Jump to content
IslamiMehfil

Deobandio ke jhoote khwab


Recommended Posts

Assalamu alaikum

deobandi aksar apne akabireen ke jhoote khwab ka difa karte hai aur daleel me imame azam ke ek khwab ka waqia bayan karte hai aur kehte hai ki ispar kya fatwa ayenga scan me yaha attach karta hu ahle ilm hazrat mudallal jawab inayat farmaye

IMG-20210816-WA0000.jpg

Edited by Akhtar Razvi
Missed something
Link to post
Share on other sites

 

یہ بات بطور خاص ذہن نشین رہنی چاہیے کہ خواب اور اس کی تعبیر میں فرق ہوتا ہے۔ اس لیے خواب میں جو کچھ دیکھا جاتا ہے وہ تعبیر طلب ہوتا ہے۔ اس لیے خواب میں نظر آنے والے منظر یا سنے جانے والے الفاظ کی ہمیشہ تاویل کی جاتی ہے جس کو اصطلاح میں تعبیر کہا جاتا ہے، اس لیے خواب میں جو کلمات ارشاد ہوں یا نظارہ کیا جائے اہل دیانت و امانت اس کی تعبیر کرتے ہیں، ظاہری کلمات اور نظارے کی بناء پر کبھی کسی نے گستاخی و بے ادبی کے فتوے نہیں لگائے۔

حضرت امام اعظم ابو حنیفہ رضی اللہ عنہ جب بھی کوئی خواب دیکھتے تو اس کی تعبیر اپنے استاد گرامی امام ابن سیرین رضی اللہ عنہ جو اجل تابعین میں سے ہیں، سے پوچھتے۔ امام عبدالغنی نابلسی رضی اللہ عنہ نے اس موضوع پر ’’تعطیر الانام فی تعبیر المنام‘‘ ایک مستقل کتاب لکھی ہے اور دیگر بہت سے آئمہ و علماء ہیں جنہوں نے اس فن میں باقاعدہ کتب تصنیف کیں۔

خواب اور تعبیر میں فرق و اختلاف کو سب سے پہلے حدیث پاک سے دیکھتے ہیں۔ مشکوۃ شریف میں ہے : حضرت ام فضل رضی اﷲ عنہا جو حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی چچی اور حضرت عباس رضی اللہ عنہ کی اہلیہ محترمہ ہیں، حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی بارگاہ میں حاضر ہوئیں، عرض کیا یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ! میں نے ایک خواب دیکھا ہے، بڑی پریشان ہوں۔ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا کیا خواب دیکھا ہے؟ عرض کیا کہ میں نے خواب میں دیکھا کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے جسم مبارک کا ایک حصہ جدا ہو کر میری گود میں آ گیا ہے، میں پریشان ہوں کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے جسم مبارک کا ایک حصہ جدا ہو گیا ہے تو یہ خواب سن کر حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے مبارک باد دی اور فرمایا کہ اس کی تعبیر یہ ہے کہ میری بیٹی فاطمہ کے ہاں ایک بیٹا پیدا ہو گا جو تیری گود میں کھیلے گا، چنانچہ اس کے بعد حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کی ولادت ہوئی۔

اس مذکورہ حدیث میں خواب میں جسم مبارک کے حصہ کا ظاہراً الگ ہونا دیکھا جو کہ پریشان کُن ہے مگر سید عالم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اس کی تعبیر یہ فرمائی کہ میرا بیٹا پیدا ہو گا، فرمان نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہے : الحسین منی وانا من الحسین (حسین مجھ سے ہے اور میں حسین سے ہوں)۔ چنانچہ جب حضرت امام عالی مقام رضی اللہ عنہ کی پیدائش ہوئی تو انہوں نے حضرت ام فضل رضی اللہ عنہا کی گود میں پرورش پائی۔ اس حدیث پاک سے واضح ہوتا ہے کہ خواب میں صادر ہونے والے ظاہری الفاظ پر فتوی لگانا ظلم و زیادتی اور سراسر لا علمی اور جہالت ہے۔

 

Edited by محمد حسن عطاری
Link to post
Share on other sites

 

حکیم دیوبند تھانوی کے مرید کا حالت خواب اور پھر بیداری لا اِلٰہ اشرف علی رسول اللہ کہنا اور درود میں اشرف علی کہنا ۔

(رسالہ الامداد صفحہ نمبر 34 ، 35)

رضوی خنجر کا وار

 

مسئلہ۱۰۸:ازمیرٹھ دفتر رسالہ خیال دفتر رسالہ خیال بازار بزازہ مرسلہ حافظ سید ناظر حسین چشتی صابری عابدی و سید عزیز احمد چشتی صابری عابدی وشرف الدین احمد صوفی وارثی قادری رزاقی ۴ربیع الاول ۱۳۳۷ھ

 

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں کہ اشرف علی صاحب تھانوی کے ایك معتقد نے اپنے خواب و بیداری کاحال جو ذیل میں درج ہے لکھ کر تھانوی کے پاس بھیجا جس کا جواب انہوں نے رسالہ الامداد ماہ صفر ۱۳۳۶ھ میں حسب ذیل الفاظ میں دیا،دریافت طلب امریہ ہے کہ یہ جواب ان کا بموجب شرع شریف کہاں تك درست اور صحیح ہے؟ نیز حضرت امام اعظم ابوحنیفہ رضی اﷲ تعالٰی عنہ کے مسلك کے مطابق تھانوی صاحب کی نسبت حکم شرع شریف کا کیا صادر ہوا ہے؟

 

