Books ka mediafire ka link http://www.mediafire.com/folder/arxra0xnfutyw/Books jo na milay p.m ker dean wo bi upload ker du ga
  5. 1 like
    Ismaili zurriat Deobandi/Wahabi mazhab ke Androni khana Jangi per ek umda kitab. Ismail Dehlvi ke Shirk machine se mutasir molvio ke Kufr o shirk ke machine se ek dosri per bambari!!!. Read online Qahar E Khuda Wandi Ber Firqa E Deobandi By Mufti Muhammad Akhtar Raza Khan Misbahi Mujdidi https://archive.org/details/QaharEKhudaWandiBerFirqaEDeobandiByMuftiMuhammadAkhtarRazaKhanMisbahiMujdidi https://www.scribd.com/document/336350132/Qahar-e-Khuda-Wandi-Ber-Firqa-e-Deobandi-by-Mufti-Muhammad-Akhtar-Raza-Khan-Misbahi-Mujdidi
  6. 1 like
    دیوبندی حقیقت میں حضرت شاہ ولی اللہ دہلوی علیہ الرحمہ اور حضرت شاہ عبدالعزیز دہلوی علیہ الرحمہ کے نظریاتی مخالف ہیں۔ عرصہ ہوا ہندوستان میں حضرت شاہ ولی اللہ کے ملوظات بنام القول الجلی فارسی مخطوطہ کاکوری ضلع لکھنؤ سے بازیافت ہوا ،پھر دہلی سے اس مخطوط کو اُسی حالت میں شاءع کردیا گیا۔ ان ملفوظات میں شاہ ولی اللہ کے وہی عقاءد ہیں جو کہ اہل سنت حنفی بریلویوں کے ہیں یہ ملفوظات ان کے شاگرد شاہ محمد عاشق پھلتی نے لکھے اور شاہ ولی اللہ کو دکھاتے رہے۔ اس کتاب کے شاءع ہونے کے بعد اُردو میں اس کا تعارف لاہور سے شاءع ہوا اس کا ابتداءیہ مولانا عبدالحکیم شرف قادری نے لکھا وہ اس کے شروع میں لکھتے ہیں۔ ویسے بہت سے اختلافات میں سے صرف ایک عقیدہ نذر ونیاز کے متعلق یہاں عکس حاضر ہیں۔ دیوبندی ان نظریات کے خلاف لکھتے ہیں تو یہ شاہ ولی اللہ اور شاہ عبدالعزیز کی مخالفت ہی ہے اور کیا ہے؟
  7. 1 like
    AlMotUlAhmar.pdfAlMotUlAhmar.pdf ادخال السنان .مفتي اعظم هند.pdf Wuqat-Us-Sanan.pdf HashtadBiyadoBandBirMa.pdf
  8. 1 like
    Urdu: https://www.scribd.com/document/35947982/Al-Sawaiq-al-Ilahia-fi-al-Ra-d-ala-al-Wahabia-by-Suleman-Ibn-Abdul-Wahab-Hanbali Arabic: http://ia700701.us.archive.org/12/items/swa3iq-ilahia/13138341161.pdf
  9. 1 like
    یہ تحریر سعیدی صاحب کی ہے
  10. 1 like
    22950- من عشق فعف ثم مات مات شهيدا (الخطيب عن عائشة) أخرجه الخطيب (12/479) . 22951- من عشق فكتم وعف فمات فهو شهيد (الخطيب عن ابن عباس) أخرجه الخطيب (6/50) . 22952- من عشق وكتم وعف وصبر غفر الله له وأدخله الجنة (ابن عساكر عن ابن عباس) أخرجه ابن عساكر (43/195) 1. حقی، اسماعیل، تفسير روح البيان، ج ‏8، ص 100؛ تفسير بيان السعادة في مقامات العباده، ج ‏2، ص 355؛ التفسير المعين للواعظين و المتعظين، المتن، ص 238؛ در این تفسیر ذیل آیه 23 سوره یوسف، این روایت را از کنزالعمال چنین نقل می‌کند: النبي (صلی الله علیه و آله): من عشق فعف ثم مات مات شهيدا؛ «كنز العمال، خ 6999»؛ در شرح نهج البلاغه ابن ابی الحدید هم که اشاره فرمودید به این صورت نقل شده: «قد جاء فی الحديث المرفوع من عشق فكتم و عف و صبر فمات مات شهيدا و دخل الجنة» ؛ شرح‏ نهج‏ البلاغة، ج 20، ص 233. 