خلاصہ خواب:بجائے کلمہ طیبہ کے دوسرے جز کے یوں پڑھتا ہوں کہ حضور اقدس صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم کے نام نامی کی جگہ تھانوی کا نام لیتا ہوں ہر چند قصد کرتا ہوں لیکن یہی زبان سے نکلتا ہے بعد بیداری اس غلطی کی تلافی میں درود شریف پڑھنا چاہا تو اس میں بھی بے اختیار تھانوی کا نام زبان پر آجاتا ہے۔

[رسالہ الامداد مطبوعہ تھانہ بھون ص۳۵]

 

جوابِ خواب: اس واقعہ میں تسلی ہے کہ جس کی طرف رجوع کرتے ہو وہ متبع سنت ہے

[رسالہ الامداد مطبوعہ تھانہ بھون ص۳۵]۔

 

الجواب:

سیدی امام بوصیری قدس سرہ صاحب بردہ شریف امام القری میں فرماتے ہیں:

ما علیّ مثلہ بعد الخطاء

القصیدۃ الہمزیۃ فی المدح النبویۃ مع حاشیۃ الفتوحات الاحمدیۃ المکتبۃ التجاریۃ الکبرٰی مصر ص۳۹

خطا کے بعد اس کی مثل مجھ پر نہیں

دیوبندیوں کے کفر کا پانی ان کے سر سے گزر گیا ہے جس کا حال کتاب مستطاب"حسام الحرمین شریف"سے ظاہرہے یہ لوگ اﷲورسول جل وعلا وصلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم کو شدید گالیاں دے چکے اور ان پر اب تك قائم ہیں،ان علمائے حرمین شریفین نے بالاتفاق نام بنام ان سب کی تکفیر کی اور صاف فرمایا:من شك فی کفرہ وعذابہ فقد کفر

مجمع الانہر شرح ملتقی الابحر باب احکام الجزیۃ داراحیاء التراث العربی بیروت ۱/ ۶۷۷،

حسام الحرمین مکتبہ نبویہ لاہور ۳۱۔

جس نے ان کے کفر وعذاب میں شك کیا وہ بھی کافر ہے

 

جوان کے اقوال پر مطلع ہو کر ان کے کافر ہونے میں شك بھی کرے وہ خود کافر،پھر ایسوں کی کسی بات کی شکایت کیا،ان کے بڑے قاسم نانوتوی نے تحذیر الناس میں صاف لکھ دیا کہ"اگر بالفرض بعد زمانہ نبوی صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم بھی کوئی نبی پیدا ہو تو پھر بھی خاتمیت محمدی میں کچھ فرق نہ آئے گا"

تحذیر الناس کتب خانہ امدادیہ دیوبند ۲۴ ۔

 

یہ حضور اقدس صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم کی خاتمیت سے صاف انکار ہے اور آیہ کریمہ" وَلٰکِنۡ رَّسُوۡلَ اللہِ وَ خَاتَمَ النَّبِیّنَ ؕ "[ القرآن الکریم ۳۳/ ۴۰] (اور لیکن آپ صلی اﷲ تعالٰی علیہ وسلم اﷲکے رسول اور آخری نبی ہیں۔ت)کی صریح تکذیب ہے پھر یہ لوگ اگر صاف صاف ادعائے نبوت ورسالت کریں تو ان سے کیا بعید ہے،مسلمان ہوتا تو ایسی بات سن کر لرزجاتااور اس کفر بکنے والے سے کہتا کہ خبیث منہ بندکر کفر نہ بک،نہ کہ اسے اور تسلی دی اور اس کی رجسٹری کردی،

 

" وَ سَیَعْلَمُ الَّذِیۡنَ ظَلَمُوۡۤا اَیَّ مُنۡقَلَبٍ یَّنۡقَلِبُوۡنَ ﴿۲۲۷﴾٪ "[القرآن الکریم ۲۶/ ۲۲۷]۔واﷲ تعالٰی اعلم۔اب جانا چاہتے ہیں کہ ظالم کس کروٹ پلٹا کھائیں گے۔واﷲ تعالٰی اعلم۔(ت)

امام احمد رضا رحمۃ اللہ علیہ کا فتویٰ یہاں مکمل ہوا ۔

 

اشرف علی تھانوی کے مرید نے عالم بیداری میں باربار کلمہ ’’لاالہ الا اﷲ اشرف علی رسول اﷲ‘‘ پڑھا تو اس پر پیر مرید دونوں کی تکفیر کی گئی ۔

  • Like 1
Link to post
Share on other sites

 

Us Deobandi say poocho kay agar us ki ammi ko khawab ahay kay woh muhallay kay larkoon say aik aik kar keh nikkah karti heh aur har aik say jismani faida paati heh toh kia usseh kitaab mein publish karay ga. Beysharmi ki batoon ko publish nahin keeya jata chupaya jata heh. Haya wala banda aisa khawab dekhay kabi bi publish nah karay ga. Beyhaya kuch bi kar sakta eh.

Aisay khawab ka ana bura nahin magr chapna bura eh.

Edited by MuhammedAli
  • Like 1
Link to post
Share on other sites

Kissi ko aisa waisa khawab ahay toh us ko publish nahin keeya jata. Aik waja toh heh kay aisay khawabon say bey-sharmi bey-hayahi pehalti heh. Dosra banda joh publish karta heh bey-ghayrat wah-hayaat sabat hota heh.

Jistera pehlay likha, abh agar Deobandi ko khawab ahay kay, Dar ul-Uloom Deoband kay talaba Ashraf Ali Thanvi aur us ki biwi ko nanga kar kay, aik kamray mein sab aik aik do do kar kay, sab ja kar donoon nay faiz hasil kartay hen, toh aisay khawab ko likh kar aur us ki Tabeer Ibn Sirin say nikaal kar, poster bana kar muhallay mein banta nahin jahay ga, keun kay yeh bey-hayahi ka pehlao heh ...