2. مَنْ عَشِقَ شَيْئاً أَعْشَى بَصَرَهُ وَ أَمْرَضَ قَلْبَهُ فَهُوَ يَنْظُرُ بِعَيْنٍ غَيْرِ صَحِيحَةٍ وَ يَسْمَعُ بِأُذُنٍ غَيْرِ سَمِيعَةٍ قَدْ خَرَقَتِ الشَّهَوَاتُ عَقْلَهُ وَ أَمَاتَتِ الدُّنْيَا قَلْبَهُ وَ وَلِهَتْ عَلَيْهَا نَفْسُه‏ ... (نهج‏ البلاغة، خطبه 109). 3. آلوسی، محمود، روح المعاني فی تفسير القرآن العظيم، ج‏ 9، ص 201 .*گستاخ رسول اور منکرین حدیث کے لفظ عشق پر ہرزہ سرائی کے پس پردہ حقائق* اس لفظ پر تنقید کا مقصد امت مسلمہ کے مسلّمہ اکابرین اور آئمہ کرام پر طعن و تشنیع کر کے امت مسلمہ میں انکی محبت اور احترام کو کم کرنا مقصود ہے اس میں کافی حوالے موجود ہیں کہ امت مسلمہ کے جید علماءکرام نے اس لفظ کو تواتر کے ساتھ استعمال کیا اور احادیث میں بھی یہ لفظ وارد ہوا لیکن حدیث کے منکر اور گستاخ رسول احادیث کو پس پشت ڈال کر اپنی قیاس آرائیوں سے کام چلانے کی کوشش کر رہے ہیں جو سراسر زیادتی ہے اور یہ بھی دیکھیں کہ انکے پاس ماں بہن کی چادر کے پیچھے چھپنے کے علاوہ کوئی قیاس تک موجود نہیں یہ امت مسلمہ میں ایموشنلی بلیک میلنگ کے زریعے امت مسلمہ کو گمراہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں سب سے پہلے ہم اس لفظ کو احادیث مبارکہ سے پیش کریں گے پھر اس لفظ عشق کے عربی لغت میں معنی دیکھیں گے پھر ان معنوں کو ہم اس احادیث کے مطابق چیک کریں گے اسکے بعد ہم اسلاف امت کے اقوال پیش کریں گے اسکے بعد امت مسلمہ کے مستندشعراکےاقوال پیش کرکےسب سے آخر میں تبصرہ کرکے گستاخ رسول اورمنکرین حدیث کا مکمل ردکریں گے ان شاء اللہ سب سے پہلی بات کہ اگر یہ لفظ عشق حدیث میں اچھائی کے معنوں میں جگہ لے لیتا ہے تو ایک مسلمان ہونے کے ناطے تاویل باطلہ سے اس میں عیب پوشی نہیں کرنی چاہئے جبکہ بقول منکرین حدیث یا گستاخوں کے یہ لفظ عشق معیوب ہے تو اس لفظ پر گرفت بنتی ہے اور تاریخ گواہ ہے کہ امت مسلمہ کے اکابرین نے ہمیشہ اسلام کی اساس کو برقرار رکھا اور جہاں جہاں کوئی خرابی دیکھی فوراً گرفت کی لہزا پہلی بات تو اس لفظ عشق کا حدیث میں تعریفی معنوں میں آنا ہی اسکے عیبوں کو پاک کر دیتا ہے مگر پھر کوئی اعتراض کرے تو اسے اکابرین یا اسلاف سے پہلے حدیث کو ضعیف اسکے بعد اس لفظ کی اسلاف سے گرفت ثابت کرنا ہوگی اب ہم آپکے سامنے وہ احادیث پیش کرتے ہیں جو مختلف سندوں اور واسطوں سے مختلف مختلف الفاظ کے ساتھ وارد ہوئی ہیں جن سے ماں بہن کی چادر کے پیچھے چھپنے والے بے نقاب ہوسکیں گے ان شاء اللہ پہلی حدیث بروایت خطیب بغدادی حضرت امی عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا سے مروی ہے آپ فرماتی ہیں کہ *من عشق فعف ثم مات مات شہیدا* جسکو عشق ہوا پھرﮨﮯ۔ پاک دامن رہتے ہوئے مر گیا تو وہ شہید ہوا جہاں اس حدیث میں محبت کی انتہاء(عشق) کا زکرکیاگیاوہاں ہی ایک اورحدیث میں آتا ہے *بروایت خطیب حضرت عبداللہ بن عباس سے مروی ہے کہ *من عشق فکتم وعف فمات فھو شہید* جس کو کسی سے عشق ہوا اور اس نے چھپایا اور پاک دامن رہتے ہوئے مر گیا وہ شہید ہے (الجامع الصغیر جلد 2 صفحہ 175 طبع مصر) جب ہم نے یہ حدیث کچھ گستاخوں کے سامنے پیش کی تو انھوں نے اپنے ایک خود ساختہ امام سے اسکو رد کرنے کی کوشش کی کہ یہ احادیث ضعیف ہیں جبکہ امام سخاوی نے مقاصد حسنہ میں اسانید متعددہ سے اسکو نقل کیا بعض میں کلام کیا جنھیں گستاخ کیش کر رہے تھے جبکہ اس آدھی عبارت کے بعد کی عبارت پیش کرنا انھیں اور انکے خودساختہ امام کو ہضم نہ ہوئی جسکی وجہ سے آدھی عبارت کو چھوڑ دیا آئیں ہم آپکے سامنے مکمل عبارت پیش کرتے ہیں امام نے بعض میں کلام ضرور کیا مگر کچھ اسانید کو برقرار رکھا کہ وہ ضعیف نہیں اور اس میں ایک سند کو تو مکمل اور واضح طور پر *وھو سند صحیح* کہا (مقاصد حسنہ صفحہ 420) اسکے علاوہ ایک اور جگہ ایک حدیث کے بارے میں امام سخاوی رحمۃاللہ علیہ فرماتے ہیں کہ اس حدیث کو امام خرائطی رحمۃاللہ علیہ اور امام ویلمی رحمۃاللہ علیہ نے بھی روایت کیا وہ حدیث یہ ہے *من عشق فعف فکتم فصبر فھو شہید* جس کو کسی سے عشق ہو گیا اور وہ پاک دامن رہا اور اسے چھپایا اور صبر کیا تو وہ شہید مرا امام سخاوی رحمۃاللہ علیہ فرماتے ہیں کہ اس حدیث کو امام بیہقی رحمہ اللہ نے بھی متعدد اسناد اور طریقوں سے روایت کیا (مقاصد حسنہ صفحہ 419-420 طبع مصر) اب اہل علم جانتے ہیں کہ اگر حدیث ضعیف بھی ہو تو مختلف اسانید کی وجہ سے اسکا ضعف دور ہو جاتا ہے جبکہ اس میں تو پھر بھی ایک صحیح حدیث موجود ہے جس میں کوئی ضعف نہیں جسکا محور اور مرکز ہی محبتوں کی انتہاء عشق ہے اب ہم عشق کا معنی و مفہوم بیان کریں گے عشق ﺷﺪﯾﺪ ﺟﺬبہ ﻣﺤﺒﺖ، ﮔﮩﺮﯼ ﭼﺎﮨﺖ، ﻣﺤﺒﺖ، ﭘﯿﺎﺭ۔ کو کہتے ہیں اب ہم ایک مستند حوالے کے ساتھ عشق کی کیفیات بیان کرتے ہیں عشق میں ایک عاشق پانچ مختلف حالتوں کا شکار ہوتا ہے یا ہم یہ کہہ سکتے ہیں کہ ایک عاشق کے عشق کی انتہاء پانچ مرحلوں تک ہوتی ہے ﺩﺭﺟﮧ ﺍﻭﻝ ﻓﻘﺪﺍﻥِ ﺩﻝ ﯾﻌﻨﯽ ﺩﻝ ﮐﺎ اپنے معشوق کی طرف لگا دینا، ﺩﺭجہ ﺩﻭﻡ ﺗﺎﺳﻒ ﮐﮧ ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﻋﺎﺷﻖ ﺑﯿﺪﻝ ﺑﻐﯿﺮ ﻣﻌﺸﻮﻕ ﮐﮯ ﮨﺮ ﻭﻗﺖ ﺍﭘﻨﯽ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﺳﮯ ﻣﺘﺎﺳﻒ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ، ﺩﺭجہ ﺳﻮﻡ ﻭﺟﺪ : ﺍﺱ ﮐﯽ ﻭﺟﮧ ﺳﮯ ﻋﺎﺷﻖ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﯽ ﺟﮕﮧ ﺍﻭﺭ ﮐﺴﯽ ﻭﻗﺖ ﺁﺭﺍﻡ ﺍﻭﺭ ﻗﺮﺍﺭ ﻧﺼﯿﺐ ﮨﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﺎ، ﺩﺭﺟﮧ ﭼﮩﺎﺭﻡ ﺑﮯ ﺻﺒﺮﯼ، ﺩﺭﺟﮧ ﭘﻨﺠﻢ ﺻﯿﺎﻧﺖ، ﻋﺎﺷﻖ ﺍﺱ ﺩﺭﺟﮯ ﻣﯿﮟ ﭘﮩﻨﭻ ﮐﺮﺩﯾﻮﺍﻧﮧ ﮨﻮ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ، ﺑﺠﺰ ﻣﻌﺸﻮﻕ ﮐﮯ ﺍﻭﺭ ﮐﺴﯽ ﮐﯽ ﯾﺎﺩ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ، ﻋﺸﻖِ ﺣﻘﯿﻘﯽ۔ ‏( ﻣﺼﺒﺎﺡ ﺍﻟﺘﻌﺮﻑ، 176) ایک عاشق اپنے معشوق ﮐﮯ ﻋﯿﻮﺏ ﺩﯾﮑﮭﻨﮯ ﮐﯽ ﺣﺲ ﺳﮯ ﻣﺤﺮﻭﻡ ﮨﻮﺟﺎتا ہے ۔ ‏( ﺍﻟﻘﺎﻣﻮﺱ ﺍﻟﻤﺤﯿﻂ ، ﺝ : 1 ، ﺹ : 909 ‏) ﻟﺴﺎﻥ ﺍﻟﻌﺮﺏ ﻣﯿﮟ ﺗﻘﺮﯾﺒﺎً ﯾﮩﯽ ﻣﻔﮩﻮﻡ ﻣﻮﺟﻮﺩ ﮨﮯ۔ ‏( ﺝ : 10 ، ﺹ : 251 ‏) ﺍﻭﺭ ﯾﮩﯽ ﻣﻔﮩﻮﻡ ﺍﻣﺎﻡ ﺟﻮﮨﺮﯼ ﮐﯽ ﺍﻟﺼﺤﺎﺡ ﻣﯿﮟ ﮨﮯ۔ ‏( ﺝ : 4 ، ﺹ : 1525 ‏) ﺍﻣﺎﻡ ﺍﺑﻦ ﻓﺎﺭﺱ ﺍﭘﻨﯽ ﮐﺘﺎﺏ ﻣﻘﺎﯾﯿﺲ ﺍللغۃ ﻣﯿﮟ ﻟﮑﮭﺘﮯ ﮨﯿﮟ : ﻋﺸﻖ ﻣﺤﺒﺖ ﮐﯽ ﺣﺪﻭﺩ ﮐﻮ ﭘﮭﻼﻧﮕﻨﮯ ﮐﺎ ﻧﺎﻡ ﮨﮯ۔ ‏( ﺝ : 4 ، ﺹ : 321 ، ﻃﺒﻊ : ﺩﺍﺭ ﺍﻟﻔﻜﺮ ‏) ﺍﻣﺎﻡ ﺍﺑﻦ ﺍﺑﯽ ﺍﻟﻌﺰ ﺷﺮﺡ ﻋﻘﯿﺪﮦ ﻃﺤﺎﻭﯾﮧ ﻣﯿﮟ ﻓﺮﻣﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﻋﺸﻖ ﺍﺱ ﺑﮍﮬﯽ ﮨﻮﺋﯽ ﻣﺤﺒﺖ ﮐﻮ ﮐﮩﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﻋﺎﺷﻖ ﮐﯽ ﮨﻼﮐﺖ ﮐﺎ ﺧﻄﺮﮦ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ۔ علامہ اقبال صاحب فرماتے ہیں کہ بے خطر کود پڑا آتش نمرود میں عشق عقل ہے محو تماشا ہے لب بام ابھی اسکے علاوہ اسی عشق کے بارے میں مولانا رومی فرماتے ہیں *ہر کراہ زعشق جامہ چاک شد اوز حرص وعیب کلبی باک شد* جسکے وجود نفسانی کا جامہ عشق سے چاک ہوگیا وہ ہر عیب اور لالچ سے پاک ہوگیا* ایک لمحے کے لیے سوچیں کہ اگر ہم ان گستاخوں اور منکرین حدیث کے پروپیگنڈے کو مان لیتے ہیں تو سوچیں کہ ہم نے کیا کھویا؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟ 1)ہم نے حدیث کے الفاظ پر تنقید کی 2)ہم نے حدیث کے اعزازی لفظ کو عیب دار مانا 3)ہم نے آئمہ کے اقوال کو رد کیا 4) ہم نے اسلاف پر تنقید کی 5) ہم نے قیاس کو حدیث سے اچھا جانا 6) ہم نے منکرین حدیث کے اس نقطہ نظر کو تقویت دی کہ حدیث کے واسطے قابل اعتبار نہیں 7) ہم نے گستاخوں کو آئمہ پر جرح کرنے کا موقع دیا 8) ہم نے امت کے اجماع کو پس پشت ڈالا 9)ہم نے اس تواتر کا انکار کیا جسکی بنیاد 1400 سال پہلے رکھی گئی خدارا اب بھی وقت ہے جاگو امت مسلمہ جاگو اور اپنی صفوں میں ان لوگوں کو پہچانو جو انجانے میں آپکا ایمان برباد کر رہے ہیں اب اس عشق کے لفظ کی آڑ میں آپکو ان اوپر بیان کردہ 9 گناہوں کا انجانے میں ارتکاب کروا رہے ہیں خدارا پہچانو انکو اگر اس عشق کی پاکیزگی اور امت میں تواتر کو تفصیل کے ساتھ لکھا جائے تو ایک مکمل رسالہ بن جائے ہم نے مختصراً کچھ چیدہ چیدہ پوائنٹس آپکے سامنے پیش کیے تاکہ آپکے سامنے ان گستاخ اور حدیث کے منکروں کو بے نقاب کیا جائے دراصل امت مسلمہ میں منکرین حدیث اور گستاخ ہیں تو آٹے میں نمک کے برابر لیکن امت مسلمہ کو گمراہ کرنے اور شیطان پرست بنانے میں اہم کردار اداکر رہےہیں انکی خواہش ہے کہ امت مسلمہ کے سامنے اکابرین امت اور سلف صالحین کو داغدار ثابت کیا جائے جسکی آڑ لے کر تمام آئمہ محدثین پر جرح کی جائے اور امت مسلمہ کے دلوں میں انکے لیے موجود عزت کو ختم کیا جائے پوسٹ کی طوالت کا ڈر نہ ہوتا تو ہم آپکو بتاتے کہ ان گستاخوں اور منکرین حدیث کے اس لفظ پر اعتراض کے پیچھے کتنے مزموم مقاصد چھپے ہیں انکا مقصد علماء اسلام کے مستند اور معتبر اسلاف کے کردار کو داغدار ثابت کر کے انکے اقوال کو پس پشت ڈالنا ہے 100-150 پہلے تک امت مسلمہ میں میں قرآن اسکے بعد حدیث اسکے بعد آئمہ کے اقوال کو درجہ دیا جاتا تھا ان لوگوں کے اس طرح کے پروپیگنڈوں کے بعد آئمہ کے کردار کو