------------------

Yeh joh uppar Deoband ka kutta aya heh is ki taraf dehan nah denh is ki maanh ko bi bot sexy khawab atay rahay hen, is nay poori kitab likhi huwi heh, jald publish karay ga, photo drawing kay saath, takay readers pooray scene ko achi tera samjen, is nay mujjay private mein yeh bi bataya thah kay yeh apni behnoon kay sexy khawaboon ka majmua bi jama kar raha heh ... magr baqawl is kay ... is ki behnoon nay sexy khawabon ki tadad hi itni heh puranay likh nahin pata new ka dehr jama ho jata heh. Yeh ba-qaida aik film bi banahay ga. jis mein un khawabon ko video form mein dekhaya jahay ga.

  • Like 1
  • Haha 1
Link to post
Share on other sites

Nadvi deobandi ne ye post banaya h iapar koi bhai jawabi post banakar send karde taki humare ilm me izafa ho

*رضا خانی اعتراض حضرت مفتی رشید گنگوہی وحضرت نانوتوی علیھم الرحمہ نےخانقاہ گنگوہ میں بدفعلی کی* معاذاللہ 

 

*اس کا منہ توڑ جواب🌛🌜*👇

 

ناظرین !

یہ مثل مشہور ہے کہ جو جیسا ہوتا ہے دوسروں کو بھی ویسا ہی سمجتا ہے چونکہ ان برائلر رضا خانی کے یہاں اور انکے مدرسو میں یہی سب کچھ ہوتا ہے جسکا اقرار خود رضاخانی حکیم الامت کو ہے چنانچہ اپنی کتاب میں لکھتے ہیں

 

*’’ﺳﺐ ﺳﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﺩﯾﻨﯽ ﻣﺪﺍﺭﺱ ﺣﺮﺍﻡ ﮨﻮﻧﮯ ﭼﺎﮨﺌﯿﮟ ﮐﯿﻮﻧﮑﮧﻭﮨﺎﮞ ﻣﺮﺩ ﺑﮯ ﺩﺍﮌﮬﯽ ﻭﺍلےﺑﭽﮯﺟﻮﺍﻧﻮﮞ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﭘﮍﮬﺘﮯﮨﯿﮟ ﺍﻧﮑﺎ ﺁﭘﺲ ﻣﯿﮟ ﺍﺧﺘﻼﻁ ﺑﮭﯽ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﺒﮭﯽ ﮐﺒﮭﯽ ﺍﺱﮐﮯ ﺑﺮﮮ ﻧﺘﯿﺠﮯﺑﮭﯽ ﺑﺮﺁﻣﺪ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ(لواطت کرتے ہیں)* ‘‘ ۔ 😏

📗ﺟﺎﺀﺍﻟﺤﻖ ،ﺹ۲۱۱

 

اب یہ اپنے گھر کی کارستانی اور گندگی کو ہمارے صف اول کے اکابرین اولیاء کا ملین پر کرنا یہ رضا خانیوں کی اسی گندگی میں پلنے کا جیتا جاگتا نمونہ ہے 

قارئین! 

 جواب دینے سے پہلے ہم وہ پورا واقعہ نقل کردیتے ہیں تاکہ آپ پر رضاخانی گندی ذہنیت وتربیت کا نمونہ با لکل عیاں ہو جائے 👇

 

*ایک دفعہ گنگوہ کی خانقاہ میں مجمع تھا حضرت گنگوہی ، حضرت نانوتوی کے مرید و شاگرد سب جمع تھے اور یہ دونوں حضرات بھی وہیں مجمع میں تشریف فرما تھے کہ حضرت مولانا رشید احمد گنگوہی نے حضرت مولانا قاسم نانوتوی سے محبت آمیز لہجے میں فرمایا ۔ یہاں ذرا سا لیٹ جاؤ* ۔

 *ﺣﻀﺮﺕ ﻧﺎﻧﻮﺗﻮﯼﺷﺮﻣﺎﺳﮯ ﮔﺌﮯ ﻣﮕﺮ ﭘﮭﺮ ﺣﻀﺮﺕ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎ ﯾﺎ ﺗﻮ ﻣﻮﻻﻧﺎ ﺑﮩﺖﺍﺩﺏ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﭼﺖ ﻟﯿﭧ ﮔﺌﮯ ﺣﻀﺮﺕ ﺑﮭﯽ ﺍﺳﯽ ﭼﺎﺭﭘﺎﺋﯽﭘﺮ ﻟﯿﭧ ﮔﺌﮯ ﺍﻭﺭ ﻣﻮﻻﻧﺎ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﮐﺮﻭﭦ ﻟﯿﮑﺮ ﺍﭘﻨﺎ ﮨﺎﺗﮫ ﺍﻥﮐﮯ ﺳﯿﻨﮯ ﭘﺮ ﺭﮐﮫ ﺩﯾﺎ ﺟﯿﺴﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﻋﺎﺷﻖ ﺻﺎﺩﻕ ﺍﭘﻨﮯ ﻗﻠﺐﮐﻮ ﺗﺴﮑﯿﻦ ﺩﯾﺎﮐﺮﺗﺎ ﮨﮯ ﻣﻮﻻﻧﺎ ﮨﺮ ﭼﻨﺪ ﻓﺮﻣﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﻣﯿﺎﮞﮐﯿﺎ ﮐﺮﺭﮨﮯ ﮨﻮ ﻟﻮﮒ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﯿﮟ ﮔﮯ ﺣﻀﺮ ﺕ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﻟﻮﮒﮐﮩﯿﮟ ﮔﮯ ﮐﮩﻨﮯ ﺩﻭ*۔

📗 ﺍﺭﻭﺍﺡ ﺛﻼﺛﮧ ،ﺹ 289

 