داغدار بنا کر اور خطاؤں کے پتلے ثابت کرکے انکو پس پشت ڈال دیا گیا اور نعرہ لگایا کہ ہمارے نزدیک صرف قرآن و حدیث ہے ہم صرف اور صرف قرآن و حدیث کے پیروکار ہیں اسکے بعد منکرین حدیث کو موقع ملا اور انھوں نے حدیث کے واسطوں پر جرح کر کے احادیث کو بھی پس پشت ڈال دیا اب انکا کہنا ہے کہ وہ صرف قرآن کے ماننے والے ہیں آئمہ کے کردار کو داغدار بنانے کے لیے انسان خطا کا پتلا کا جواز پیش کیا وہیں اس طرح کے جاہلانہ اعتراض کرکے اپنے اس موقف کو تقویت دینے کی کوشش کی لیکن ازل سے ابد تک رحمٰن کےبندوں نے ہمیشہ شیطان کے بندوں کو بے نقاب کیا جو ہدایت کے متمنی تھے وہ ہدایت پا گئے اور شیطان کی چالوں سے محفوظ رہے اور جو نفس پرستی کے متمنی اور نفس پرستی کی طرف مائل تھے وہ شیطان کے جال میں پھنس کر رہ گئے اللہ پاک کی ذات سے دعا ہے کہ ہمیں اور تمام امت مسلمہ کو ان شیطانی ہتھکنڈوں سے محفوظ رکھے اور اپنی اپنے محبوب کی اپنے اولیاء کی اپنے صلحاء کی ناموس پر ہمیں پہرہ دینے کی ہمت اور توفیق عطا فرمائے
  11. 1 like
    Deobandio Ke bahmi Jang o Jadal- new part
  12. 1 like
    حضرت معاویہ رضی اﷲ عنہ نے فرمایا میرا حضرت علی رضی اﷲ عنہ سے اختلاف صرف حضرت عثمان رضی اﷲ عنہ کے قصاص کے مسئلہ میں ہے اور اگر وہ خون عثمان رضی اﷲ عنہ کا قصاص لے لیں تو اہل شام میں ان کے ہاتھ پر بیعت کرنے والا سب سے پہلے میں ہوں گا (البدایہ و النہایہ ج 7‘ص 259)
  13. 1 like
    ایک اور روایت پیش کی جاتی ہے علامہ ابن عدی کی کتاب سے حدثنا علي بن سعيد حدثنا الحسين ابن عيسى الرازي حدثنا سلمة بن الفضل ثنا حدثنا محمد بن إسحاق عن محمد بن إبراهيم التيمي عن أبي أمامة بن سهل بن حنيف عن أبيه قال: قال رسول الله صلى الله عليه وآله وسلم : ((إذا رأيتم فلاناً على المنبر فاقتلوه). (الکامل لابن عدی 6/112) اس روایت میں محمد بن اسحاق بن یسار تیسرے طبقہ کا مدلس راوی ہے اور اس روایت میں اس نے سماع کی تصریح نہیں کی عن سے روایت کر رہا ہے لہذا یہ روایت بھی ضعیف ہے۔اور اس روایت میں فلانا کا لفظ ہے نام کی تصریح موجود نہیں۔ اس کے علاوہ محمدبن اسحاق کا شاگرد سلمہ بن الفضل الأبرش بھی کثیر الغلط راوی ہے۔ ایک اور روایت بھی پیش کی جاتی ہے حديث جابر بن عبدالله روى سفيان بن محمد الفزاري عن منصور بن سلمة (ولا بأس بمنصور) عن سليمان بن بلال (ثقة) عن جعفر بن محمد (وهو ثقة) عن أبيه (ثقة) عن جابر بن عبدالله رضي الله عنه مرفوعاً (إذا رأيتم فلاناً اس روایت میں حضرت معاویہ رضی اللہ عنہ کا نام نہیں فلانا کا لفظ ہے ۔اس کے علاوہ سفیان بن محمد الفزاری سخت ضعیف ہے حدثني إبراهيم بن العلاف البصري قال، سمعت سلاماً أبا المنذر يقول: قال عاصم بن بهدلة حدثني زر بن حبيش عن عبد الله بن مسعود قال: قال رسول الله صلى الله عليه وسلم : "إذا رأيتم معاوية بن أبي سفيان يخطب على المنبر فاضربوا عنقه أنساب الأشراف (5/130) برقم (378) اس روایت میں ابراہیم بن العلاف بصری مجہول ہے اس کی توثیق امام ابن حبان کے علاوہ کسی امام نے نہیں کی۔اور امام بن حبان کی توثیق کرنے میں متساہل ہیں۔ حدثنا يوسف بن موسى وأبو موسى إسحاق الفروي ، قالا : حدثنا جرير بن عبد الحميد ، حدثنا إسماعيل والأعمش ، عن الحسن ، قال : قال رسول الله صلى الله عليه وسلم : "إذا رأيتم معاوية على منبري فاقتلوه"، فتركوا أمره فلم يفلحوا ولم ينجحوا. أنساب الأشراف (5/128) اس راویت میں اسماعیل بن ابی خالد اور امام اعمش کا سماع امام حسن بصری سے محل نظر ہے۔اس کے علاوہ یہ روایت مرسل ہے کیونکہ امام حسن بصری کا سما ع آپ علیہ السلام سے نہیں ہے۔ حدثنا الساجي قال : ثنا بندار قال : ثنا سليمان قال : ثنا حماد بن زيد قال : قيل لأيوب إن عمراً روى عن الحسن عن النبي صلى الله عليه وسلم قال [ إذا رأيتم معاوية على المنبر فاقتلوه ] قال أيوب كذب الكامل (5/103) اس راویت میں عمرو بن عبید بن باب کذاب ہے خود اسی راویت میں امام ایوب کیسان السختیانی نے جرح کی۔
  14. 1 like
    تفسیر ابن کثیر میں ہے کہ یہ آیت بتوں کے بارے میں ہے۔
  15. 1 like
    اصل نسخہ تو مکتبہ راغب پاشا استنبول ترکی میں ہے لیکن جس صفحہ کا اسکین لگایا گیا ہے وہ نسخہ بیروت کا ھے۔
  16. 1 like
    یہ تو کوئی اعتراض نہیں ہے کیونکہ اگر نبوت کا سلسلہ ختم نہ ہوتا تو اللہ عزوجل حضرت عمر رضی اللہ عنہ کو نبی بناتا اور ساتھ ان کو نبوت والے تمام فضائل و احوال بھی مہیا کرتا لیکن جب نبوت کا سلسلہ ختم ہو گیا ہے تو پھر ایسا اعتراض کرنا بھی فضول ہے ۔ یہی اعتراض شیعہ پر تو ہو سکتا ہے کہ ان کے بارہ امام ان کے نزدیک اگرمعصوم ہیں پھر وہ نبی کیوں نہیں ہیں؟؟؟ شیعہ مر تو جائے گا لیکن اس کا جواب نہیں دے پائے گا۔(ان شاء اللہ)
  17. 1 like
    حضرت ملا على قارى رحمة اللّٰه عليه نے علم غیب نبی صلى اللّٰه عليه وسلم يا حاضر ناضر كے ثبوت میں علاوہ(شرح الشفاء)کےکچھ لکھا تو انکے کتب کے (scans) عطا فرمائیں
  18. 1 like
    یہ وہابی بک کا فرمٹ پیج اس کتاب میں وہانیوں نے نماز اور حضور صلی اللہ علیک وآلہ وسلم کے لئے عشق کا لفظ استعمال کیا 👇👇👇👇 اس سکین پیج پر عبدالرشید عراقی وہابی نے الله اور اس کے رسول صلی الله علیہ وآلہ وسلم کے لئے عاشق کا لفظ استعمال کیا سکین ملاحظہ ہو۔۔ اس سکین پیج پر پروفیسر میاں محمد یوسف سجاد وہابی لکھتا ہے کہ سب سے پہلے مقرر ڈاکٹر سعادت سعید تھے۔ انہوں نے مولانا ندوی کے بارے میں فرمایا کہ آپ دیانتداری کا جذبہ کامل رکھنے والے اور عشق رسول صلی الله علیہ وآلہ وسلم سے سرشار ہیں۔۔ سکین ملاحظہ ہو۔ عاجز بندہ ظہور الہی وہابی نماز کےمتعلق لکھتا ہے کہ کہ نماز سے ہمیں عشق کی حد تک تعلق ہونا چاہیئے۔۔۔ سکین ملاحظہ ہو۔۔ عبدالحنان جانباز وہابی صاحب لکھتے ہیں کہ حقیقت بھی یہی ہے کہ نماز کو ہمیں عشق کی حد تک تعلق ہونا چاہیئے۔۔۔ سکین ملاحظہ ہو۔۔ ثابت ہوا عشق کا لفظ نبی پاک صلی الله علیہ وآلہ وسلم کے لئے استعمال کرنا برا نہیں بلکہ یہ ایک آخری حد ہے محبت کے بعد یہ آخری حد ہے اس لئے ان غیر مقلدین وہابیوں کو کہیں کہ آپنے گھر کی خبر بھی لے لیا کرو۔۔ ان وہابی حضرات کی علمی قابلیت ہی اتنی ہے لیکن ان کے بڑے بڑے یہ ہی الفاظ استعمال کرتے رہے ساری زندگی۔۔