قارئین ! یہ پورا واقعہ پڑھیں کہیں اس واقعہ میں بدفعلی کا ذکر نہیں اور نہ صبح قیامت تک کوئی زندہ مردہ رضاخانی اس واقعہ میں بدفعلی ثابت کرسکتا ہے ۔👀

یہاں تو سینہ پر ہاتھ صرف ہاتھ رکھنے کا ذکر ہے 🤔

پیر اپنے مرید سے بڑا چھوٹے سے محبت و شفقت کا اظہار اس طرح کرتے ہیں 

یہ دیکھیں میرے پاس ابوداؤد شریف ہے 

کتاب المناسک باب صفۃ حجۃ النبی صلی اللہ علیہ وسلم ہے 

 

حَدَّثَنَا جَعْفَرُ بْنُ مُحَمَّدٍ عَنْ أَبِيهِ قَالَ دَخَلْنَا عَلَى جَابِرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ فَلَمَّا انْتَهَيْنَا إِلَيْهِ سَأَلَ عَنِ الْقَوْمِ حَتَّى انْتَهَى إِلَيَّ فَقُلْتُ أَنَا مُحَمَّدُ بْنُ عَلِيِّ بْنِ حُسَيْنٍ. فَأَهْوَى بِيَدِهِ إِلَى رَأْسِي فَنَزَعَ زِرِّي الأَعْلَى ثُمَّ نَزَعَ زِرِّي الأَسْفَلَ ثُمَّ وَضَعَ كَفَّهُ بَيْنَ ثَدْيَيَّ وَأَنَا يَوْمَئِذٍ غُلاَمٌ شَابٌّ. فَقَالَ مَرْحَبًا بِكَ وَأَهْلاً يَا ابْنَ أَخِي۔۔

📕سنن ابوداؤد شریف کتاب المناسک۔حدیث نمبر 1097

 

*حضرت جعفر بن محمد اپنے والد سے نقل کرتے ہیں ہم لوگ حضرت جابر رضی اللہ عنہ کی خدمت حاضر ہوئے ہم لوگ جب پہونچے تو انہوں نے دریافت کیا کہ کون کون حضرات ہیں یہاں تک کہ میرا نمبر بھی آگیا میں نے کہا میں محمد بن علی بن حسین ہوں انہوں نے اپنا ہاتھ میرے سرپر پھیرا اور میرا اوپر کا دامن اٹھایا پھر نیچے کا دامن اٹھایا اسکے اپنا ہاتھ میرےدونوں چھاتی کے درمیان میں رکھا اور میں اس وقت نوجوان لڑکا تھا اور کہاکہ تم کو خوشی ہو تم اپنوں میں آگئے*۔۔

ناظرین !😳

اس حدیث میں غور کریں 

 اس حدیث میں تو ارواح ثلاثہ سے بھی خطرناک بات لکھی ہوئی ہے 👆

 

نمبر ایک اس حدیث میں ایک

 نو جوان یعنی جو ابھی جوان نہ ہواہو اس کا ذکر ہے 👆😳

 

نمبر دو کپڑا اٹھاکر سینہ پر ہاتھ رکھنے کا ذکر ہے 😳👆

 

جبکہ ارواح ثلاثہ کے واقعہ میں نہ نوجوان کا ذکر ہے 🥺

 

نہ کپڑا اٹھانے کا ذکر ہے🧐

تو 

اگر خانقاہ گنگوہ میں ایک بڑا اپنے چھوٹے سے محبت اور شفقت کا اظہار کرتے ہوئے سینے پر ہاتھ رکھ دے تو بریلوی اپنی خباثتی ذہن سے گندا معنی سمجھ کر عوام کو علماء اہل سنت سے بدظن کرتے ہیں کیا ایسے خناسی کچھ مذکورہ حدیث پر بھی لب کشائی کریں گے 👆😏

 

*بریلوی حکیم الامت کا حوالہ*👀👇

 

 دیکھیں رضا خانی حکیم الامت لکھتے ہیں کہ

*اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم تشریف لائے تو زاہر اپنا سامان بیچ رہے تھے حضور نے انکو پیچھے سے گود میں لے لیا وہ حضور کو نہ دیکھے تھے بولے یہ کون ہے مجھے چھوڑ دو انہوں نے التفات کیا تو نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو پہچان لیا تو انہوں کی نہیں اپنی پیٹھ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے سینہ سے رگڑنے لگے جب کہ حضور کو پہچان لیا* ۔

📕مراۃ المناجیح جلد 6 صفحہ 374

مولانا رشید گنگوہی اور قاسم نانوتوی علیہ الرحمہ پر کتے سور کی طرح بھونکنے والے رضا خانی ذرا اپنے حکیم الامت کی کتاب میں مذکور اس حدیث کے بارے کیا کہیں گے یہاں بھی ارواح ثلاثہ کی عبارت سے خطرناک بات لکھی ہوئی ہے

 *کہ ایک صحابی کو نبی علیہ السلام نے پیچھے سے اپنے گود میں بٹھا لیا*🧐👀

 

یاپھر اپنے مجدد کی طرح

 بے غیرتی کا کرتا یہاں بھی سرباز ار اٹھاکر آنکھ پر رکھ لے گا 👆😆

 

*ران میں بوسہ زنی* 👇😃

 

سبع سنابل جو بریلوی کے یہاں معتبر کتاب ہے اسمیں سید محمود گیسو دراز کا واقعہ لکھا ہے 👇

*جس وقت آپ حضرت مخدوم نصیر الدین مخدوم کی خدمت پہونچے حضرت مخدوم گھوڑے پر سوار تھے آپنے حضرت مخدوم کی ران کو بوسہ دیا مخدوم نے فرمایا اور نیچے مخدوم نے پیر کا بوسہ لیا*

📗 سبع سنابل صفحہ 158 

 