  19. 1 like
    السلام علیکم دوستو اس کتاب میں اس روایت جس کا مفہوم کچھ یوں ہے کہ ایک شخص رسولُ اللہِ صلی اللہ علیہ وسلم کے روضہ انور پر آیا اور بارش کی درخواست کی۔۔۔الخ اس روایت کا ایسا دفاع کیا گیا ہے کے اگر کوئی وہابی/دیوبندی اس کو پڑھے تو سنی بن جاۓ۔ تمام حضرات سے گزارش ہے کے اس کو ضرور پڑھیں۔اور ڈاون لوڈ کر کے اپنے پاس رکھیں۔ The Blazing Star.pdf
  20. 1 like
    میں عربی نہیں جانتا، حوالے دے دءیے گءے ہیں ہر جگہ عربی جاننے والے آپ کو مل جاءیں گے، کم از کم عربی ٹیچر تو ہر جگہ ہوتے ہیں۔
  21. 1 like
    Bhai koi video ya newspaper etc post kijiye isk saboot mein..
  22. 1 like
    Salam alayqum, Mauala Khalil Rana Sahib, Hazrat aap nay post 3 mein achay tareekay say masla imqan kizb ki rudad bayan ki aur parh kar dil mein aya kay aap ki is tehreer ko English mein tarjumah karoon aur is mozoo kay wastay bator introduction pesh kee jahay. Aur agar aap ijazat denh toh mein is ka tarjuma agli fursat mein shoroon kar doon ga.
  23. 1 like
  24. 1 like
    جی لے سکتی ہیں لیکن بنا کوئی شرعی مجبوری کے طلاق لینا جائز نہیں۔ اگر آپ خوش نہیں ہیں اپنے والدین کو بتا دیں کہ آپ فلاں شرعی مجبوری کے شادی نہیں کر سکتیں وہ آپ کا نکاح ختم کروا دیں گے
  25. 1 like
    Ji Shukrya Ali bhai. Hayraan hun, Khuda nay jhotay per lanat bheji hay to goya kis per laanat hogi? Ye kesay khuda k parastaar hayn jinhayn parastish k adaab bhi maloom nahin? Magar bazid hyn aur Allah ko chhoor ker mullah k haq may iman farokht ker rhy hyn.
  26. 1 like
    Itni zillat k baad Ab Wahabi ka Rafziyon ki tarha Matam karna Banta hi hy, Wahabi Hosh kar ankhain khoal k uper parh, maine is bary mein kuch likha howa hy.. Aur thread k bary mein bhi bohat Kuch.. Apna Forum pe Bula k Bhi bas yahi karna tha tum ahl-e-najd ne, Hamesha se zaleel hoty aye ho tum loag Wahabiyon aur hamesha hoty raho gy.. uper sab baton ka bari bari jawab do, Forum pe sab loag daikh rahy hain..Apny wahabi mazhab ki izzat bachao.. wesy Bustan-ul-Muhadseen ka Jawab Imam Hajar Asqalani rehmatullah ne Itna arsa pehly hi dy diya tha kiya.. wahabi bolny se pehly Alfaaz aur puri baat toh sahi se likh.. Itni zillat k bad kiya dimagh ki batti gul ho gyi hy,.. 1- Imam Hajar Asqalani rehmatullah wali baat ki wazahat Post 12, 13 aur 2- Hadees ko hassan kehny ka jawab Post 20 mein parho.. Agar apni munafqat aur jahalat nazar ajaye toh koi ilmi jawab dy dyna.. Warna Matam ja k Apny logon mein hi karna..
  27. 1 like
    http://www.islamimehfil.com/topic/22597-جناب-محمدﷺ-کی-دعوت-توحید-اور-عرب-کے-لوگوں-کا-شرک/?p=97873
  28. 1 like
    http://www.islamimehfil.com/topic/22597-جناب-محمدﷺ-کی-دعوت-توحید-اور-عرب-کے-لوگوں-کا-شرک/?p=97703
  29. 1 like
    http://www.islamimehfil.com/index.php?app=core&module=attach&section=attach&attach_rel_module=post&attach_id=69742
  30. 1 like
  31. 1 like
    چند لنکس یہاں پیسٹ کر رہا ہوں۔ باقی جوابات بھی فورم پر موجود ہیں۔ بحث مزارات اولیاء اللہ پر گنبد بنانا بنا الالقبر- قبروں پر عمارت Akabir Ki Pakki Kabron Or Gumbad Ke Dalail Ke Scan Darkar Hain بحث میلاد شریف کے بیان میں Milad Un Nabi صلی الله عليه وسلم Ulama Ki Kutub Se Saboot بحث فاتحہ، تیجہ، دسواں، چالیسواں کا بیان ایصال ثواب ایصال ثواب سنت ہے بحث قیام میلاد کے بیان میں بحث بدعت کے معنی اور اس کے اقسام و احکام پیکر نور صلی اللہ علیہ وسلم بحث علم غیب وصال کے بعد نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم سے استمداد و استعانت Salato Salam Ke Dalail Ke Pages جاء الحق کا مطالعہ کریں اور مناظرہ سیکشن سے مزید جوابات بھی مل جائیں گے۔ ان شاء اللہ
  32. 1 like
    Assalamu 'Alaykum wa Rahmatullahi wa Barakatuhu ASALATU WASALAMU ALAYKA YA RASULLALLAH Salla Allahu ta'ala 'alayhi wa Sallam 1st - Islamic New Year, 1st - Wissal Shaykh Abul Hassan Ali Bukhari, Baghdad Shareef 1st - Birth ; Hadrat Umar Farooq Radi Allahu anhu, 1st - Birth ; Hadrat Shahabuddin Suharwardi Radi Allahu anhu 2nd - Urs ; Pir Jamal Shah Bin Murtaza Radi Allahu anhu 2nd - Wissal Hadrat Khwaja Ma'roof Kirki, Baghdad Shareef 4th - Wissal Hadrat Khwaja Hassan Basri Radi Allahu anhu 5th - Urs ; Hadrat Baba Fariduddin Ganj Shakar Radi Allahu anhu 6th - Chatti Shareef, Khawaja Gharib-e-Nawaz Radi Allahu anhu, Ajmer Shareef 8th - Wissal ; Hadrat Imam Zayn al-Abideen Radi Allahu anhu Medina Munawwara 8th - Urs ; Hadrat Mawlana Hashmat Ali Khan, Pilibit Shareef 9th - Shab-e-Ashura Amal 10th - Yaum-e-Ashura Amal 10th - Allah Ta'ala Created the Heavens and Earth. - On this Very Day would be the Day of Qiyyamah (Judgement). - Allah Subhanahu wa Ta'ala gave his infinite blessings and bounties to many of his Prophets and delivered them from the clutches of the enemies - Ship of Hadrat Noah alayhis 'salam came to rest on Mount Al-Judi. - Hadrat Ayyub (Alayhi Asallam) was delivered from distress. - Hadrat Yunus (Alayhi Asallam) was cast onto the shore after being swallowed by a fish for 40 days . - Hadrat Moosa (Alayhi Asallam) got victory over the Pharoah - The Birth of Hadrat Ibrahim (Alayhi Asallam) 10th - Martyrdom of Imam Hussain Radi Allahu anhuat Karbala 10th - Hadrat Sayyadi Shah Barkatullah Ishki, Mahrehah Shareef 11th - Urs ; Pir Rahmat Shah Saheb, Gojarkhan, Rawalpindi. 11th - Ghiyarwee Sharif ; Hadrat Shaykh Abd'al-Qadir al-Jilani Radi Allahu anhu 13th - Urs ; Mufti-e-Azam Had Mustafa Raza Khan Bareilly Sh. 19th - Wissal Hadrat Sayyad Ahmad al-Jilani, Baghdad Shareef 20th - Wissal ; Hadrat Bilal Radi Allahu anhu 20th - Wissal ; Hadrat Shah Waliyullah Dhelvi Radi Allahu anhu 21st - Wissal ; Mawlana Muhammad Nazir al-Akram Sahib Naeemi 21st - Urs ; Hadrat Zinda Pir,Ghamkhol Shareef, 25th - Birth ; Hadrat Imam Hassan Radi Allahu anhu 26th - Urs ; Hadrat Tajul Awliya, Baba Tajuddin, Nagpur Shareef 28th - Urs; Hadrat Makhdoom Ashraf Jahangir Radi Allahu anhu,Kicchocha Shareef[/b]