یہاں مرید اپنے پیر کے ران میں بوسہ لے رہا ہے جو کہ ستر میں داخل ہے اور حضرت نانوتوی نے بوسہ بھی نہیں دیا اور ستر بھی نہیں تھا غیر ستر پر صرف ہاتھ رکھا تو یہ رضا خانی ایسا شور مچایا گویا کہ کہ انکی ہمشیرہ پر ہاتھ رکھ دیا ہو 😆

 

اب اس واقعہ پر بھی وہی خبیث اعتراض کریں گے یا پھر اپنے مجدد کا وہی بے غیرتی والا لمبا کرتا سرباز ار اٹھاکر آنکھوں پر پھر سے لگاکر اپنے مجدد کے اس ننگے تقوے پر یہاں بھی عمل کرتے ہوئے نظر آئیں گے😆

 

*بریلوی پیر کا گدھی سے بدفعلی*👇🤓

 

ﺑﺮﯾﻠﻮﯼ ﺟﻤﺎﻋﺖ ﮐﺎ ﺷﻤﺲ ﺍﻟﻌﺎﺭﻓﯿﻦ ﻧﻮﺭ ﺍﻟﻠﮧ ﺣﺴﻦ ﺷﺎﮦ

ﺑﺨﺎﺭﯼ ﺍﭘﻨﯽ ﮐﺘﺎﺏ ﻣﯿﮟ ﻟﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ :

 

*ﺣﻀﺮﺕ ﻏﻮﺙ ﻋﻠﯽ ﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﭘﺎﻧﯽ ﭘﺘﯽ ﻗﺪﺱ ﺳﺮﮦ ﻧﮯﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﮐﮧ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﭘﯿﺮ ﻭ ﻣﺮﺷﺪ ﺣﻀﺮﺕ ﻣﯿﺮ ﺍﻋﻈﻢ ﻋﻠﯽﺷﺎﮦ ﺻﺎﺣﺐ ﺭﺣﻤۃ ﺍﻟﻠﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﻓﺮﻣﺎﺗﮯ ﺗﮭﮯ ﮐﮧ ﻗﺼﺒﮧ ﻣﮩﻢﺳﮯ ﺩﮨﻠﯽ ﮐﻮ ﻭﺁﭘﺲ ﺁﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﺍﺛﻨﺎﺋﮯ ﺭﺍﮦ ﻣﯿﮟ ﺍﯾﮏ ﻋﺠﯿﺐﻣﻌﺎﻣﻠﮧ ﭘﯿﺶ ﺁﯾﺎ*۔۔۔۔۔۔

*آگے لکھتے ہیں کہﺁﺧﺮ ﺑﮩﺎﺩﺭ ﮔﮍﮪ ﭘﮩﻨﭽﮯ ﻭﮨﺎﮞ ﺍﯾﮏ ﻣﮑﺎﻥ ﻣﯿﮟ ﭨﮭﯿﺮﮮ ۔ﻓﻘﯿﺮﺻﺎﺣﺐ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﮐﮧ ﺑﻌﺪ ﻧﻤﺎﺯ ﻋﺸﺎﺀ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﺭﻭﭨﯽ ﺍﺳﯽﻣﺴﺠﺪ ﻣﯿﮟ ﻟﮯ ﺁﻧﺎﺟﺐ ﮨﻢ ﺭﻭﭨﯽ ﻟﮯ ﮐﺮ ﻣﺴﺠﺪ ﻣﯿﮟ ﭘﮩﻨﭽﮯ ﺗﻮ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮐﮧﻣﯿﺎﮞ ﺻﺎﺣﺐ ﺍﯾﮏ ﮔﺪﮬﯽ ﺳﮯ ﻣﺼﺮﻭﻑ ﮨﯿﮟ ۔ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﻣﻨﮧﭘﮭﯿﺮ ﻟﯿﺎ ۔ﭘﮭﺮ ﺟﻮ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﺗﻮ ﻧﻤﺎﺯ ﭘﮍﮬﺘﮯ ﮨﯿﮟ* ۔۔۔۔۔

*آگے لکھتے ہیں ﺻﺒﺢ ﮐﮯ ﻭﻗﺖ ﮨﻢ ﺩﮨﻠﯽ ﮐﻮ ﺭﻭﺍﻧﮧ ﮨﻮﺋﮯ ﺍﻭﺭ ﻭﮦ ﻓﻘﯿﺮﺻﺎﺣﺐ ﻏﺎﺋﺐ ﮨﻮﮔﺌﮯ ۔ﺟﺐ ﮨﻢ ﺩﮨﻠﯽ ﻣﯿﮟ ﭘﮩﻨﭽﮯ ﺗﻮ ﻣﻮﻻﻧﺎﺷﺎﮦ ﻋﺒﺪ ﺍﻟﻌﺰﯾﺰﺻﺎﺣﺐ ﻣﺤﺪﺙ ﺩﮨﻠﻮﯼ ﺭﺣﻤۃ ﺍﻟﻠﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﺳﮯﺑﯿﺎﻥ ﮐﯿﺎ ۔ﺍﻧﮭﻮﮞ ﻧﮯ ﻓﺮﻣﺎﯾﺎ ﮐﮧ ﻭﮦ ﺷﺨﺺ ﺧﻀﺮ ﻭﻗﺖ ﯾﺎﺍﺑﻮ ﺍﻟﻮﻗﺖ ﺗﮭﺎ*۔

📗( ﺍﻻﻧﺴﺎﻥﻓﯽﺍﻟﻘﺮﺁﻥ ،ﺹ253/254/255

 

ﺭﺿﺎﺧﺎﻧﯽ ﺣﻀﺮﺍﺕ ﻣﺴﺠﺪﻭﮞ ﻣﯿﮟﮔﺪﮬﯿﻮﮞ ﺳﮯ ﻣﻌﺎﺫ ﺍﻟﻠﮧ ﺑﺪﻓﻌﻠﯽ ﮐﺮﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﮐﻮ ’’ ﺧﻀﺮ

ﻭﻗﺖ ‘‘ ﺳﻤﺠﮭﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﺱ ﻟﺌﮯ ﮨﺮ ﻭﻗﺖ ﺍﻟﻠﮧ ﺍﻟﻠﮧ ﮐﮯ ﺫﮐﺮ ﺳﮯ ﻣﻨﻮﺭ ﻋﻠﻤﺎﺀ ﺩﯾﻮﺑﻨﺪ ﮐﯽ ﺧﺎﻧﻘﺎﮨﻮﮞ ﮐﻮ ﺑﮭﯽ ﯾﮧ ﺑﺪﺑﺨﺖﺍﭘﻨﯽ ﻋﺒﺎﺩﺕ ﮔﺎﮨﻮﮞ ﭘﺮ ﻗﯿﺎﺱ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ 🤔

 

ایک اعتراض کا جواب 👇

ایک رضاخانی نے اس واقعہ پر یہ اعتراض کیا کہ اس کے اندر عشق بازی کرنے کا ذکر ہے جبکہ دیگر واقعات میں عشق عاشقی کا ذکر نہیں 🤓

 

الجواب 👇🧐

 عشق کمال محبت کو کہتے نہ کہ تیرے مجدد کی گندی ذہنیت کو 😋

تو کہتاہے ہم عاشق اولیاء ہیں🥲 

عاشق رسول ہیں🥲

 

تو تیرے اصول سے یہاں بھی تونے عشق بازی کی ہے

 👆😳😍😂😂😜😜

 

امید ہے کہ احمد رضا خان بریلوی کے ننگے تقوی پر عمل نہ کرنے والے رضاخانی کے لیے اتنا جواب کافی ہوگا 😄

مزید جوابات کے لیے دفاع اہل

 سنت دیکھیں ۔

✍️از قلم ریان ندوی🌹

Link to post
Share on other sites

یہ دیوبندی اپنے اکابرین کونبیوں کے برابر سمجھتا ہے جو گستاخیاں اس  کے اکابر نے کی ہیں ان کی تاویل نکالتے ہیں اور وہی بات اس کو کہو تو کتوں کی طرح بھونکے آجاتا ہے اگر ہمت ہے تو اس کی تاویل نکالو 

جیسا علم دیوبندی کو ہے غرض ہر جانور پاگل اور بچے کو ہے 

اس کی تاویل نکالو 

Link to post
Share on other sites

rizvi

iman tu ha nahe lagta hy nazar b chali gae hy,

gadi k sath bad fali khawab nahe haqeeqat thi,   aur hasan attari ki post paro wo khawab hyn????

 

mainy jo post ki hy wo tabqat ki wo haqeqat hy. khawab py fatwa nahe lagta,  tum logo k pass itni himat he nahe ko koe tabqat k pages ka urdu tarjma kar dy

Link to post
Share on other sites

Naam nihad hanfi urf hanfigroup kon iman wala h kon nahi wo hume pata hai apni beimani k bare me mat batao tumhare ghar se humare eman ki gawahi mojud hai shayad aap andhe h ya jan bujhkar anjan ban rahe ho upar muhamma ali bhai ne tumhare khwabo k bare me tabsira kiya uspar Sare deobandio ki bhagam bhag shuru ho gayi uspar jawab do naki idhar ki udhar

Link to post
Share on other sites

akhtar atari,

paly b kuch loog mairy sath challange kar k,  bimar hogy, tum b azmalo,

make new topic, aur apny aqaid lekho,  phir uspy gawahe deoband fatwa sy dou,

ab tum b ghaib hojao gy,

tum loog bidati ho, no doubt about this, aur ulma arab sy taslem shuda ahle sunnat sy kharaj

  • Haha 1
Link to post
Share on other sites

Agar aap ki behan ko khawab ahay kay woh Ilyas Ghuman kay saath mard aurat wala kaam kar rahi heh toh kitab mein publish karo gay aur saath Ibn sireen ki tabeer lagao gay. Aur aik movie bana kar cinema mein lagao gay aur saath hi Ibn sireen ki tabeer ki commentary ka izafa karo ga?

Bey-haya chawal banday. Itni khabr nahin kay kon sa aur kaisa khawab publish karna chayeh. homosexual gan'd publish kar kay us ka difa kar raha heh. bey-ghayrat banda.

  • Like 1
Link to post
Share on other sites

Deobandi ye taweel karre h gongohi Or nanotvi k khwab par

sme To Zina Hai Hi nahi , Na Maa Behn Se Na Kisi Se ,Lihaza Aapka Dawa Hi Batil hai, Is Cheez Ko Yaha Fit karrhe

Haan Zaahir Mai Ajeeb Hai Lekin Iski Ta'abeer achhi Hai, To Agar Kisi Ne Likh diya To itna Bawal Karne Ki Zaroorat Nahi, bas Ek Khwab Tha Uski Tabeer Hogaye baat Khatam

Jaise Imam E Azam Ka Kbwaab Zahir Mai Ajeeb Tha, Yehi Scan Mai Dekh Lo Zaahir Mai Gustakhana

Aur Yaha Tabeer Mai Common Cheez Faayda Hai, Jis Tarah Miya Biwi Ko Faayda Hota Hai, Waise 2 Buzurgo Ko Faayda Hua , aur Fayda Bohat Saari Cheezo Se Hota Hai Buzurgo Ko Ilm se, Taqwe Se, Baatini Roohaniyat Se, Duaon Se

Link to post
Share on other sites
On 9/13/2021 at 3:37 AM, Akhtar Razvi said:

Deobandi ye taweel karre h gongohi Or nanotvi k khwab par

sme To Zina Hai Hi nahi , Na Maa Behn Se Na Kisi Se ,Lihaza Aapka Dawa Hi Batil hai, Is Cheez Ko Yaha Fit karrhe

Haan Zaahir Mai Ajeeb Hai Lekin Iski Ta'abeer achhi Hai, To Agar Kisi Ne Likh diya To itna Bawal Karne Ki Zaroorat Nahi, bas Ek Khwab Tha Uski Tabeer Hogaye baat Khatam

Jaise Imam E Azam Ka Kbwaab Zahir Mai Ajeeb Tha, Yehi Scan Mai Dekh Lo Zaahir Mai Gustakhana

Aur Yaha Tabeer Mai Common Cheez Faayda Hai, Jis Tarah Miya Biwi Ko Faayda Hota Hai, Waise 2 Buzurgo Ko Faayda Hua , aur Fayda Bohat Saari Cheezo Se Hota Hai Buzurgo Ko Ilm se, Taqwe Se, Baatini Roohaniyat Se, Duaon Se

Meray bhai khawab par fatwah kis nay manga, sawal, yeh nahin kay khawab keun aya, aya toh kia fatwah heh,  asal sawal is baat par heh kay aisi bey-hayahi ko publish kon karta heh. Khawabon ki Tabeeren nikalti hen. Magr is beh-hayahi ko publish kon karta heh? Yeh janab joh difa kar rahay hen un say poocho kay bayghayrat maan baap kay bay haya bacho yeh batao kay agar tumari behan ko ya tumaray abba ko aisa ghaleez khawab ahay toh kitab mein publish karo gay. Tabeer nikaal kar masjidoon mein sunaho gay? Tabeer mein faida ka zikr ho ya na ho us par to sawal aur ihtiraaz hi nahin. Ihtiraaz in beyghayratoon ki haya par heh.

Misaal kay tor par khawab aahay kay Thanvi kay oopar Gangohi, aur Gangohi kay peechay Nanotavi chara heh toh kia achi tabeer nikli toh khawab ko likh kar awaam mein pehlaho gay kay dekho Ismail Dehalvi ko aisay homosexual khawab atay thay aur tabeer kitni achi thee. Bey-ghayratoon ko haya ka ana muhaal heh.

Buray kahwab ki achi tabeer par toh ihtiraaz hee nahin. ihtiraaz bey-hayahi ko pehlanay par heh. Kia agar Thanvi ko khawab ata kay us nay apni maan kay moonh mein mardana ala dala huwa heh toh kia achi tabeer ki bunyad par Thanvi sab muhallay waloon ko sunahay ga kay dekho mujjay apni maan kay baray mein yeh sexy khawab aaya aur itni achi tabeer heh. Waisay Thanvi yeh kar bi leh magr kohi ba-haya banda kabi bi aisa nah karay.

Yeh kitaben auraten, mard, bachay partay hen, abh joh bacha paray kay khawab mein thanvi nay dekha kay us nay gangohi ko khoob keeya toh us nay kiya gand para aur us ka aisay gand ki taraf damagh kaisay nah jahay. Tabi toh Deobandi madaris mein homosexual acts bot hotay hen.

Link to post
Share on other sites

Muhammad Ali bhai

Deobandi ne jo taweel ki h jis tarah mard Or orat ko ek dusre se fayda pohchta h usi tarah do deobandi mullao ko fayeda hua or unse awam ko fayda hua aap wo taweel padhe actually me thoda confuse hu mene usko already sari cheeze bata di h ki agar tum ye khwab dekh rahe ho ki apni maa ya behen se zina karre ho to kya usko chaponge usne bola nahi magar wo difa is cheez ka karra h ki tabeer k hisab se dono buzurgo se faayda hua ye uski tabeer hai

Link to post
Share on other sites
On 9/15/2021 at 10:00 AM, Akhtar Razvi said:

Muhammad Ali bhai

Deobandi ne jo taweel ki h jis tarah mard Or orat ko ek dusre se fayda pohchta h usi tarah do deobandi mullao ko fayeda hua or unse awam ko fayda hua aap wo taweel padhe actually me thoda confuse hu mene usko already sari cheeze bata di h ki agar tum ye khwab dekh rahe ho ki apni maa ya behen se zina karre ho to kya usko chaponge usne bola nahi magar wo difa is cheez ka karra h ki tabeer k hisab se dono buzurgo se faayda hua ye uski tabeer hai

Us say poocho agar tumari behan ko khawab ahay  aur achi tafseel say ahay aur sari tafseel yaad bi ho ... Misaal tor par do larkay us ki behan ko khoob kartay hen kabi aik charta heh us kay uppar aur kabi dosra ... Us ko poocho un ko faida pauncha tabeer kay mutabik toh bataho woh apni behan ka khawab kitaab mein ussee tafseel say likhay ga jis mein us ki behan ko doh larkoon nay keeya aur ussee tafseel say likhay ga jis tara unoon nay us ki behan ko sab kuch keeya aur phir Ibn Sireen ki kitaab say nikaal kar kahay ga kay in donoon nay muj Deobandi ki behan ko khawab mein achi tara keeya aur aisay keeya aur is ki tabeer yeh heh. 

Taweel toh agar woh maanh ko ch*d dalay toh Thanvi ki tara us ki bi nnikaal leh ga. Magr taweel say be-hayahi pehal rahi heh yehni zahiri ibarat say pehal rahi heh us par ihtraaz heh aur jinoon nay aisay khawab publish keeyeh un kay ganday kirdar aur jinoon nay besharmon ki tara yeh khawab batahay kay mujjay aisa khawab ayah un par heh. 

Ashraf Ali Thanvi ko khawab ahay ya yeh HanfiGroup ko khawab ahay kay aik engrez ya America say aik kala peechay say in janab ko homosexual kar raha heh ... Toh poocho in say kay yeh khawab batahay ga.

Ilyas ghuman say poochen kay agar khawab mein tummen aik maulvi ch*d raha ho aur sari khawab yaad ho toh kia aglay din poori tamheed bandnay kay baad  pooori khawab batahay ga keh meray shagirdo mujjay khawab aya kay yeh joh Hazrat maulana ZarWali zaniuhum saab aur shaykh ul hadith Hussain Ahmad Madani damat sexual-uhum aur manazir e Islam manzoor nomani mada zaleel ul aali saab ... In teenoon nay mujjay khawab mein khoob keeya. Hazoor madani saab nay muj Ilyas ghuman kay moonh mein dala huwa thah aur hazoor nomani saab nay peechay ... Aur Mufti Zarwali haath mein pakreh intizaar mein thah aur pathan ki tara keh rahay thay ham toh acha bacha baaz heh ham is ko faiz deh ga... Kia khawab Ilyas ghuman ko ahay toh batahay ga? Aur agar batahay ga toh yeh is ki bey hayahi ki daleel heh ya nahin. Aur agar aisa khawab publish karay kitab mein toh yeh bey hayahi ko pehlana heh ya nahin. Tabeer ki baat nahin na faiz milnay ki nah faida milnay ki heh balkay baat yeh heh kay aisay khawab kohi bey haya bey ghayrat hi publish karta heh aur auroon say share karta heh. 

Logoon ko haq manwa nahin saktay aur nah sharm aur haya dil mein daal saktay hen.

Mein nay wo khawab joh gunna par daleel baneh nahin batahay kissi ko. Aaj aik bayan karta hoon. Aik dost ko kuch paisay chayeh thay. Udhar deeya kafi rakam thee. Mein nay mazakh mein is shart par deeya kay mithai kay  dabbay kay saath udhar wapis karay ga. Saal dedh bad us nay hazaar pound deeyeh aur saath mein mithai ka dabba deh gaya ... Magr meray  zehn say yeh baat nikli thee kay mein nay udhar wapisi par mangi thee kuch gar waloon nay khai aur aik do laddoo mein khaa gaya.

Raat soya toh khawab mein dikha kay mein khanzir ka paoon kha raha hoon aur mera dost jis nay udhar leeya thah woh door say mujjay keh raha heh haram ki boo mujjay idhar bi paunchi heh is leyeh kareeb nahin ata. Jagnay par fori tor par tabeer check ki ...  ... Ghor fikr keeya toh yad aya kay udhar shartia deeya thah mazakh mein sahi magr shartia thah kay mithai ka dabba saath hoga aur yeh SOOD mein ata heh. Toba astaghfaar ki aur mithai ka dabba leeya ... Takay keemat maloom ho ... aur saath jitnay pesay bantay thay dabbay kay leh kar us kay gar gaya ... Us ko pesay haath mein deeyeh masla samjaya kay yeh sood mein atay hen is waja say ... Aur shukria ada keeya kay us nay pesay wapis deeyeh mubarakbad deeh kay Allah nay ussay itnay kabil bana deeya kay udhar lota sakkay aur mithai ka dabba hath thamaya ... Aur chai ka cup peeya salam dua aur gar wapis aya. 

Dostoon mein bey takallufi aur laparwahi ka nateeja dekh leeya. Magr mein nay yeh khawab kabi bi kissi ko bayan nahin keeya balkay us dost ko bi nahin bataya. Keun kay yeh bura khawab heh. Aur in janabon ki haya dekhyeh khawab mein peechay say teen teen say karwa kar bi baray fakhr say quran ki tilawat kay baad shoq or zauq say sunatay hen aur publish kartay  hen.

Asal waja gustakhoon ki gustakhi heh ... Jin ko rasoolallah towheen towheen nah lagay un ki haya ko bi Allah nay maut deeh heh. Khud apni bey hayahi aur beyghayrati ki aur bey imani ki daleelen chor gay hen. Allah tala nay in kafiroon ko apnay hathoon zaleel ruswa keeya. Aur kohi bi banda in ka gan'd parh kar yeh  faisla kar sakta heh kay Deobandi aur in kay uqabir ganday ghaleez bey haya logh hen.

Yeh HanfiGroup saab toh Thanvi saab keh aur uqabir Deoband kay aisay homosexual khawabs par ba qaida aik film banahen gay jis mein main character Ilyas ghuman, sajid khan naqshbandi, sadiq kohati, ayub qadri, waghyra hoon gay khawab kay tamam homosexual acrions yeh play keren gay. Doh doh mint kay clips hoon gay jis mein har khawab ki perfext representation hogi aur aakhir mein noorani tabeer. Aur khasoosi tor par hazraaat deoband ki noorani khawabon ki yeh video deoandi garoon mein family kay saath dekhi jahay gi. Khaas kar kay bachiyun ki tarbiat wasteh istimal hogi. 

  • Like 1
Link to post
Share on other sites

tum pahly b mairy hatho zalil huwa, mughal ny tairi post delete kar di,

begharat insan, tabkat ka scan lagaya tha k uska tarjma karo, sab e tabqat tiary bidati imam k nazdeek b moutbar, 

usmain lekha k jahan b Muahmmad ali ki behan yan muhammad ali rasty main miljata tu hazrat us ki gand main hath phirty (summery),    tun khawab ki baat kar rahy ho mainy haqeqat ka scan post keya hy,

ab apni behan ki gand main yan tumahri gand main hath phirny waly ko wali maan yan besharam

dono sortoon main zilat tumhari he hy

 

Edited by hanfigroup
Link to post
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.
Note: Your post will require moderator approval before it will be visible.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.

Loading...
  • Recently Browsing   0 members

    No registered users viewing this page.

×
×
  • Create New...